رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • عالمی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    جسٹن ٹروڈو کینیڈین انتخابات میں اکثریت لینے میں ناکام

    ٹورنٹو : کینیڈا کے عام انتخابات میں وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو کی لبرل پارٹی کسی طرح اقتدار کو بچانے میں کامیاب ہوئی ہے لیکن اب وہ ایک اقلیتی حکومت کے وزیر اعظم ہوں گے۔کہا جا رہا ہے کہ لبرل پارٹی کو 156 نشستیں ملیں گی جو کہ اکثریت سے 14 نشستیں کم ہے جس سے جسٹن ٹرڈو کے لیے اپنی دوسری مدت میں قوانین منظور کروانا مشکل ہو جائے گا۔امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ کنزرویٹو حزب اختلاف کو عوامی ووٹ ملا ہے لیکن وہ نشستوں میں منتقل نہیں ہو سکا۔

    حزب اختلاف کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ انھیں 122 سیٹیں ملیں گی جو کہ ماضی کی 95 سیٹوں سے 27 نشستیں زیادہ ہے۔بہر حال پیر کی شب کو بائیں بازو کا رجحان رکھنے والی نیو ڈیموکریٹک پارٹی (این ڈی پی) کی سیٹوں میں بڑی کمی دیکھی گئی لیکن اس کے رہنما جگمیت سنگھ کنگ میکر یعنی حکومت ساز بن سکتے ہیں۔این ڈی پی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ کینیڈا کی 338 رکنی پارلیمان میں 24 نشستیں حاصل کر سکتی ہے۔اب تک کی اطلاعات کے مطابق ان انتخابات میں 65 فیصد افراد نے ووٹ ڈالے۔وفاقی انتخابات کو ٹروڈو کی قیادت پر ریفرینڈم کے طور پر دیکھا جا رہا تھا

    یہ بھی پڑھیں  ایران: ایک اور جیل میں بغاوت، 80 قیدی فرار

    کیونکہ ان کا پہلا دور حکومت بہت نشیب و فراز والا تھا اور وہ اس دوران کئی سکینڈلز کی زد میں رہے۔انھوں نے مانٹریال میں جشن منانے والے اپنے حامیوں سے کہا: ‘دوستوں تم نے کر دکھایا۔ مبارک باد!’اپنے ووٹرز کو مخاطب کرتے ہوئے انھوں نے کہا: ‘ملک کو صحیح سمت میں لے جانے کے لیے ہم لوگوں پر اعتماد دکھانے کے لیے شکریہ۔’اور جنھوں نے انھیں ووٹ نہیں دیا، ان کے لیے انھوں نے وعدہ کیا کہ ان کی پارٹی سب کے لیے حکومت کرے گی۔نیو ڈیموکریٹک پارٹی (این ڈی پی) کی سیٹوں میں بڑی کمی دیکھی گئی لیکن اس کے رہنما جگمیت سنگھ کنگ میکر یعنی حکومت ساز بن سکتے ہیںاقتدار پر ان کی کمزور گرفت کو ان کے ریکارڈ پر ایک دھچکے کے طور پر دیکھا جا رہا ہے

    یہ بھی پڑھیں  انتونیو گٹریس نے کیا خبردار : آب و ہوا کی تبدیلی روکنے میں ناکامی ناقابل تلافی ہو گی
    یہ بھی پڑھیں  ترکی کی شمالی شام میں کردوں کو نکال باہرکرنے کی دھمکی

    جبکہ انتخابات کے نتائج کنزرویٹو لیڈر اینڈریو شیئر کے لیے انتہائی مایوس کن رہے۔جسٹن ٹروڈو نے سنہ 2015 میں ‘حقیقی تبدیلی’ اور ترقی پسند عہد کے نام پر بڑی کامیابی حاصل کی تھی۔لیکن چار سال تک اقتدار میں رہنے کے بعد مسٹر ٹروڈو کو ان کی صلاحیت میں کمی کے لیے تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔مثال کے طور پر ماحولیات کے تحفظ کے لیے ان کے ریکارڈ کو ٹرانس ماؤنٹین آئل پائپ لائن کے توسیعی منصوبے کی حمایت سے نقصان پہنچا ہے۔اور ٹروڈو اپنے وفاقی سطح پر انتخابی اصلاحات کے وعدے سے فوراً ہی دستبردار ہوگئے تھے جس سے متبادل ووٹنگ نظام دیکھنے کے خواہشمند بائیں بازو کے ووٹرز میں اشتعال پھیلا تھا۔

    مگر اس کے باوجود دو درجن کینیڈین محققین کے ایک آزادانہ جائزے کے مطابق ٹروڈو نے مکمل یا جزوی طور پر ان میں سے 92 فیصد وعدوں کی پاسداری کی ہے جو کہ گزشتہ 35 سال میں کسی بھی کینیڈین حکومت سے زیادہ ہے۔ٹروڈو کی انتخابات میں کامیابی کے امکانات اس وقت بھی کم نظر آنے لگے تھے جب تین مختلف مواقع پر ان کی سیاہ میک اپ کی ہوئی تصاویر وائرل ہوئی تھیں۔ان تصاویر کو ٹروڈو کے ‘تمام طبقات کے لیے ہمدرد’ کے پروان چڑھائے گئے سیاسی تشخص کے لیے بڑا دھچکا تصور کیا گیا تھا۔

    یہ بھی پڑھیں  جنگلات میں لگنے والی آگ سے دنیا بھر میں پینے کے پانی کی قلت کا خدشہ

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  جنگلات میں لگنے والی آگ سے دنیا بھر میں پینے کے پانی کی قلت کا خدشہ

    Latest news

    پاکستانی چینی بھائی، بھائی دونوں بھائی’ہندو اور مسلمان‘پر کر رہے مظالم : محمد عرفان احمد

    نئی دہلی : بی جے پی اقلیتی مورچہ کے قومی نائب صدرعرفان احمد نے چین میں ہورہے ’مسلمانوں‘ اور...

    مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کا باغلی کو ضلع بنانے کا اعلان

    ہاٹپیپلیا : مدھیہ پردیش کے وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے آج کہا کہ ضلع دیواس کے تحت آنے والے...

    ایم سی ڈی کے اندر بی جے پی قائدین کو ایک روپیہ کی بھی بدعنوانی کی اجازت نہیں دیں گے: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے کونسلر منوج کمار تیاگی ، جو دہلی کے تین ایم سی ڈی...

    جامعہ ملیہ اسلامیہ میں ہوگا ’ آن لائن سمر اسکول آن جاب ریڈینیس‘ کا انعقاد

    نئی دہلی:جامعہ ملیہ اسلامیہ کی یونیورسٹی پلیسمنٹ سیل16 جولائی تا 24 جولائی 2020 ء کو ایک ہفتہ طویل "آن...

    سال2020 کے آخر تک دنیا میں تقریبا 97 لاکھ بچے مستقل طور پر اسکول چھوڑ سکتے ہیں

    لندن : کورونا وائرس (کووڈ۔19) وبا کے نتیجے میں بڑھتی ہوئی غربت اور بجٹ میں کمی کی وجہ سے...

    جلگاؤں سیمی مقدمہ ، اورنگ آباد ہائی کورٹ نے دو نوں ملزمین کو کیا باعزت بری

    جلگاؤں سیشن عدالت نے ملزمین کو دس سال قیدبامشقت کی سزا سنائی تھی ، گلزار اعظمی ممبئی : ممنوع تنظیم...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you