قومی نیوز پہلے سسودیا، ستیندر جین اور اب کجریوال کا دورہ...

پہلے سسودیا، ستیندر جین اور اب کجریوال کا دورہ بھی کیا رد

ئی دہلی : کوپن ہیگن میں موسمیاتی سربراہی اجلاس میں وزیر اعلی اروند کیجریوال کو شرکت کی اجازت نہ دینا دہلی کے عوام کی توہین ہے، اس سے قبل دہلی کی سابق وزیر اعلی محترمہ شیلا دیکشت جی نے بھی اس سربراہی اجلاس میں شرکت کی تھی،دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال کو کوپن ہیگن میں ہونے والے C-40 آب و ہوا اجلاس میں شرکت کی اجازت نہ دینے پر عام آدمی پارٹی نے بدھ کے روز بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت والی مرکزی حکومت کی شدید مذمت کی۔ مرکزی حکومت کی جانب سے مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے کہا ہے کہ اجازت نہیں دی گئی کیوں کہ یہ سربراہی اجلاس “میئر سطح” کے شرکاء کے لئے تھا۔ سنجے سنگھ نے کہا کہ “یہ مرکز کا یہ بہت بڑا بہانہ ہے کہ یہ سربراہی اجلاس میئروں کی تھی اور اروند کیجریوال دہلی کے وزیر اعلی ہیں۔ اس سے قبل دہلی کی سابق وزیر اعلی مرحومہ ، شیلا دکشت بھی شامل ہوئی تھیں اور وہ دہلی کی سابق وزیراعلیٰ بھی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے کچھ سالوں میں دہلی حکومت کی کڈی محنت کی وجہ سے ، شہر کی آلودگی میں 25÷ کمی واقع ہوئی ہے۔ “دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اس سربراہی اجلاس میں اس بات پر تبادلہ خیال کرنے جارہے تھے کہ دہلی آڈ ایون جیسے مختلف مراحل سے کیسے اس طرح کی تبدیلی حاصل کرسکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  میں جن گلیوں میں اُردو بولتا ہوں٭درےچے دوستی کے کھولتا ہوں

لیکن مرکز نے ان کے دورے کی اجازت نہیں دی یہ دہلی کے عوام کی توہین ہے۔ ” انہوں نے یہ بھی کہا کہ دہلی حکومت کو آج سفر کی اجازت نہ دینے کے بارے میں مرکز سے حتمی بات چیت موصول ہوئی ہے۔سنجے سنگھ نے دہلی کے وزیر تعلیم مسٹر منیش سسودیا اور وزیر صحت ستیندر جین کے ساتھ مل کر اسی طرح کے کام کی مثال دی۔ انہوں نے کہا ، “یہ پہلا موقع نہیں جب مرکز نے یہ کیا ہے ۔نائب وزیر اعلی اور وزیر تعلیم منیش سسودیا اور وزیر صحت ستیندر جین کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوا۔” دہلی حکومت کی کامیابیوں کے بارے میں بات کرنے کے لئے دونوں کو بیرون ملک جانے سے منع کیا گیا تھا۔ دہلی کے تعلیمی انقلاب کے ماڈل کی دنیا بھر میں بحث کی جارہی ہے ، لیکن دہلی کے وزیر تعلیم منیش سسودیا کو اس ماڈل کو دنیا کے سامنے پیش کرنے کی اجازت نہیں تھی۔

یہ بھی پڑھیں  آندھرا پردیش: دریائے گوداوری میں پلٹی کشتی، 36؍افراد لاپتہ
یہ بھی پڑھیں  فلم ’پرستھانم‘ کے سازوں نے اس وجہ سے کیا علی فضل کا انتخاب

