رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے منارہا ہے 99 واں یوم تاسیس

    نئی دہلی : برطانوی حکومت اور اس کی تعلیم کے خلاف ’تعلیمی آزادی‘آندولن سے 29اکتوبر 1920 کو وجود میں آنے والے جامعہ ملیہ اسلامیہ نے آج اپنا 99ویں یوم تاسیس انتہائی تزک و احتشام کے ساتھ منایا ۔ یہ تقریب تین دنوں تک جاری رہے گی ۔ یونیورسٹی کے کَل ایک صدی میں داخل ہونے پر منعقدہ تقریب تقسیم اسناد میں صدر جمہوریہ ہند رام ناتھ کووند مہمان خصوصی ہوں گے ۔ منی پور کی گورنر اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کی چانسلر ڈاکٹر نجمہ ہیپت اللہ اس کی صدارت کریں گی ۔

    یونیورسٹی کے ڈاکٹر ایم اے انصاری آڈیٹوریم میں منعقدہ تقریب میں جامعہ کی وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر نے 99ویں یوم تاسیس کی مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ انقلابی دور میں مہاتما گاندھی کے تعاون اور ہندو مسلم اتحاد کی بنیاد پر جامعہ ملیہ اسلامیہ کا وجود عمل میں آیا ۔ برطانوی حکومت کے خلاف اٹھی تحریک کا ہم حصہ ہیں اور راشٹر واد ہمارا حصہ بنا رہے گا ۔

    جامعہ میں میڈیکل کالج کھولے جانے کی اپنی کوششوں کے بارے میں خوش خبری دیتے ہوئے وائس چانسلر نے بتایا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے اس کی حمایت کی ہے ۔ انھوںنے بتایا کہ وزیر اعظم سے ملاقات کے دوران معزز وزیر اعظم نے کہا تھا کہ جامعہ ملیہ اسلامیہ میں میڈیکل کالج کا قیام انتہائی ضروری ہے اس لئے کہ جامعہ ہی ارزاں میڈیکل سہولیات دستیاب کرا سکتی ہے ۔ انھوں نے کہا ان کی خواہش ہے کہ کسی بھی طرح سے میڈیکل کالج ایک مرتبہ قائم ہو جائے اس کے بعد وہ آگے بڑھتا رہے گا ۔ جس طرح سے جامعہ ایک چھوٹے سے پودے کی طرح لگایا گیا تھا اور آج ایک بڑے سایہ دار درخت کی صورت اپنی خدمات انجام دے رہا ہے ، میڈیکل کالج بھی ایک بڑی شکل لے لیگا ۔ پروفیسر نجمہ اختر نے بتایا کہ عزت مآب صدر جمہوریہ ہند نے بھی ایک ملاقات میں جامعہ کی دل کھول کر تعریف کی اور ہر قسم کے تعاون کی یقین دہانی کرائی ۔انھوں نے کہا ’صدر جمہوریہ ہند کل جامعہ تشریف لاکر اپنے وعدے کا پہلا قدم اٹھا رہے ہیں اور یہ ہمارے لئے فخر کی بات ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ہندوستانی راشٹرواد میں جامعہ کی جڑیں ہیں اور اس لئے مہاتما گاندھی کا اس ہمارا لگاو اور اٹوٹ رشتہ رہا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ مہاتما گاندھی کی سر پرستی میں مولانا محمد علی جوہر ، مولانا محمود حسن ، حکیم اجمل خاں ، مولانا ابوالکلام آزاد ، ڈاکٹر مختار احمد انصاری ، ڈاکٹر ذاکر حسین اور دیگر اکابرین نے اسے سنوارنے میں کڑی محنت کی ۔

    یہ بھی پڑھیں  ملک میں اقلیتوں کے خلاف میڈیا ٹرائل ایک خطرناک روش
    یہ بھی پڑھیں  بی جے پی لیڈروں کے ہندو راشٹر کی بات کرنا بڑا آسان : گہلوت

    جامعہ کی اولین خاتون وائس چانسلر نے کہا کہ وہ یونیورسٹی میں صنفی مساوات اور خواتین کو مضبوط بنانے کی کوششوں کو ترجیح دے رہی ہیں جس سے خواتین عزم و حوصلہ ملے گا ۔ انھوں نے کہا کہ وہ جامعہ کے طلباء کو بہترین شہری اور صحت مند سماج کا حصہ بنانے کے لئے سرگرم عمل ہیں ۔ جامعہ کے فیکلٹی کی تعریف کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ سبھی اساتذہ کافی بااہل ہیں اور ملکی نیز غیر ملکی سطح پر ان کی پہچان ہے ۔ انھوں نے کہا کہ یہی وجہ ہے کہ جامعہ نے آج ملک کی یونیورسٹیوں میں اپنی بارہویں پوزیشن بنانے میں کامیابی حاصل کی ہے اور ملکی و غیر ملکی رینکنگ میں بھی کامیابی حاصل کی ہے ۔

