رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    کوروناوائرس:تبلیغی مرکزمیں ہزاروں لوگوں کااجتماع قابلِ مذمت : ڈاکٹرشیخ عقیل احمد

    نئی دہلی:تبلیغی مرکزبستی حضرت نظام الدین میں ہزاروں لوگوں کے اجتماع اوراس کے نتیجے میں متعدداموات اورکئی لوگوں میں کوروناوائرس کی مثبت رپورٹ پائے جانے پرافسوس کااظہارکرتے ہوئے قومی کونسل برائے فروغ اردوزبان کے ڈائریکٹرڈاکٹرشیخ عقیل احمدنے کہاہے کہ ہمیں موجودہ سنگین حالات میں کسی بھی قسم کی بے احتیاطی سے بچناچاہیے اورہرطرح کے اجتماع اوربھیڑبھاڑ سے سختی سے پرہیز کرناچاہیے ۔ انھوں نے تبلیغی جماعت کے ذمے داروں کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ جب دسمبرکے مہینے سے ہی کوروناوائرس کے پھیلنے کی خبریں چل رہی ہیں اوردنیابھرکے ممالک میں احتیاطی قدم اٹھائے جارہے ہیں تو ایسے میں جماعت کے ذمے داروں کواجتماع کرنے اوردنیاکے مختلف ممالک سے لوگوں کوجمع کرنے کی کیامجبوری کی تھی؟آج ان کی وجہ سے ہزاروں لوگوں کی جانیں خطرے میں پڑگئی ہیں۔

    ڈاکٹرعقیل نے کہاکہ کورونا وائرس کی وجہ سے سعودی عرب، یواے ای، قطر، عمان، مصر سمیت تقریبا تمام مسلم ممالک میں مساجدبندکردی گئی ہیں، لوگوں کوگھروں میں نمازاداکرنے کاحکم دیاگیاہے اورہرقسم کے مذہبی اجتماعات پرروک لگادی گئی ہے ، مگرہمارے ملک میں مذہبی شخصیات اورعلما نے اس سلسلے میں بے احتیاطی کامظاہرہ کیاہے جس کی وجہ سے لوگوں کی جانیں خطرے میں پڑسکتی ہیں۔ انھوں نے کہاکہ کوروناوائرس کے خطرات سے اس وقت پوری دنیادوچارہے اوراب تک جہاں لاکھوں لوگ اس وائرس کے شکارہوئے ہیں وہیں ہزاروں لوگوں کی جانیں جاچکی ہیں، ایسے میں خصوصا مذہبی اداروں اورمذہبی شخصیات کی زیادہ ذمے داری بنتی ہے کہ وہ لوگوں میں بیداری پیداکریں اور جب تک کہ حالات قابومیں نہیں آجاتے کسی بھی قسم کے اجتماع سے گریزکریں۔

    یہ بھی پڑھیں  لاک ڈائو ن کے اول دن سے ہی جمعیۃ علماء ہند مزدوروں اور غریبو ں کے لیے ملک گیر سطح پرکام کررہی ہے
    یہ بھی پڑھیں  بدنام نہ کریں دھون، کسی بھی فساد میں شامل نہیں ہوتے ہندو: گری راج سنگھ

    ڈاکٹرعقیل نے کہاہے کہ حکومت اس وائرس کوپھیلنے سے روکنے کے لیے ہرممکن اقدامات کررہی ہے ، ایسے میں ہم سب کے ذمے داری ہے کہ حکومت کی کوششوں کاساتھ دیں،اس وائرس سے لڑنے میں حکومت کاتعاون کریں اورکوئی ایساقدم نہ اٹھائیں جس کی وجہ سے اپنے آپ کو اورملک کونقصان پہنچانے کاسبب بن جائیں۔ ڈاکٹرعقیل نے کہاہے کہ حکومت نے عوام اورملک کے تحفظ کے لیے اکیس روزہ لاک ڈاؤن کااعلان کیاہے لہٰذاتمام شہریوں کی ذمے داری ہے کہ اس لاک ڈاؤن پرعمل کرتے ہوئے اپنے گھروں میں رہیں اورصفائی ستھرائی کاخاص خیال رکھیں، ساتھ ہی انھوں نے حکومت سے اپیل بھی کی ہے کہ ایسے سنگین حالات میں جولوگ یاادارے غیرسنجیدگی اوربے احتیاطی کامظاہرہ کرتے ہوئے لاک ڈاؤن پرعمل کرنے میں کوتاہی کامظاہرہ کرتے ہیں ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے ۔

    یہ بھی پڑھیں  اروند کیجریوال 4 اپریل کو ہریانہ کے جند کے ہوڈا میدان میں منعقد ہونے والی کسان مہاپنچایت سے بھی خطاب کریں گے

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  سیتاپور لوجہاد معاملہ ، ٹرائل کورٹ سے دو خواتین سمیت چھ ملزمین کی ضمانت منظور

    Latest news

    مرکزی وزیر آیوش نے سی سی آر یو ایم کا دورہ کیا اور تحقیقی کاموں کی پذیرائی کی

    نئی دہلی : وزارت آیوش اور وزارت بندرگاہ، جہاز رانی اور آبی راستوں کے کابینی وزیر جناب سروانند سونوال...

    کرناٹک میں سیلاب سے بے گھر ہوئے لوگوں کو بھی جمعیۃعلماء ہند نے فراہم کیا آشیانہ

    ہندوستان میں اسلام حملہ آوروں سے نہیں مسلم تاجروں کے ذریعہ پہنچا ، ملک میں اقتدارکے لئے ہورہی ہے...

    عام آدمی پارٹی کی حکومت بننے کے 24 گھنٹوں میں یوپی کے عوام کو 300 یونٹ بجلی مفت ملے گی: منیش سسودیا

    لکھنؤ / نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے حوالے سے ایک...

    بی جے پی کے دورحکومت میں ملک کی خواتین و بیٹیاں انصاف کے لئے در در بھٹک رہی ہیں

    کانگریس ہیڈ کوارٹر 24 اکبر روڈ پر کانگریس خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ یوم خواتین کے موقع پرعمران پرتاپ...

    تبلیغی جماعت کے مرکز ’ نظام الدین‘ کو ہمیشہ کے لئے تو بند نہیں کیا جا سکتا : عدالت

    نئی دہلی : مرکزی حکومت نے دہلی ہائی کورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ سال جو تبلیغی جماعت کے...

    بی جے پی اور یوگی حکومت نہ تو آم کی ہے اور نہ ہی رام کی، انہوں نے رام مندر کے چندے میں بھی...

    ایودھیا/نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے منگل کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you