رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    جمہوریتیں اپنے شہریوں کو جواب دہ ہیں۔ وہ قانون کی حکمرانی کا احترام ، زندگیوں اور جائیداد کو تحفظ، اور ہر فرد کی آزادیوں، وقار اور مساوات کا احترام کرتی ہیں : وزیر خارجہ مائیکل آر پومپیو‎

    امریکہ : 15ستمبر کو جمہوریت کا عالمی دن مناتے ہوئے ہم ہر شہری کے جمہوری خود اختیاری کے عمل میں حصہ لینے کے حق کی توثیق نو کرتے ہیں۔ جمہوریتیں اپنے شہریوں کو جواب دہ ہیں۔ وہ قانون کی حکمرانی کا احترام ، زندگیوں اور جائیداد کو تحفظ، اور ہر فرد کی آزادیوں، وقار اور مساوات کا احترام کرتی ہیں۔

    جمہوریت بدستور دنیا بھر کے لوگوں کی آرزو ہے کیونکہ ہم میں ہر ایک آزادی کا خواہش مند ہے۔ بچپن ہی سے ہم جبلی طور پر اپنی خوداختیاری کی اہلیت جتاتے ہیں تاکہ ایسے فیصلے کر سکیں جن کی بدولت ہماری زندگیاں ہماری خواہش کے مطابق تشکیل پاسکیں۔ شہریوں کی حیثیت سے ہم یہ بات سمجھتے ہیں کہ ہمیں دوسروں کو اُن رہنماؤں کے فیصلوں کی دانائی پر مباحث میں شامل کرنا ہے جن پر ہم اقتدار کے لیے اعتماد کرتے ہیں تاکہ ہماری زندگیوں، جائیداد ،اور آزادیوں کا تحفظ ہو سکے۔ بحیثیت انسان ہم جانتے ہیں کہ ہمارے لیے اکیلے یہ کام کرنا ممکن نہیں۔ جمہوریتیں افراد کی جامع برادریاں ہوتی ہیں جو آزادانہ طور سے منتخب کردہ اپنے اہداف کی تکمیل کے لیے اکٹھے کام کرنے کے لیے آزاد ہوتے ہیں اور وہ پھلتے پھولتے ہیں کیونکہ آزادی سبھی کی صلاحیت اور تخلیقی قوت کو سامنے لے آتی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  کورونا وائرس کے نام پر دہشت نہ پھیلائیں : ہرش وردھن

    آج دنیا کو صحت کے شعبے میں جدید ادوار کے ایک بہت بڑے بحران کا سامنا ہے۔ جمہوریتوں، آمرانہ حکومتوں اور آمریتوں کو کرونا وائرس کی وبا سے ایک جیسا ہی خطرہ لاحق ہے مگرجمہوریتیں اس موضوع پر کھلے بحث مباحثے کے لیے آزاد ہیں کہ اس کا توڑ کیا ہونا چاہیے۔ مگر کسی بھی آمریت میں یہ صورتحال نہیں ہوتی۔ ان کی پہلی ترجیح صحت عامہ نہیں بلکہ اپنے اقتدار کا تحفظ ہوتا ہے۔ وہ سخت سوالات کا جواب دینے سے انکار کرتی ہیں۔ وہ غلط معلومات پھیلاتی ہیں، مسائل کی ذمہ داری کمزور معاشرتی گروہوں پر عائد کرتی ہیں، وسیع پیمانے پر نگرانی میں اضافہ کرتی ہیں اور قانون کی حکمرانی کو معطل رکھتی ہیں۔ جب رہنما صرف اپنی ذات کو یا اپنے زیرتصرف سیاسی جماعتوں کو جواب دہ ہوں تو لوگوں کو مصائب کا سامنا رہتا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  کووڈ 19 کے رہنما اصولوں کی پاسداری کے ساتھ جامعہ میں74 ویں یوم آزادی پر تقریب کا اہتمام
    یہ بھی پڑھیں  شدید بارش کے بعد گاندھی ساگر ڈیم کے پانچ بڑے اور سات چھوٹے گیٹ کھولے گئے