ستیندر جین کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوا جب وہ محلہ کلینک پروجیکٹ کے بارے میں بات کرنے جارہے تھے ، جو پوری دنیا میں صحت کے ماڈلز میں سے ایک ہے۔ انہوں نے بی جے پی سے پوچھا کہ وہ دہلی حکومت اور اس کے کام سے کیوں خوفزدہ ہے۔ “بی جے پی کیجریوال حکومت کے کاموں سے کیوں خوفزدہ ہے؟ کئی سالوں کے دوران دہلی حکومت نے تعلیم اور صحت کے معیار کو بہتر بنا کر ایک قابل ذکر کام کیا ہے۔ اب ہر سرکاری اسکول میں اچھ بنیادی ڈھانچہ ، تعلیم کا اچھا نظام ہے ، طلباء کے لئے ورلڈ کلاس ہاکی کے میدان ہیں ، لیکن مرکز نہیں چاہتا ہے کہ ہم دنیا کو ان کامیابیوں کے بارے میں بتائیں۔ دنیا کے سامنے ہندوستان کا پرچم بلند کرنے سے روک رہی ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ دہلی حکومت نے تقریبا ڈیڑھ ماہ قبل اجازت طلب کی تھی۔ سنجے سنگھ نے کہا ، “مغربی بنگال کے شہری ترقیاتی وزیر نے ایک ہفتہ پہلے ہی درخواست دی تھی اور اجازت لے لی تھی۔ لیکن وزیر اعلی کیجریوال کو اجازت کیوں نہیں دی یہ ایک بڈا سوال ہے؟”

یہ بھی پڑھیں  محکمہ بجلی سے پریشان نوجوان کی زہر کھاکر خودکشی

سنجے سنگھ نے وزیر اعظم کی مختلف ملاقاتوں کی مثال بھی دی جو بیرون ملک میں ہوئی۔ “جب ہمارے وزیر اعظم بیرون ملک جاتے ہیں تو ، وہ مختلف علاقوں کے لوگوں سے بھی ملتے ہیں اور یہ فطری بات ہے کہ اس طرح سے ملاقاتیں ہونی چاہئیں۔ وزیر اعظم نہ صرف ریاستوں کے سربراہان سے ملتے ہیں ، بلکہ وہ سب سے ملتے ہیں اور ایسا ہی ہوتا ہے۔ ” پھر عام آدمی پارٹی کی دہلی حکومت کے ساتھ ایسا کیوں نہیں ہوگا؟سنجے سنگھ نے یہ بھی کہا کہ پارٹی اگلے انتخابات کی مہم چلاتے ہوئے اس معاملے کو دہلی کے عوام کے پاس لے جائے گی۔ انہوں نے کہا ، “الیکشن آنے والا ہے اور عام آدمی پارٹی بھرپور طریقے سے دہلی کے عوام کے سامنے اس مسئلے کو اٹھائے گی ، کہ مرکزی حکومت دنیا کے سامنے دہلی میں ہونے والے ترقیاتی کاموں کی اجازت نہیں دیتی ہے۔ ہم بی جے پی حکومت کو غلط قرار دیتے ہیں۔ ارادہ اور ذہنیت عوام کو دکھائیں گے ۔

یہ بھی پڑھیں  محکمہ بجلی سے پریشان نوجوان کی زہر کھاکر خودکشی

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest news

دہلی میں ہند و مسلم سیاست کرنے کی بی جے پی کی ہمت نہیں : اروند کجریوال

نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کجریوال نے کہا کہ بی جے پی کے پاس دہلی میں ہندو...

منی لانڈرنگ کیس: ڈی کے شیو کمار کو ذاتی مچلکے پر ملی ضمانت

نئی دہلی : منی لانڈرنگ کیس میں دہلی ہائی کورٹ نے کانگریس کے رہنما ڈی کے شیوکمار کو ضمانت...

محسنِ انسانیت سے عداوت: ذمہ دار کون؟

ڈاکٹر محمد ضیاءاللہ ندویکملیش تیواری کا قتل بعض شر پسند عناصر نے جب سے کیا ہے تب سے صرف ...

افغانستان میں تعینات امریکی فوجیوں کی تعداد میں کمی

اسلام آباد : امریکہ نے افغانستان میں تعینات اپنی فوجیوں کی تعداد کم کر دی ہے۔ فوجیوں کی تعداد...

یوروپ کی طرح ہوں گی دہلی کی سڑکیں

نئی دہلی:اگلے ایک سال میں دہلی کی 9 سڑکیں آپ کو یورپ کے بڑے شہروں کی طرح خوبصورت دکھیںگی۔...

سپریم کورٹ سے ملی پی چدمبرم کو ضمانت لیکن نہیں ہو سکے گی رہائی

نئی دہلی : سپریم کورٹ آئی این ایکس میڈیا ڈیل سے وابستہ سی بی آئی کے معاملے میں سابق...

Must read

- Advertisement -

You might also likeRELATED
Recommended to you