رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    اگر دہلی پولیس قاتلوں کو فوری طور پر نہیں پکڑتی ہے تو دلت معاشرہ سڑکوں پر آجائے گا اور پوری دہلی کو جام کردیگا : اجے دت

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کی سینئر رہنما آتشی نے پریس کانفرنس میں کہا کہ دلت معاشرے سے تعلق رکھنے والی بچی جو تین دن سے کھچڈی پور علاقے سے لاپتہ تھی، اسے آج بے دردی سے قتل کردیا گیا ہے۔ معاملہ درج ہونے کے باوجود ، دہلی پولیس بی جے پی قائدین کی تلاش کرنے کے بجائے ان کی حفاظت کرتی رہی۔ جب بی جے پی کے ممبران پارلیمنٹ گوتم گمبھیر اور ریاستی صدر آدیش گپتا کلیانپوری وارڈ میں انتخابی مہم کے لئے آئے تو پولیس ان کا تعاقب کررہی تھی۔

    جب آدیش گپتا وہاں ریلی کے لئے آئے تو ، خواتین قائدین پولیس کو مارنے کے لئے بھاگ رہی تھیں اور ان کے ساتھ بدسلوکی کررہی تھیں۔ اسی دوران ایم ایل اے اجے دت نے کہا کہ مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کو جواب دینا چاہئے کہ کیا بی جے پی کے اقتدار میں والمیکی معاشرہ محفوظ نہیں ہے؟ ہمارے دلت اور والمیکی معاشرے کے لوگوں نے دہلی پولیس سے التجا کی کہ ہماری بچی لاپتہ ہے لیکن انہوں نے کوئی کارروائی نہیں کی۔ اگر دہلی پولیس فوری طور پر قاتل کو نہیں پکڑتی ہے تو دلت معاشرہ سڑکوں پر آجائے گا اور پوری دہلی کو جام کر دے گا۔جمعہ کو عام آدمی پارٹی کی سینئر رہنما اور ایم ایل اے آتشی نے پارٹی ہیڈ کوارٹر میں پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔

    آتشی نے کہا کہ دہلی پولیس دہلی کے عوام ، خواتین اور بیٹیوں کی حفاظت میں ناکام رہی ہے۔ ایسا ہی ایک چونکا دینے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ 8 سالہ بچی تین دن قبل مشرقی دہلی کے علاقے کھچڈی پور سے لاپتہ ہوگئی تھی۔ مقامی لوگوں نے پولیس کے پاس جاکر رپورٹ درج کرائی۔ یہاں تک کہ اغوا کے واقعے کو اسی علاقے میں واقع دہلی حکومت کے سی سی ٹی وی کیمرے میں قید کرلیا گیا تھا۔ لڑکی کو اغوا کرنے والے شخص کی فوٹیج بھی سامنے آگئی۔ وہ فوٹیج دہلی پولیس کو بھی دی گئی تھی۔ اس کے باوجود بھی، دہلی پولیس نے تین دن تک نہ تو بچی کو تلاش کیا اور نہ ہی اغوا کار پکڑا ابھی تک۔ آج اس بچی کی لاش ملی ہے۔ 8 سالہ بیٹی کا قتل کردیا گیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  معـــاشرتی ، مــذہبی اور عــــلاقائی اختــلاف سے بالاتر ہوکر ہی کـــوویڈ 19 سےجیتی جاسکتی ہے جنـــــــگ : پروفیســــر احــــرار حســـــین

    دہلی پولیس کیا کر رہی تھی؟ دہلی پولیس 3 دن سے اسی علاقے میں بی جے پی قائدین کی حفاظت کر رہی تھی۔ آتشی نے کہا کہ جب بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ گوتم گمبھیر اور ریاستی صدر آدیش گپتا وہاں آئے تھے تو بی جے پی پولیس ان کا پیچھا کررہی تھی۔ لیکن دہلی پولیس نے گمشدہ 8 سالہ بچی کی تلاش کے لئے کچھ نہیں کیا۔ آج اس لڑکی کو بے دردی سے قتل کیا گیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  عدم اتفاق جمہوریت کی شناخت:الہ آباد ہائی کورٹ

    اس علاقے کی صورتحال بہت خراب ہے۔ وہاں کے لوگ بی جے پی کی پولیس اور بی جے پی کارکنوں کو مارنے کے لئے بھاگ رہے تھے۔ کھچڈی پور کے اگلے کلیانپوری وارڈ میں الیکشن جاری ہے۔ ادیس گپتا کی وہاں ریلی میں پولیس بی جے پی قائدین کی حفاظت کے لئے موجود تھی۔ جب 8 سالہ بچی کو اغوا کرلیا گیا تو بی جے پی کی پولیس کوئی کارروائی نہیں کرتی ہے۔ اس علاقے میں ، صورتحال ایسی ہوگئی کہ جب آدیش گپتا وہاں ریلی کرنے آتے ہیں تو ، وہاں کی خواتین قائدین کو پولیس مارنے کے لئے بھاگ رہی ہیں۔ وہ ان کے ساتھ بدسلوکی کررہے تھے اور کہہ رہے ہیں کہ آج آپ ان رہنماؤں کی حفاظت کر رہے ہیں ، لیکن جب آپ کی بچی لاپتہ ہوگئی تو آپ کہاں تھے؟

    یہ بھی پڑھیں  ہندوستان میں شدت پسندی کے لئے کوئی جگہ نہیں: مولانا آس محمد گلزارؔ قاسمی

