رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • عالمی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    ترکی کی شمالی شام میں کردوں کو نکال باہرکرنے کی دھمکی

    استنبول : شمالی شام سے کرد جنگجوئوں کے انخلاء کے باوجود ترکی نے اس علاقے میں کردوں کے خلاف طاقت کے استعمال کی دھمکی دی ہے۔ تْرکی کے وزیر خارجہ مولود جاووش اوگلو نے پیر کو دھمکی دی کہ اگر کرد گروپ ‘وائی پی جی’ کے جنگجو روس کے ساتھ معاہدے کے تحت شمال مشرقی شام میں پیچھے نہیں ہٹے تو ترکی انہیں طاقت کے ذریعے وہاں سے بے دخل کرے گا۔انہوں نے کہا کہ ہم نے شمالی شام میں فوجی آپریشن معطل کیا ہے ختم نہیں کیا ہے۔ ہم ‘سیف زون’ میں دہشت گردوں کے انخلا کے منتظر ہیں۔ فوج ابھی بھی ہدایات کا منتظر ہے۔کرد تنظیم ایس ڈی ایف میڈیا سینٹر کے ڈائریکٹر مصطفیٰ بالی نے ٹویٹر پر کہا کہ سیز فائر معاہدے کے اعلان کے باوجود ترکی اور اس کے وفادار دھڑوں نے جنگ بندی کی خلاف ورزی جاری رکھی ہے۔ راس العین ، عین العرب (کوبانی) اور تل تمر میں کردآبادیوں پر بھاری ہتھیاروں اور ڈرون طیاروں سے حملے جاری ہیں۔بالی نے مزید کہا کہ ایسے لگتا ہے کہ ترکی کا معاہدے کے باوجود لڑائی روکنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  ٹرمپ کی ایران کو دھمکی ، جانی اور مالی نقصان کیچکانی پڑے گی بھاری قیمت

    اسی تناظر میں شام کی سرکاری نیوز ایجنسی ‘سانا’ نے جنوبی راس العین کے دیہی علاقوں میں الطویلہ اور الصکلاویہ کے نواحی مقامات اوردیہات میں ترک فوج اور کرد جنگجوئوں کے درمیان مارٹر گولوں اور دیگر ہتھیاروں سے جھڑپیں جاری ہیں۔ایجنسی نے ٹویٹر پر پوسٹ ایک خبر میں بتایا گیا ہے کہ تْرک افواج اور اس کے وفادار دھڑوں نے راس العین کے مشرق میں دیہی علاقے مضبع گاؤں پر قبضہ کرلیا ہے۔یہ قابل ذکر ہے کہ شمالی شام میں لڑنے والی کرد تنظیم ‘ایس ڈی ایف’ نے شامی فوج کے ساتھ مل کر ترکی کے ساتھ اسٹریٹجک سرحدی علاقوں میں کمک بھیج دی تھی۔ اس کے بعد کرد ڈیموکریٹک فورسز نے عین العریب سے صرین کی طرف انخلائ شروع کردیا تھا۔ چند روز پیشتر سوچی میں ترکی اور روس کے درمیان طے پائے معاہدے کے تحت کرد جنگجوئوں ترکی کی سرحد سے دور ہٹنا شروع کردیا اور سرحدی علاقے ترک فوج کے حوالے کردیے تھے۔

    یہ بھی پڑھیں  ایرانی اپوزیشن نے خامنہ ای سے اقتدار چھوڑ نے کا کیا مطالبہ
    یہ بھی پڑھیں  ایران کے پڑوسیوں کی صحت کو بھی سنگین خطرہ لاحق ہے : امریکہ

    مگراس کے باوجود ترکی فوجی کارروائیاں اور کردوں پر زمینی اور فضائی حملے جاری ہیں۔شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پرنظر رکھنیوالے ادارے ‘سیرین آبز ویٹری’ کے مطابق شام کے شمالی علاقے میں 500 سے زیادہ امریکی فوجی سازوسامان سمیت سوموار کو دوبارہ اپنے چھوڑے ہوئے اڈوں پرلوٹ آئے ہیں۔برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے داعش کے لیڈرابوبکر البغدادی کی ہلاکت کے ایک روز بعد ان امریکی فوجیوں کی شام میں واپسی کی اطلاع دی ہے۔ ان کا ایک فوجی اڈا شام کی ایم 4 شاہراہ پر تل تمر اور تل بیدارکے درمیان واقع ہے۔

