رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    شاہین باغ معاملے میں سماعت کے لئے ماحول سازگار نہیں : سپریم کورٹ

    نئی دہلی:سپریم کورٹ نے بدھ کو دہلی کے شاہین باغ علاقے میں مظاہرین کو ہٹائے جانے سے متعلق عرضیوں پر سماعت 23 مارچ تک کے لئے یہ کہتے ہوئے ملتوی کردیا کہ ماحول سماعت کے لئے سازگار نہیں ہے ۔سپریم کورٹ نے فی الحال کوئی حکم دینے سے بھی انکار کردیا ہے ۔اعلی ترین عدالت نے ساتھ ہی دہلی تشدد معاملے کی خصوصی جانچ ٹیم (ایس آئی ٹی)سے جانچ کرانے سے متعلق بھیم آرمی کے سربراہ چندرشیکھر کی عرضی خارج کردی ۔جسٹس سنجے کشن کول اور جسٹس ا کے ایم جوزف کی بنچ نے کہا ہے کہ یہ معاملہ دہلی ہائی کورٹ میں سماعت ہورہی ہے اس لئے وہ اس معاملے میں مداخلت نہیں کریں گے ۔اس درمیان اعلی ترین عدالت نے اشتعال انگیز تقریر کرنے والوں کے خلاف کارروائی نہ کرنے کے سلسلے میں دہلی پولس کو کٹہرے میں کھڑا کیا۔بنچ نے کہا کہ پبلک سڑک مظاہرے کے لئے نہیں ہے ۔

    اعلی ترین عدالت نے رائے زنی کی کہ ابھی ماحول اس مقدمے کی سماعت کے لئے ٹھیک نہیں ہے ۔سماعت کے ابتدا میں ہی جسٹس کول نے کہا ہے کہ بنچ اس معاملے کے دائرے ‘جو شاہین باغ ناکہ بندی کی منظوری کے لئے ہے ) کی توسیع کرنے کا ارادہ نہیں کررہی ہے ۔ جسٹس کول نے کہا کہ وہ بعد میں اس پر سماعت کریں گے ابھی ماحول سازگار نہیں ہے ۔بنچ نے کہا ہے کہ 13 سے زیادہ لوگوں کی موت ہوگئی ہے ۔ یہ بے حد سنگین موضوع ہے ۔ ‘پبلک سڑک’ مظاہرے کی جگہ نہیں ہوتی ہے ۔اعلی ترین عدالت نے کہا ہے کہ پولس اپنا کام کرے ۔ کبھی کبھی صورت حال ایسی ہوجاتی ہے کہ ‘آؤٹ آٖ ف دی باکس’ جاکر کام کرنا پڑتا ہے ۔’’جسٹس جوزف نے کہا ہے کہ ‘‘ جس پل اشتعال انگیزتنقید کی گئی ہے پولس کو کارروائی کرنی چاہئے تھی، دہلی ہی نہیں، اس معاملے کے لئے کوئی بھی ریاست ہو، پولس کو قانون کے مطابق کام کرنا چاہئے ۔ یہ پریشانی پولس کی پروفیشنلزم میں کمی کی ہے ۔’’جسٹس جوز ف نے کہا ہے کہ پولس قانون کے مطابق کام کرنے میں ناکام رہی ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ ‘‘ہم نے کئی مرتبہ اس معاملے میں ہدایات جاری کئے ہیں۔ امریکہ اور برطانیہ میں پولس کیسے کام کرتی ہے ۔

    یہ بھی پڑھیں  جھارکھنڈ میں پھر سے نوجوان ماب لنچنگ کس شکار
    یہ بھی پڑھیں  جامعہ نارتھ زون انٹر یونیورسٹی ہاکی ٹورنامنٹ کی میزبانی کرے گی

