رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • عالمی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    تمباکو نوشی سےامریکہ میں 24 کی موت

    واشنگٹن : صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس میں جمعہ کو بچوں میں تمباکو نوشی (ویپنگ) کے مسئلے سے نمٹنے کے لئے ڈاکٹروں، ویپنگ صنعت سے منسلک نمائندوں کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ میں کہا کہ خوشبودار تمباکو نوشی پر پابندی لگانا مسئلہ حل نہیں ہے۔ اسے روکنے کی کوشش کی گئی تو بچے دیگر غیر قانونی طریقے تلاش کریں گے اور اس سے ان کی صحت پر اور گہرا اثر پڑے گا۔

    انہوں نے تجویز دی ہے کہ تمباکو نوشی کرنے والے بچوں کی پابندی کی عمر 21 سال کر دینا بہتر ہو گا۔ اس فیصلے کے بعد ویپنگ مواد 21 سال سے نیچے کے بچوں کو دستیاب ہی نہیں ہوگی۔ ویپنگ سے الاسکا ریاست کو چھوڑ کر ملک بھر میں 24 نوجوانوں اور بچوں کی موت ہو چکی ہے جبکہ نومبر کے مہینے میں اب تک دو ہزار پھیپھڑوں کے مریضوں کا پتہ چلا ہے۔ اس سے بچوں میں پھیپھڑوں کی بیماریوں میں اضافہ بڑھتا جا رہاہے۔

    یہ بھی پڑھیں  دنیا میں کورونا وائرس سے 3,282 افراد کی موت : ڈبلیو ایچ او

    اس میٹنگ میں ریپبلکن سنیٹر مٹ رومنی اس موضوع پر صدر سے دو بار الجھ پڑے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک سنگین مسئلہ ہے اور ان کے ‘اٹھا’ ریاست میں ہائی اسکول میں زیادہ تر بچے ویپنگ کا نشہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی ریاست میں ایسے ساٹھ لاکھ بچے ویپنگ کا نشہ کرتے ہیں۔ اس سے ہیلتھ ایمر جنسی کا مسئلہ پیدا ہوگیاہے۔ ان میں زیادہ تر نکوٹین کی مقدار کرتے ہیں۔ واضح ہو کہ خاتون میلینیا ٹرمپ نے بھی گذشتہ ستمبر میں خوشبودار ویپنگ بند کئے جانے کی وکالت کی تھی۔ اس پر ٹرمپ نے بھی رضامندی ظاہر کی تھی۔ انہوں نے خوشبودار ویپنگ پر پابندی لگائے جانے کی بات بھی کی تھی۔ لیکن کوئی کارروائی نہیں کی جا سکی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ ڈیموکریٹ اس موضوع کو سیاسی رنگ دینا چاہتے ہیں۔ ٹرمپ کو بھی اندازہ ہے کہ اس سے انہیں فلوریڈا، مشی گن اور وسکونسن جیسی ریاستوں میں ویپنگ کا نشہ کرنے والے نوجوانوں کے ووٹوںسے ہاتھ دھونا پڑ سکتا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  مذاکرات کے باوجود چینی مصنوعات پر ٹیکس برقرار رہے گا: صدر ٹرمپ
    یہ بھی پڑھیں  مذاکرات کے باوجود چینی مصنوعات پر ٹیکس برقرار رہے گا: صدر ٹرمپ

    وائٹ ہاؤس کے اجلاس میں ڈاکٹروں اور ویپنگ صنعت کے نمائندوں کے علاوہ اس صنعت کے خلاف کھڑے نمائندے بھی موجود تھے۔ ویپنگ کے خلاف نمائندوں نے صدر سے مطالبہ کیا کہ خوشبودار تمباکو نوشی کو ہر ممکن حوصلہ شکنی کی جانی چاہئے۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you