رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    میانمار میں 6 لاکھ روہنگیا نسل کشی کے خطرے کا شکار ہیں

    نیویارک:میانمار میں نسل کشی سے متعلق تحقیقات کرنے والے اقوامِ متحدہ کے مشن نے کہا ہے کہ رخائن میں باقی رہ جانے والے روہنگیا مسلمان اب بھی نسل کشی کے سنگین خطرے کا شکار ہیں۔اقوامِ متحدہ کے تفتیشی مشن نے پیر کو ایک رپورٹ جاری کی ہے جس میں اس بات کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ میانمار کی فوج کی وجہ سے ملک چھوڑ کر جانے والے 10 لاکھ سے زائد افراد اب ممکنہ طور پر وطن واپس نہیں آئیں گے۔خبر رساں ادارے’ اے ایف پی‘ کے مطابق رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ میانمار کی ریاست رخائن میں رہنے والے چھ لاکھ روہنگیا اب بھی بگڑتے ہوئے افسوسناک حالات میں رہنے پر مجبور ہیں۔رپورٹ کے مطابق میانمار اپنے نسل کشی کے ارادوں کو جاری رکھے ہوئے ہے جس کے باعث رخائن میں باقی بچ جانے والے روہنگیا افراد نسل کشی کے سنگین خطرے کا شکار ہیں۔یہ میانمار میں نسل کشی کی تحقیقات کرنے والی اقوامِ متحدہ کی تفتیشی کمیٹی کی حتمی رپورٹ ہے۔ جسے منگل کو جینیوا میں واقع اقوامِ متحدہ کے دفتر میں جمع کرایا جائے گا۔

    یہ بھی پڑھیں  ایم آئی ایم نے مفتی اسامہ ادریس ندوی کو بنایا کمشنری صدر

    رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ میانمار اپنے غلط کاموں کی تردید کرتے ہوئے اپنے خلاف ثبوتوں کو ضائع کرتا رہا ہے۔ میانمار وہ زمینیں ضبط کر رہا ہے جہاں سے روہنگیا افراد کو بے دخل کیا گیا تھا۔اقوامِ متحدہ کے تفتیش کاروں کے مطابق روہنگیا مسلمان غیر انسانی ماحول میں رہ رہے ہیں۔ ان کی 40 ہزار تعمیرات 2017 کے کریک ڈاؤن کے دوران تباہ کر دی گئی تھیں۔اقوامِ متحدہ کے مشن نے سکیورٹی کونسل سے سفارش کی ہے کہ وہ میانمار کا کیس انٹرنیشنل کرمنل کورٹ کو بھجوائے اور اس پر ایک ٹریبیونل تشکیل دیا جائے۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اقوامِ متحدہ کے تفتیش کاروں کے پاس ایسے 100 عہدے داروں کی فہرست ہے جو نسل کشی، انسانی اور جنگی جرائم میں ملوث رہے ہیں۔رپورٹ میں ان افراد کے نام ظاہر نہیں کیے گئے لیکن گزشتہ سال فیکٹ فائنڈنگ مشن نے آرمی آپریشن کو نسل کشی قرار دیتے ہوئے اس کا ذمّہ دار فوج کے چھ اعلیٰ افسران کو قرار دیا تھا جن میں میانمار کے آرمی چیف من آنگ لنگ بھی شامل تھے۔دوسری جانب میانمار کی فوج کے ترجمان جنرل زا من تن نے اقوامِ متحدہ کی ٹیم کی تحقیقات کو مسترد کرتے ہوئے اسے یک طرفہ قرار دیا ہے۔انہوں نے ’اے ایف پی‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اقوامِ متحدہ کی ٹیم جانب دارانہ الزامات عائد کرنے کے بجائے خود ان مقامات پر جا کر سچائی دیکھیں۔

    یہ بھی پڑھیں  استحقاق کی تاریخ کی خلاف ورزی پر کمیٹی کے سامنے پیش ہونے سے انکار : راگھو چڈھا

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  کشمیری پنڈتوں کی شاہین باغ خاتون مظاہرین سے اظہار یکجہتی

    Latest news

    مرکزی وزیر آیوش نے سی سی آر یو ایم کا دورہ کیا اور تحقیقی کاموں کی پذیرائی کی

    نئی دہلی : وزارت آیوش اور وزارت بندرگاہ، جہاز رانی اور آبی راستوں کے کابینی وزیر جناب سروانند سونوال...

    کرناٹک میں سیلاب سے بے گھر ہوئے لوگوں کو بھی جمعیۃعلماء ہند نے فراہم کیا آشیانہ

    ہندوستان میں اسلام حملہ آوروں سے نہیں مسلم تاجروں کے ذریعہ پہنچا ، ملک میں اقتدارکے لئے ہورہی ہے...

    عام آدمی پارٹی کی حکومت بننے کے 24 گھنٹوں میں یوپی کے عوام کو 300 یونٹ بجلی مفت ملے گی: منیش سسودیا

    لکھنؤ / نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے حوالے سے ایک...

    بی جے پی کے دورحکومت میں ملک کی خواتین و بیٹیاں انصاف کے لئے در در بھٹک رہی ہیں

    کانگریس ہیڈ کوارٹر 24 اکبر روڈ پر کانگریس خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ یوم خواتین کے موقع پرعمران پرتاپ...

    تبلیغی جماعت کے مرکز ’ نظام الدین‘ کو ہمیشہ کے لئے تو بند نہیں کیا جا سکتا : عدالت

    نئی دہلی : مرکزی حکومت نے دہلی ہائی کورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ سال جو تبلیغی جماعت کے...

    بی جے پی اور یوگی حکومت نہ تو آم کی ہے اور نہ ہی رام کی، انہوں نے رام مندر کے چندے میں بھی...

    ایودھیا/نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے منگل کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you