رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • عالمی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    سمندر کے درجہ حرارات میں اضافہ بہت تیزی سے ہورہا ہے

    لندن:ایک نئی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ برس سمندروں میں اب تک کا سب سے زیادہ گرم پانی تھا اور اس کے درجہ حرارات میں اضافے کی رفتار پہلے سے تیز تر ہوتی جارہی ہے۔ تازہ تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق سمندر اب نہ صرف پہلے سے کہیں زیادہ گرم ہیں بلکہ ان کے درجہ حرارات میں اضافہ بھی بہت تیزی سے ہورہا ہے جو عالمی سطح پر درجہ حرارت میں اضافے کا ایک اور اہم ثبوت ہے۔

    تحقیقاتی رپورٹ کی تفصیلات چین کے معروف جریدے ‘ایڈوانس ان ایٹموسفیئرک سائنس’ میں شائع کی گئی ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ عشرے میں سمندروں کا درجہ حرارات اب تک کے ریکارڈ کے مطابق سب سے زیادہ رہا ہے۔اس رپورٹ میں اس پہلو کی بھی وضاحت کی گئی ہے کہ کس طرح انسانی محرکات سے پیدا ہونے والی حدت سے زمین کے پانی پر اثرات مرتب ہورہے ہیں اور سطح سمندر میں اضافہ ہورہا ہے۔ اس کے مطابق اضافی درجہ حرارت کے سمندری پانیوں میں جذب ہونے سے موسمیاتی تبدیلیاں مزید بھیانک رخ اختیار کر سکتی ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  سلیمانی کی ہلاکت کے روز امریکی فورسز نے سینئر ایرانی فوجی اہل کار کے خلاف دوسری خفیہ کارروائی کی

    اس ریسرچ ٹیم کے ایک اہم رکن، امریکا میں سینٹ پال مینوسوٹا یونیورسٹی میں تھرمل سائنس کے پروفیسر، جان ابراہم کا کہنا ہے کہ ان کے لیے یہ نتائج حیران کن نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا، “سن 1980 کے اواخر سے درجہ حرارت بڑھنے کی رفتار میں تقریبا پانچ سو فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ ایمانداری سے کہوں تو اس طرح کے نتائج کی امید ہی نہیں تھی۔ گرمی میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، اس میں کوئی روکاوٹ نہیں ہے۔ اگر ہم اس کے لیے جلد ہی کچھ اہم اقدامات نہیں کرتے تو پھر یہ ہمارے لیے بری خبر ہے۔رپورٹ کے مطابق سن 1955 سے 1986 کے دور کے مقابلے میں سن 1987 سے 2019 کے درمیان سمندری پانیوں کیدرجہ حرارت کے بڑھنے کی رفتار میں تقریبا بیالیس گنا کا اضافہ درج کیا گیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  روس کا دنیا سے علیحدہ انٹرنیٹ بنانے کا ’کامیاب تجربہ‘ حاصل
    یہ بھی پڑھیں  اٹلی : کرونا وائرس سے 12 ہزارسے زائد افراد ہلاک ،ایک لاکھ متاثر

    بیجنگ میں ‘انسٹیٹیوٹ آف ایٹموسفیئرک فزکس’ کے ایسو سی ایٹ پروفیسر لجینگ چینگ اس تحقیقاتی ٹیم کی قیادت کر رہے تھے۔ انہوں نے گزشتہ پچیس برسوں کے دوران سمندروں کے پانی میں بڑھنے والے اس درجہ حرارت کا موازنہ ہیرو شیما کے جوہری بم دھماکے سے کیا۔ ماہرین کے مطابق سمندروں میں بڑھتا یہ درجہ حرارت نہ صرف سمندر بلکہ زمین کے لیے بھی مختلف نتائج کا حامل ہوسکتا ہے جو انسانی زندگی کے کئی پہلوؤں پر اثر انداز ہوگا۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  ہمیں امریکہ کی مدد کی ضرورت نہیں : پاسدارانِ انقلاب

    Latest news

    دس مہینے بعد تعلیمی سرگرمی شروع ہونے سے بچوں کے چہروں پر لوٹی مسکراہٹ

    نئی دہلی: دس مہینے بعد دہلی کے اسکولوں میں محدود ہی سہی لیکن رونقیں واپس لوٹ آئی ہیں۔ کل...

    دہلی فسادات معاملہ،متاثرین کی باز آبادکاری میں مصروف اقلیتی فلاحی کمیٹی

    میٹنگ میں جلد سے جلد زیر التوامعاملات کے نپٹارہ کی افسران کو ہدایت،کچھ معاملات میں دوبارہ سروے کرنے کی...

    بی جے پی کے زیر اقتدار ایم سی ڈی سے نہ صرف دہلی کے لوگ متاثر ہیں، بلکہ ملازمین بھی نالاں ہیں : سوربھ...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے چیف ترجمان سوربھ بھاردواج نے کہا کہ بی جے پی کے زیر...

    راجیندر نگر کے ایم ایل اے راگھو چڈھا نے سوامی دیانند سروودیا کنیا اسکول کا دورہ کیا

    لاک ڈاؤن کے بعد اسکول کھلنے کے بعد سکیورٹی کے تمام انتظامات کردیئے گئے ہیں، طلباء اساتذہ کو N95...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you