رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    یوپی میں مسلمان ہونے کی سزا دی جارہی ہے : گلزار اعظمی

    سیتاپور لوجہاد معاملہ ، جمعیۃعلما مقدمہ ختم کرنے اور ملزمین کی عبوری ضمانت کے لیئے ہائی کورٹ سے رجوع ہوگی

    ممبئی : یوپی کے سیتا پور شہر سے لوجہاد قانون کے تحت گرفتا دس ملزمین جس میں دو خاتون بھی شامل ہیں کے مقدمات لڑنے کا بیڑا جمعیۃ علماء ہند نے اٹھایا ہے۔گرفتار شدہ مسلم ملزمین کی عبوری ضمانت اور مبینہ مفرور ملزمین کے تحفظ(ضمانت قبل از گرفتاری) کے لیئے لکھنؤ ہائی کورٹ سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

    اس ضمن میں ملزمین کے اہل خانہ نے مولانا وکیل احمد قاسمی(ضلع جنرل سیکریٹری جمعیۃ علماء سیتا پور، یوپی) کے توسط سے صدرجمعیۃ علماء ہند حضرت مولانا سید ارشد مدنی سے قانونی امداد طلب کی جسے صدر جمعیۃ نے منظور کرتے ہوئے جمعیۃ علماء مہاراشٹر قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی کو ہدایت دی کہ گرفتار شدگان کی جیل سے رہائی کے لیئے کوشش کی جائے جس کے بعد گلزار اعظمی نے وکلاء کو مقدمہ لڑنے کے لیئے احکامات جاری کیئے۔

    یہ بھی پڑھیں  جمعیۃ علماء ہند کی قومی مجلس عاملہ کا اجلاس اختتام پذیر

    اس تعلق سے آج گلزار اعظمی نے ممبئی میں کہا کہ گرفتار شدگان کے لواحقین نے صدر جمعیۃ علماء ہند سے درخواست کرنے کے ساتھ ساتھ ایڈوکیٹ شاہد ندیم (لیگل ایڈائزر جمعیۃ علما) سے بھی رابطہ قائم کیا اور انہیں مقدمہ کے متعلق تفصیلات فراہم کرتے ہوئے انہیں اس معاملے میں مداخلت کرنے کی گذارش کی جس کے بعد ایڈوکیٹ شاہد ندیم نے ا یڈوکیٹ فرقان خان کو لکھنؤ سے سیتاپور بھیجا تاکہ وہ معاملے کے تعلق سے مزید تفصیلات حاصل کرسکیں۔

    ایڈوکیٹ فرقان خان نے سیتار میں ملزمین کے لواحقین سے ملاقات کرکے معلوما ت حاصل کی جس کے مطابق پولس نے دس لوگوں کوگرفتار کیا ہے جس میں دو خواتین بھی شامل ہیں، ملزمین پر ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والی 19 سالہ لڑکی کا اغواء کرنے کا الزام ہے جبکہ پولس نے بعد میں ملزمین پر لو جہاد قانون(غیر قانونی تبدیلی مذہب مانع آرڈیننس) بھی نافذ کردیا۔

    یہ بھی پڑھیں  اردو اکادمی، دہلی کے وائس چیئرمین حاجی تاج محمد اردو خواندگی مراکز کے نئے سینٹروں کے قیام کے لیے سرگرم

    اس معاملے میں 29 نومبر کو پہلی گرفتاری عمل میں آئی تھی جس کے بعد پولس نے مزید دس ملزمین کو گرفتار کیا ہے جبکہ کئی ایک کو مفرور قرار دیا ہے۔ گرفتار شدگان میں شمشاد احمد، رفیق اسماعیل، جنید شاکر علی،محمد عقیل منصوری، اسرائیل ابراہیم، معین الدین ابراہیم، میکائیل ابراہیم، جنت الا براہیم، افسری بانو اسرائیل عثمان بقرعیدی شامل ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  مظفرنگر فسادات کے 6 سال مکمل ، متاثرین انصاف پانے میں ناکام

    گلزار اعظمی نے کہا کہ ملزمین کے لواحقین کے مطابق واقعہ ہونے کے بعد سے ہی علاقے میں خوف و حراس کا ماحول ہے اور ابتک ملزمین کی مدد کرنے کے لیئے کوئی بھی آگے نہیں آیا ہے نیز ملزمین کی معاشی حالت ایسی نہیں ہیکہ وہ عدالت جاسکیں لہذا انسانیت کا تقاضا ہیکہ اس مشکل وقت میں ملزمین کی ہر طریقے سے مدد کی جائے کیوں کہ انہیں مسلمان ہونے کی سزا دی جارہی ہے۔