    اس موقع پر یونیورسٹی کے شعبہ تاریخ و ثقافت کے پروفیسر مکل کیسونت نے کہا کہ جامعہ راشٹر واد کی نشانی ہے ۔ انھوں نے بتایا کہ ایکمرتبہ جب جامعہ ملیہ اسلامیہ معاشی بحران کا شکار ہو گیا تھا تب مہاتما گاندھی کافی فکر مند ہو گئے تھے اور اس وقت انھوں نے کہا تھا کہ جامعہ کو ہمیں چلانا ہی ہوگا ۔ضرورت پڑنے پر اس کے لئے مجھے بھیک بھی مانگنی پڑی تو میں وہ کرنے کے لئے تیار ہوں ۔جامعہ میں اس وقت تقریبا 20000 طلباء و طالبات ،800 اساتذہ اور تیس شعبہ جات اور240 کورسیز سر گرم عمل ہیں اس کے علاوہ 20000 دیگر طلباء جامعہ کے سینٹر فار ڈسٹنس اینڈ اوپن لرننگ کے ذریعے پڑھائی کر رہے ہیں ۔ جامعہ ملک کی ایسی واحد یونیورسٹی ہے جو ہندوستان کے تینوں افواج کو فاصلاتی تعلیم کے ذریعے علمی ترقی کے مواقع فراہم کر ررہی ہے ۔ آج کی تقریب کے مہمان خصوصی جامعہ ملیہ اسلامیہ کے سابق وائس چانسلر سید شاہد مہدی تھے، انھوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہ یونیورسٹی ایک انوکھی یونیورسٹی ہے جس میں تقابل ادیان کے کورس پڑھائے جاتے ہیں ، اس میں سبھی مذاہب کے بارے میں پڑھایا جاتا ہے ۔ اس نے ہمیشہ تمام ہی مذاہب کا احترام کیا جاتا ہے ۔اس میں نئے خیالات کا احترام اور نئی سوچ و نئی اڑانوں کو پرواز عطا کرنے کی کوشش کی جاتی رہی ہے ۔ جامعہ کی تاریخ قربانیوں سے مزین ہے ۔

    یہ بھی پڑھیں  دبئی میں سڑک حادثہ، 7 ہندوستانیوں کی موت

    اپنی روایت کے مطابق آج کے تقریب کا انتظام و انصرام جامعہ اسکول کے طلباء و طالبات نے بحسن و خوبی انجام دیا ۔ جامعہ کی ڈین اسٹوڈنٹ ویلفیئر پروفیسر سیمی فرحت بصیر نے اس تقریب میں حصہ لینے والوں کا شکریہ ادا کیا ۔ تقریب کے آغاز سے قبل انصاری آڈیٹوریم کے باہر وسیع لان میں این سی سی نے یونیورسٹی کے وائس چانسلر کو گارڈ آف آنر دیا ، اس کے بعد انھوں نے جامعہ کے پرچم کی رسم کشائی کے ساتھ پروگرام کی ابتدا کی ۔ اس تین روزہ تقریب میں کوئیز کمپٹیشن ، نکڑ ناٹک ، بیت بازی ، تمثیلی مشاعرہ ، ڈرامہ اور متعدد تعلیمی و ثقافتی پروگراموں کا انعقاد عمل میں آئے گا ۔ادھر دوسری جانب ایک دیگر پروگرام سے میڈیا کے ساتھ بات چیت میں، وائس چانسلر نے کہا کہ جامعہ کی مشہور ریزیڈینشل کوچنگ اکیڈمی (آر سی اے) ملک کی بہترین اکیڈمی ہے۔ حکومت ہند نے متعدد یونیورسٹیوں میں ایسی اکیڈمیاں قائم کی لیکن جامعہ والی خصوصیت کہیں نہیں پائی جاتی۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال اس اکیڈمی کے 200 میں سے 102 طلباء پریمنیری میں کامیاب ہوئے ہیں۔2010 میں معرض وجود میں آنے کے بعد سے، جامعہ کے آر سی اے سے تقریبا 200 آئی اے ایس ، آئی ایف ایس ، آئی پی ایس، آئی ایف او ایس ، آئی آر ایس ، اور آئی آر ٹی ایس نکل چکے ہیں۔انھوں نے جامعہ میں جلد پانچ نئے شعبے کھولے جانے کے بارے میں بھی بتایا اس میں اسکول آف لنگویجز ، بزرگوں کی دیکھ بھال ، ماحولیات اور ناگہانی آفات سے بچائے جانے کی تدابیر قابل ذکر ہیں ۔

    یہ بھی پڑھیں  سڑک حادثے میں مصنف گنگا پرساد کی موت

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  یوپی : پولیس نے پری چوک’گریٹر نوئیڈا ‘ راہل۔پرینکا کے قافلے کو روکا

    Latest news

    مرکزی وزیر آیوش نے سی سی آر یو ایم کا دورہ کیا اور تحقیقی کاموں کی پذیرائی کی

    نئی دہلی : وزارت آیوش اور وزارت بندرگاہ، جہاز رانی اور آبی راستوں کے کابینی وزیر جناب سروانند سونوال...

    کرناٹک میں سیلاب سے بے گھر ہوئے لوگوں کو بھی جمعیۃعلماء ہند نے فراہم کیا آشیانہ

    ہندوستان میں اسلام حملہ آوروں سے نہیں مسلم تاجروں کے ذریعہ پہنچا ، ملک میں اقتدارکے لئے ہورہی ہے...

    عام آدمی پارٹی کی حکومت بننے کے 24 گھنٹوں میں یوپی کے عوام کو 300 یونٹ بجلی مفت ملے گی: منیش سسودیا

    لکھنؤ / نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے حوالے سے ایک...

    بی جے پی کے دورحکومت میں ملک کی خواتین و بیٹیاں انصاف کے لئے در در بھٹک رہی ہیں

    کانگریس ہیڈ کوارٹر 24 اکبر روڈ پر کانگریس خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ یوم خواتین کے موقع پرعمران پرتاپ...

    تبلیغی جماعت کے مرکز ’ نظام الدین‘ کو ہمیشہ کے لئے تو بند نہیں کیا جا سکتا : عدالت

    نئی دہلی : مرکزی حکومت نے دہلی ہائی کورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ سال جو تبلیغی جماعت کے...

    بی جے پی اور یوگی حکومت نہ تو آم کی ہے اور نہ ہی رام کی، انہوں نے رام مندر کے چندے میں بھی...

    ایودھیا/نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے منگل کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you