رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    پاکستان کی قید میں ہیں بھارت کے 55 شہری اور 227 ماہی گیر

    نئی دہلی:بھارت نے اپنے یہاں قید پاکستان 267 شہریوں اور 99 ماہی گیروں کی معلومات پاکستان کے ساتھ اشتراک کیا ہے۔ اسی طرح پاکستان نے بتایا ہے کہ اس کے یہاں بھارت کے 55 شہری اور 227 ماہی گیر قید ہیں۔بھارت اور پاکستان نے بدھ کو نئی دہلی اور اسلام آباد میں ایک ساتھ سفارتی چینلز کے ذریعے ایک دوسرے کی حراست میں قید شہریوں اور ماہی گیروں کی فہرست کا تبادلہ کیا۔ 2008 کے معاہدے کی دفعات کے تحت ہر سال یکم جنوری اوریکم جولائی کو ایسی فہرستوں کا تبادلہ کیا جاتا ہے۔وزارت خارجہ کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق بھارت نے اپنے یہاں قید پاکستان 267 شہریوں اور 99 ماہی گیروں کی معلومات دی ہے۔ اسی طرح پاکستان نے بتایا ہے کہ اس کے یہاں بھارت کے 55 شہری اور 227 ماہی گیر قید میں ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  ملک ہندوستان میں لنچروں کیلئے کوئی جگہ نہیں

    حکومت ہند نے پاکستان سے اس کے یہاں قید بھارتی شہریوں، لاپتہ حفاظتی اہلکاروں اور ماہی گیروں کی جلد رہائی اور ضبط شدہ کشتیاں کو چھوڑنے کا اعلان کیا ہے۔پریس ریلیز کے مطابق پاکستان کو کہا گیا ہے کہ وہ اس کے یہاں قید 4 بھارتی شہریوں اور 126 ماہی گیروں کی جلد رہائی اور وطن واپسی میں تیزی لائے۔ اس کے علاوہ 14 ہندوستانی شہریوں اور 100 بھارتی ماہی گیروں کو فوری قونصلر رسائی فراہم کرے۔

    یہ بھی پڑھیں  عوام کی خدمت میں لائف کیئر فائونڈیشن کا مثالی قدم

    حکومت نے پاکستان کی مختلف جیلوں میں بند بھارتی قیدیوں کی ذہنی حالت کا اندازہ کرنے کے لئے پڑوسی ملک کو طبی ماہرین کی ٹیم کے ارکان کو ویزا دینے میں تیز اور ان کی پاکستان سفر کو آسان بنانے کی بھی کوشش کی ہے۔ ساتھ ہی ایک مشترکہ عدالتی کمیٹی کی جلد دورہ اور 22 ماہی گیری کشتیاں کی رہائی کے سلسلے میں کراچی میں 4 رکنی ٹیم کے ابتدائی دورے کی اجازت کے لئے بھی پاکستان کو کہا ہے۔بھارت کا کہنا ہے کہ وہ ایک دوسرے کے ملک میں قید شہریوں اور ماہی گیروں کی تمام انسانی پہلوؤں کو ترجیح کی بنیاد پر حل کرنے کے لئے مصروف عمل ہے۔ اس تناظر میں بھارت نے پاکستان سے 82 پاکستانی قیدیوں کی قومیت کی حیثیت کی تصدیق کے لئے چل رہی ضروری کارروائی کو تیز کی اپیل کی ہے تاکہ انہیں جلد ان کے ملک بھیجا جا سکے۔

    یہ بھی پڑھیں  عوام کی خدمت میں لائف کیئر فائونڈیشن کا مثالی قدم

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    مرکزی حکومت کی گائڈ لائنس کو دیکھتے ہوئے عبادت گاھوں میں عبادت کی جاسکتی ھے

    سھارنپور : ایک اھم میٹنگ 29ستمبر شام 5بجے ضلع مجسٹریٹ سھارنپورجناب اکھلیش سنگھ نے بلائ جس میں ضلع کے...

    محکمۂ فلاح وبہبود کو ملی بڑی کامیابی ، 6 بچہ مزدوروں کو پولس نے کیا رہا

    ہاپوڑ (سید اکرام) محکمۂ فلاح و بہبود برائے اطفال نے مہم چلا کر چند بچہ مزدور کو رہائی دلائی...

    سی بی آئی عدالت کے فیصلہ سے عقل حیران ہے کہ پھر مجرم کون؟

    صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا سید ارشد مدنی نے بابری مسجد ملزمین کے تعلق سے دیے گئے فیصلہ پر...

    بابری مسجد انہدام سانحہ : ملزمین ایل کے اڈوانی،جوشی،اوما بھارتی،کلیا ن سنگھ سمیت تمام 32 ملزمین کو کیابری

    لکھنؤ : اترپردیش کی راجدھانی لکھنؤ میں ایس بی آئی کی اسپیشل عدالت نے 28سال پرانے بابری مسجد مسماری...

    یوپی میں امن وامان بہت خراب ہورہا ہے ، ہاترس میں تین اگست سے تین عصمت دری کے واقعات ہوچکے ہیں : سوربھ بھاردواج

    نئی دہلی : اترپردیش میں عصمت دری کے بڑھتے ہوئے واقعات ، برہمن اور دلت سماج کے خلاف تیزی...

    بھیم آرمی چیف چندر شیکھر آزاد عصمت دری کی شکار ہونے والی لڑکی سے اے ایم یو جے این میڈیکل کالج ملنے پہنچے

    علیگڑھ : علی گڑھ میں بھیم آرمی اور آزاد سماج پارٹی کے قومی صدر چندرشیکھر آزاد ہاتھراس کے تھانہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you