    گلزار اعظمی نے بتایاکہ 26 نومبر کو لڑکی کے والد نے سات لوگوں پر اس کی لڑکی کو اغواء کرنے کا الزام عائد کیا تھا اور پولس میں فریاد درج کرائی تھی، بعد میں لڑکی کے والد نے مذہب اسلام قبول کرنے کی بھی شکایت پولس میں کرائی جس کے بعد لو جہاد قانون کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا۔

    یہ بھی پڑھیں  منیش سسودیا کا دو محلہ کلینک کا اچانک معائنہ

    گلزار اعظمی نے کہا کہ یو پی پولس نے معاشی طور پر کمزور مسلمانوں کو جھوٹے مقدمہ میں پھنسایا ہے اور مزید لوگوں کو پولس حراساں کررہی ہے جس کے خلاف ہائی کورٹ سے رجوع کیا جائے گا۔ ہائی کورٹ میں ملزمین کی عبوری ضمانت اور مقدمہ ختم کرنے کی درخواست داخل کرنے کے تعلق سے ایڈوکیٹ عارف علی،ایڈوکیٹ مجاہد احمداور ایڈوکیٹ فرقان کو ہدایت دی گئی ہے۔

    گلزار اعظمی نے کہا کہ لکھنؤ ہائی کورٹ میں بحث کرنے کے لیئے سینئر وکلاء کی خدمات حاصل کی جائے گی کیونکہ حال ہی میں الہ آباد ہائی کورٹ نے اپنے فیصلہ میں کہا ہیکہ بالغ لڑکے لڑکی کو اپنی پسند کی شادی اور مذہب اختیار کرنے کا آئینی حق ہے اس کے باوجود لو جہادکے نام پر یوپی سرکار مسلمانوں کو مسلسل نشانہ بنا کر حراساں کررہی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  جنوبی قطب علاقہ میں اترنے سے دو منٹ پہلے چندریان 2-کا لینڈر سے رابطہ ٹوٹا

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    ہمیں بی جے پی حکومتوں کے جبر کے خلاف ہر محاذ پر لڑنا ہوگا : عمران پرتاپ گڑھی

    آسام: آل انڈیا کانگریس کمیٹی اقلیتی ڈیپارٹمنٹ کے قومی صدر عمران پرتاپ گڑھی اپنے ایک روزہ دورے پر آسام...

    پرینکا سچی کانگریسی ہیں اور ان ہتھکنڈوں سے ڈرنے والی نہیں : راہل

    نئی دہلی : کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے لکھیم پور کھیری متاثرہ کنبوں کے ارکان سے ملنے...

    بی جی پی کے دورحکومت میں اقلیتی شعبہ سے تعلق رکھنے والے مسلم،سکھ،عیسائی،جین اور دیگر طبقہ ظلم کا شکار ہو رہا ہے : عمران...

    نئی دہلی : سکھ سماج کے زیر اہتمام دہلی کے کانسٹی ٹیوشن کلب میں ''ایک نئی پہل'' کے عنوان...

    وزیر نے ڈویژنل کمشنر کے دفتر کا معائنہ کیا اور ذات کے سرٹیفکیٹ میں تاخیر پر افسروں کے خلاف کارروائی کرنے کی وارننگ دی...

    سماجی بہبود کے وزیر راجیندر پال گوتم نے اچانک معائنہ کیا اور ذات کا سرٹیفکیٹ جاری کرنے میں تاخیر...

    کیجریوال حکومت اور بی جی پی حکومت رابعہ سیفی کو اِنصاف دلائے : عمران پرتاپ گھڑی

    مرادآباد : آل انڈیا کانگریس کمیٹی شعبۂ اقلیتی کے قومی صدر عمران پرتاپ گڑھی اپنے دو روزہ دورے کے...

    اقلیتی شعبہ کے قومی صدراور معروف شاعر عمران پرتاپ گڑھی کا شایان شان خیرمقدم

    اہم ذمہ داری ملنے کے بعد پہلی بار مرادآباد آمد پر پھولوں کی بارش،عوام کا اژدہام مرادآباد: کانگریس اقلیتی شعبہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you