    آج ہم دہلی پولیس سے پوچھنا چاہتے ہیں ، جو اس شہر میں لوگوں کی حفاظت، خواتین اور لڑکیوں کی حفاظت کا ذمہ دار ہے؟ کیونکہ دہلی پولیس بی جے پی کے تحت آتی ہے۔ کیا بی جے پی قائدین کی حفاظت کرنا آپ کی واحد ذمہ داری ہے؟ کیا اس شہر کی خواتین اور لڑکیوں کا کوئی تحفظ نہیں ہے؟ کیوں دہلی میں صورتحال اتنی سنگین ہوگئی ہے کہ دن کی روشنی میں ایک 8 سالہ بچی کو بے دردی سے قتل کیا گیا ہے لیکن پولیس کچھ کرنے سے قاصر ہے۔

    بی جے پی کی پولیس کو جواب دینا پڑے گا کہ وہ 8 سالہ بچیوں کی حفاظت کیوں نہیں کرسکتی اور بی جے پی قائدین کی حفاظت کے لئے ہمیشہ موجود رہتی ہے۔ امبیڈکر نگر سے ایم ایل اے اجے دت نے کہا کہ ہمارے سامنے ایک بہت ہی افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے۔ دلت والمیکی سماج کی ایک چھوٹی سی 8 سالہ بیٹی تین دن سے لاپتہ تھی۔ آج اس کے قتل کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ہم جاننا چاہتے ہیں کہ دہلی پولیس کیا کر رہی ہے۔ جب ہمارے والمیکی معاشرے کے افراد دہلی پولیس کے پاس گئے اور التجا کی کہ ہماری بچی لاپتہ ہے ، تو اس نے کوئی کارروائی نہیں کی۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی حج کمیٹی کے ای او جاوید عالم خان سے مرکزی حج کمیٹی آف انڈیا کے سابق ممبر محمد عرفان احمد کی خصوصی ملاقات
    یہ بھی پڑھیں  امانت اللہ خان نے جاری کیں وقف بورڈ میں رکی ہوئی تنخواہیں

    سی سی ٹی وی فوٹیج میں بھی مجرم کو دکھایا گیا لیکن اس پر کوئی کارروائی نہیں کی۔ دہلی پولیس بی جے پی قائدین کے بعد ہی ان کی حفاظت میں مصروف ہے۔ دہلی میں نہ تو خواتین محفوظ ہیں اور نہ ہی کوئی دلت محفوظ ہے۔ اس واقعے پر والمیکی معاشرے کے لوگوں میں سخت غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ دہلی کی پولیس کمتر اور ناکارہ ہے ، کوئی کام نہیں کررہے ہیں۔ ہمارے دلت اور والمیکی معاشرے کے لوگوں کی پریشانیوں کو کوئی نہیں سن رہا ہے۔ میں وزیر داخلہ امیت شاہ سے پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا اس ملک میں ، دہلی میں دلت معاشرے کے لوگ محفوظ ہیں؟ کیا والمیکی معاشرے کے لوگ محفوظ ہیں؟ دہلی پولیس نے کارروائی کیوں نہیں کی اور وہ ہمارے ساتھ ناانصافی کیوں کررہے ہیں۔

    کیا ہماری بیٹیاں بیٹیاں نہیں ہیں؟ اس قتل کے مرتکبین کے خلاف کیا کارروائی کی جائے۔ مجرم کیوں نہیں پکڑے گئے تم ایسی حرکت کیوں کر رہے ہو؟ کیوں دہلی پولیس صرف بی جے پی کی پولیس بن گئی ہے۔ یہ صرف ان کے قائدین کو تحفظ کیوں دے رہی ہے۔ میں مطالبہ کرتا ہوں کہ اگر پولیس فوری طور پر قاتل کو نہیں پکڑتی ہے تو ہم سڑکوں پر آئیں گے اور پوری دہلی کو جام کردیں گے۔ ان قاتلوں کو جلد سے جلد پکڑا جانا چاہئے۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    نرسنگھا نند سروسوتی کے بیان سے ہندوستان کی شبیہ دنیا میں داغدار ہوئی

    گستاخ رسول کے خلاف دیئے گئے اپنے بیان پر قائم،میرا بیان ہندوستان کے آئن کے مطابق،پارلیمینٹ اسٹریٹ تھانہ پہونچ...

    نرسنہانند پر کارروائی کے لئے صدر جمہوریہ کو میمورنڈم

    وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کو بھی کاپی،چیئرمین امانت اللہ خان نے درج کرائی تھی شکایت،مساجد کے ممبروں سے...

    آج کسان ایم ایس پی کی لڑائی لڑ رہے ہیں ، وہ جانتے ہیں کہ تین زرعی قوانین کے نفاذ کے بعد کتنا تکلیف...

    نئی دہلی : دہلی کی منڈیوں میں کاؤنٹر لگا کر ایف سی آئی کی جانب سے گندم کی خریداری...

    وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے بے گھر کنبے کے لئے فلیٹ شفٹ کرنے کے لئے ‘جہاں کچی آبادی ،وہیں مکان’ اسکیم کا جائزہ لیا

    نئی دہلی : وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کچی بستیوں میں رہنے والے خاندانوں کے لئے ' جہاں جھگی...

    لال مسجد معاملہ ، 29اپریل تک کسی طرح کا ایکشن نہ لینے کی مرکز نے کرائی یقین دہانی

    مسجد کو شہید کرنے کی ہورہی ہے سازش،وقف بورڈ نے دکھائی مستعدی،پولیس انتظامیہ کے ذریعہ مسجد شہید کرنے کی...

    امیر شریعت مولانا محمد ولی رحمانی کی وفات پر ملت ٹائمز کے زیر اہتمام تعزیتی نشست کا انعقاد

    نئی دہلی : امیر شریعت مولانا ولی رحمانی نور اللہ مرقدہ کے سانحہ ارتحال پر ملت ٹائمز کے زیر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you