    اس سے برعکس مشکل حالات میں جمہوریتیں پھلتی پھولتی ہیں۔ اظہار کی آزادی اور قانون کے سامنے تمام لوگوں کو مساوی حقوق حاصل ہونے کے باعث جمہوری معاشروں کے شہری صحت عامہ کو لاحق مسائل سے مل کر نمٹنے کے اہل ہوتے ہیں۔ جمہوری ممالک میں لوگ معلومات تک رسائی کا مطالبہ کرتے ہیں تاکہ وہ خود کو اور دوسروں کو محفوظ رکھ سکیں۔ جن معاشروں میں قانون کی رو سے تمام شہری برابر ہوتےہیں وہاں سماجی عمل میں تمام لوگوں کی مکمل شرکت اور تحفظ کو فروغ دینے کے ٹھوس اقدامات اٹھا کر ایسا ممکن بنایا جاتا ہے۔

    جمہوری حکومت کسی طور مکمل نہیں ہوتی مگر یقینی طور پر یہ اپنے ہر متبادل سے بہتر ہے۔ جمہوری معاشرے انسانی حقوق کا احترام کرتے ہیں دوسروں سے زیادہ پرامن، خوشحال اور محفوظ ہوتے ہیں۔ ہم دنیا بھر میں ان تمام لوگوں کے ساتھ ہیں جو جمہوری حکومتوں میں آزادانہ انداز میں، حفاظت سے اور وقار کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  باہری لوگوں کو لانے کے لئے دھرم شالا نہیں ہے بھارت : راج ٹھاکرے

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  کورونا وائرس کے نام پر دہشت نہ پھیلائیں : ہرش وردھن

    Latest news

    مرکزی حکومت کی گائڈ لائنس کو دیکھتے ہوئے عبادت گاھوں میں عبادت کی جاسکتی ھے

    سھارنپور : ایک اھم میٹنگ 29ستمبر شام 5بجے ضلع مجسٹریٹ سھارنپورجناب اکھلیش سنگھ نے بلائ جس میں ضلع کے...

    محکمۂ فلاح وبہبود کو ملی بڑی کامیابی ، 6 بچہ مزدوروں کو پولس نے کیا رہا

    ہاپوڑ (سید اکرام) محکمۂ فلاح و بہبود برائے اطفال نے مہم چلا کر چند بچہ مزدور کو رہائی دلائی...

    سی بی آئی عدالت کے فیصلہ سے عقل حیران ہے کہ پھر مجرم کون؟

    صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا سید ارشد مدنی نے بابری مسجد ملزمین کے تعلق سے دیے گئے فیصلہ پر...

    بابری مسجد انہدام سانحہ : ملزمین ایل کے اڈوانی،جوشی،اوما بھارتی،کلیا ن سنگھ سمیت تمام 32 ملزمین کو کیابری

    لکھنؤ : اترپردیش کی راجدھانی لکھنؤ میں ایس بی آئی کی اسپیشل عدالت نے 28سال پرانے بابری مسجد مسماری...

    یوپی میں امن وامان بہت خراب ہورہا ہے ، ہاترس میں تین اگست سے تین عصمت دری کے واقعات ہوچکے ہیں : سوربھ بھاردواج

    نئی دہلی : اترپردیش میں عصمت دری کے بڑھتے ہوئے واقعات ، برہمن اور دلت سماج کے خلاف تیزی...

    بھیم آرمی چیف چندر شیکھر آزاد عصمت دری کی شکار ہونے والی لڑکی سے اے ایم یو جے این میڈیکل کالج ملنے پہنچے

    علیگڑھ : علی گڑھ میں بھیم آرمی اور آزاد سماج پارٹی کے قومی صدر چندرشیکھر آزاد ہاتھراس کے تھانہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you