    یہ علاقہ عراق کی سرحد ،قامشیلی اور شمالی شہر حلب کے درمیان واقع ہے۔آبزر ویٹری نے مزید اطلاع دی ہے کہ امریکی طیارے گذشتہ پانچ روز سے شام کے شہر سیرین کے ہوائی اڈے پر اتر رہے تھے۔ان طیاروں سے گاڑیاں ،فوجی سازوسامان اور آلات بھی اتارے جارہے تھے۔ان کے علاوہ 85 گاڑیوں اور ٹرکوں پر مشتمل امریکی فوج کے دوقافلے اتوار کی شب عراق سے شامی سرزمین میں داخل ہوئے تھے۔امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے دو ہفتے قبل شام سے اپنی مسلح افواج کو واپس بلانے کا اعلان کیا تھا

    یہ بھی پڑھیں  ایران تنازعات اور جنگجوؤں کو ہوا دے رہا ہے: مائیک پومپیو

    اور کہا تھا کہ امریکی فوجی شام کے شمال مشرقی علاقے میں ترکی کی فوجی کارروائی میں حصہ نہیں لیں گے۔بعد میں امریکی صدر نے اپنے اس فیصلے کا دفاع کیا تھا۔وائٹ ہاؤس کی پریس سیکریٹری اسٹیفنئی گریشم نے تب ایک بیان میں کہا تھا کہ” امریکی افواج نے داعش کی علاقائی خلافت کو شکست سے دوچار کیا ہے۔ اب وہ اس علاقے میں نہیں رہیں گی۔شام کے آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کے مطابق ، پیر کے روز ، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اس سلسلے میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اس فیصلے کے بعد ، شمالی شام میں تازہ ترین پیشرفتوں میں ، امریکی افواج ان اڈوں پر واپس چلی گئیں جہاں سے وہ گذشتہ چند روز کے دوران شام سے شمال اور شمال مشرق میں پیچھے ہٹ گئیں۔

    یہ بھی پڑھیں  ٹرمپ کی ایران کو دھمکی ، جانی اور مالی نقصان کیچکانی پڑے گی بھاری قیمت

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    دہلی حکومت کے کوویڈ اسپتالوں میں آئی سی یو بیڈوں کی مسلسل بڑھ رہی ہے تعداد

    نئی دہلی : کوویڈ -19 کے خلاف دہلی کی لڑائی میں طبی بنیادی ڈھانچے کو مستحکم کرنے کے لئے...

    اردو یونیورسٹی کے ریگولر کورسس میں آن لائن داخلے جاری

    حیدرآباد : مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے تعلیمی سال 2020-21 کے لیے مرکزی کیمپس حیدرآباد اور دیگر سٹیلائٹ...

    ’جیو میٹ ‘زوم کے مقابلے آسان:امیتابھ کانت

    جیو میٹ کے سافٹ لانچ اور اس کے استعمال سے ہر کسی کو مفت ویڈیو کانفرنسنگ سہولت کے بعد...

    جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں تصادم، دو جنگجو ہلاک

    سری نگر : جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ کے واگہامہ بجبہاڑہ میں منگل کی علی الصبح ہونے والے...

    چینی ایپ پر پابندی لگانے پر ملک نے تعریف کی : جاوڈیکر

    نئی دہلی : اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے آج کہا کہ 59موبائل ایپ پر پابندی لگانے...

    بی جے پی کے خلاف کانگریس کارکنان اترے سڑکوں پر

    لکھنؤ : اترپردیش میں تین دہائیوں سے زیادہ وقت سے اقتدار سے باہرکانگریس اس وقت جس طرح سے ریاستی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you