    وہاں پر پولس کسی کے حکم کا انتظار نہیں کرتی ہے ۔ جیسے ہی کوئی اشتعال انگیز بیان دیتا ہے ۔ پولس اس کی گرفتاری کے لئے کام کرتی ہے ۔ چاہے وہ اس کا تعلق ‘اے ’ سیاسی پارٹی سے ہو یا ‘بی’۔سالیسیٹر جنرل تشار مہتہ نے اس کی مخالفت کی۔ انہوں نے کہاکہ اگر پولس کام کرنا شروع کردے تو عدالت کو اسے روکنے کے لئے دخل دینا ہوگا۔انہوں نے پولس کے کام کاج پر کوئی تنقید نہ کرنے کا سپریم کورٹ سے درخواست کی۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی تنقید سے پولس بے عزتی محسوس کرے گی۔’’جسٹس جوزف نے کہا کہ ‘‘اس بارے میں، میں کچھ گوش گذار کرنا چاہتا ہوں۔ اگر میں نہیں کروں گا تو اپنے فرض کی ادائیگی نہیں کروں گا۔’’ اس ادارے کے تئیں، اس ملک کے تئیں میری ذمہ داری ہے ۔’’ پولس کی جانب سے آزادانہ اور پیشہ ورانہ ذمہ داری کی کمی رہی ہے ۔مسٹر مہتہ نے جسٹس سے درخواست کی کہ ‘‘اس ماحول میں، آپ کو اس طرح کی تنقید نہیں کرنی چاہئے ، پولس کی حوصلہ شکنی نہیں کی جانی چاہئے ۔

    یہ بھی پڑھیں  جامعہ نارتھ زون انٹر یونیورسٹی ہاکی ٹورنامنٹ کی میزبانی کرے گی

    ’’جسٹس جوزف نے کہا ہے کہ ‘‘مسئلہ پولس کی پیشہ ورانہ ذمہ داری کی کمی ہے ، اگر یہ پہلے کیا گیا ہوتا تو یہ صورت حال نہیں پیدا ہوتی۔’’بنچ نے یہ بھی کہا ہے کہ پولس کی آزادی یقینی بنانے کے لئے پرکاش سنگھ معاملے میں سپریم کورٹ کی ہدایات کا نفاذ نہیں کیا گیا ہے ۔جسٹس جوزف نے کہا ہے کہ وہ ‘‘پریشان ہیں کہ 13 لوگوں کی جان چلی گئی ہے ۔’’اس درمیان عدالت میں ایک وکیل نے بنچ کو اطلاع دی کہ اب یہ تعداد 20 تک پہنچ گئی ہے ۔ اب اس معاملے کی سماعت 23 مارچ کو ہوگی۔

    یہ بھی پڑھیں  شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاج کرنے والے مسلم نوجوانوں کی ضمانت پر بحث مکمل: گلزا راعظمی

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    دہلی میں 5-ٹی پلان کو عمل میں لاکر جیتیں گے کورونا سے جنگ : اروند کیجریوال

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہمیں ہمیشہ سے کورونا کو شکست دینے...

    میڈیا کی متعصبانہ رپورٹنگ کے خلاف جمعیة علماء ہند سپریم کورٹ میں

    نئی دہلی:ملک کے بے لگام ٹی وی چینلوں پر قانونی لگام لگانے کی پہل جمعیةعلماءہند نے کردی گزشتہ روز...

    مرکزی حکومت نے 27 ہزار پی پی ای کٹس مختص کیں: اروند کیجریوال

    نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہم دہلی میں کسی کو بھوکا سونے نہیں...

    کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر بن کر ٹوٹ رہاہے : مولانا ارشد مدنی

    دیوبند: جمعیۃ علماء ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی نے کہاکہ کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر...

    سات نئے کورونا کے مثبت معاملے ملنے سے مچا ہڑکمپ

    لکھنؤ:راجدھانی میں کورونا مثبت پائے گئے مریضوں کی تعداد میں کوئی بھی کمی نہیں آرہی ہے۔سات نئے معاملے سامنے...

    معـــاشرتی ، مــذہبی اور عــــلاقائی اختــلاف سے بالاتر ہوکر ہی کـــوویڈ 19 سےجیتی جاسکتی ہے جنـــــــگ : پروفیســــر احــــرار حســـــین

    نئی دہلی : سنٹر فار ڈسٹنس اینڈ اوپن لرننگ، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے ڈائریکٹر (اکیڈمک) پروفیسر احرار حسین نےکہاکہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you