رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    زمینی سطح پر مہم کو موثر طریقے سے نافذ کرنے کے لئے تمام ایس ڈی ایم ، پولیس افسران اور ڈی پی سی سی کی 11 ٹیموں کو ہدایات دی گئی ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے دیپاولی کے آس پاس پٹاخوں سے آلودگی روکنے کے لئے منگل کو دہلی حکومت نے اینٹی کریکر مہم شروع کی ہے۔ انہوں نے دہلی کے عوام سے اپیل کی کہ وہ سبز پٹاخے استعمال کریں اور آلودگی پھیلانے والے آتش بازی کو نہ جلائیں۔ مہم کے ایک حصے کے طور پر ، تمام ایس ڈی ایم ، پولیس افسران اور ڈی پی سی سی کی 11 ٹیموں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ دہلی میں آلودگی کا باعث بننے والے پٹاخے کو برطرف نہ کیا جائے۔ ٹیمیں مہم کو موثر طریقے سے نافذ کرنے کے لئے زمین پر کام کر رہی ہیں۔

    ٹیمیں اس بات کی چھان بین کررہی ہیں کہ آیا فروخت ہونے والے کریکرز کے پاس ‘گرین کریکر’ لوگو موجود ہے اور یہ کہ اسٹوروں میں فروخت ہونے والے کریکرز کو مجاز کمپنیوں سے ہونا چاہئے۔ مہم کے ایک حصے کے طور پر ، وزیر ماحولیات گوپال رائے نے پٹاخوں کی فروخت کا مشاہدہ کرنے کے لئے دہلی کے صدر بازار بازار کا دورہ کیا۔ وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق دہلی میں آلودگی سے پاک پٹاخوں پر پابندی عائد ہے اور اس سال صرف آلودگی سے پاک سبز پٹاخوں کو جلانے کی اجازت ہے۔ آج سے دہلی میں اینٹی کریکر مہم شروع کردی گئی ہے۔ تمام ایس ڈی ایم ، ڈی پی سی سی کی 11 ٹیموں اور پولیس افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ دہلی میں آلودگی پھیلانے والے پٹاخوں پر پابندی عائد کریں۔ اس مہم کو عملی جامہ پہنانے کے لئے، دو چیزوں کو یقینی بنایا جارہا ہے ، پہلے – پٹاخوں پر ‘گرین کریکرز’ کا لوگو ہونا چاہئے اور دوسرا – دکانوں سے فروخت ہونے والے پٹاخے بااختیار کمپنیوں سے ہونے چاہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی وقف بورڈ کی درخواست پر 375 سالہ قدیم مسجد نواب والی کو ملا اسٹے
    یہ بھی پڑھیں  ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو ایک شرح پر رکھنا ممکن نہیں :سیتارمن

    ہم سپریم کورٹ کے رہنما اصولوں پر عمل پیرا ہیں۔ دہلی حکومت آلودگی کی روک تھام کے لئے تمام نئی رہنما خطوط پر عمل کرے گی، جو جاری بھی کی جائے گی۔ وزیر ماحولیات گوپال رائے نے کہا کہ پٹاخوں کے استعمال کی وجہ سے، ہر سال دیوالی کے ارد گرد دہلی میں آلودگی کی سطح بلند ہوتی ہے۔ اس کی وجہ سے، آلودگی پھیلانے والے پٹاخوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے اور ہم اس سال صرف گرین پٹاخوں کے استعمال کو فروغ دے رہے ہیں۔ دہلی حکومت نے آلودگی پر قابو پانے کے مقصد سے شہر میں آج سے اینٹی کریکر مہم شروع کردی ہے۔

    وزیر ماحولیات نے کہا ، میں دہلی کے عوام سے اپیل کرنا چاہتا ہوں کہ وہ پٹاخے نہ جلائیں ، کیونکہ یہ وہ وقت ہے جب ہم بیک وقت کورونا وائرس اور آلودگی کا سامنا کر رہے ہیں۔ میں صرف اپیل کرنا چاہتا ہوں کہ گرین پٹاخے استعمال کریں اور پٹاخے بچوں ، خواتین ، بوڑھوں اور بیماروں سے دور رکھیں۔ اینٹی کریکر مہم کو مؤثر طریقے سے نافذ کرنے کے لئے ، ہم نے ڈی پی سی سی اور ایس ڈی ایم ٹیمیں تشکیل دی ہیں جو علاقوں میں جاکر حقیقی صورتحال کی چھان بین کررہے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی فساد معاملہ ، دہلی پولیس اسمبلی کمیٹی کو ایف آئی آر دینے کو تیار نہیں

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  94 سالہ شخص کو سپریم کورٹ نے عبوری راحت دی

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you