رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    تبلیغی مرکز کے معاملہ میں بڑی پہل ، تبلیغی مرکز کا تالا کھولنے کی عدالت نے دی مشروط اجازت

    شب برائت اور رمضان کے پیش نظروقف بورڈ کی اپیل کو عدالت نے تسلیم کیا،سماعت کے لیئے اگلی تاریخ 12اپریل مقرر،مرکزی حکومت نے آج بھی داخل نہیں کی اسٹیٹس رپورٹ

    نئی دہلی : دہلی ہائی کورٹ میں مرکز کا تالا کھولنے کے لئے جاری سماعت کے دوران آج دہلی وقف بورڈ کو اس وقت بڑی کامیابی ملی جب عدالت عالیہ نے شب براء ت اور رمضان کے پیش نظر تبلیغی مرکز کا تالا کھولے جانے کی اجازت دیدی۔عدالت نے دہلی وقف بورڈ کے وکیلوں کی اس درخواست کو قبول کرتے ہوئے یہ اجازت دی کہ جلد ہی رمضان کا مہینہ شروع ہونے والا ہے جبکہ اس سے قبل شب براء ت آنے والی ہے جس میں تمام مسلمان خصوصی عبادت کرتے ہیں اس لیئے عالمی تبلیغی مرکز کا تالا کھولنے کی اجازت دی جائے۔

    یہ بھی پڑھیں  مورتیاں رکھ دینے سے مسجد کا وجود ختم نہیں ہوتا

    البتہ عدالت عالیہ نے اپنی اجازت کو 50لوگوں کے داخلہ سے محدود کیاہے۔تفصیل کے مطابق عدالت نے عالمی تبلیغی مرکز میں ابھی 50لوگوں کو داخلہ کی اجازت دی ہے جنکی تفصیل نام اور پتے کے ساتھ مقامی پولیس اسٹیشن میں جمع کرانی ہوگی جہاں سے مقامی تھانہ انچارج اجازت نامہ جاری کریں گے۔تفصیل کے مطابق آج عدالت میں دہلی وقف بورڈ کی جانب سے سینئر ایڈوکیٹ رمیش گپتا ورچولی اوروقف بورڈ کے اسٹینڈنگ کاؤنسل وجیہ شفیق بذات خود موجود رہے جبکہ دہلی حکومت کی جانب سے ایڈوکیٹ نندتا راؤموجود رہیں۔مرکزی حکومت کی جانب سے ورچول طریقہ سے ایڈیشنل سالیسٹر جنرل چیتن شرما اور ایڈوکیٹ رجت نائر پیش ہوئے۔

    مرکزی حکومت کے وکلاء نے عدالت عالیہ سے ایک مرتبہ پھر مزید وقت کا مطالبہ کیا۔مرکزی وکلاء نے اسٹیٹس رپورٹ داخل کرنے کے لیئے مزید وقت کا مطالبہ کیاجس کے جواب میں دہلی وقف بورڈ کے وکلاء نے عدالت عالیہ کے سامنے شب برائت اور رمضان کی آمد کا حوالہ دیتے ہوئے رمضان سے قبل سماعت کی درخواست کی جسے عدالت نے تسلیم کرتے ہوئے مرکزی حکومت کے وکلاء کو اسٹیٹس رپورٹ داخل کرنے کے لیئے دو ہفتوں کا وقت دیا اور اگلی تاریخ 12اپریل مقرر کردی۔

    یہ بھی پڑھیں  ملک کی صلاحیتوں کو فروغ دینا اور انہیں قومی تعمیر میں شامل کرنا یونیورسٹیوں کی مرکزی توجہ ہونی چاہئے: منیش سسودیا
    یہ بھی پڑھیں  یوگی حکومت نے میرے خلاف ملک بغاوت کا مقدمہ درج کیا کیونکہ میں نے مہاماری کے وقت کورونا کٹس کی خریداری میں بڑے پیمانے پر بدعنوانی کے خلاف آواز اٹھائی تھی : سنجے سنگھ

    غور طلب ہیکہ گزشتہ سال اسی ماہ میں کووڈ 19کا حوالہ دیتے ہوئے انتظامیہ نے عالمی تبلیغی مرکز کی تالابندی کردی تھی جسے اب ایک سال مکمل ہوچکاہے۔اس معاملہ میں مرکز کا تالا کھلوانے کے لیئے دہلی وقف بورڈ نے چیئرمین امانت اللہ خان کے ذریعہ عدالت عالیہ کا رخ کیا ہے جہاں امانت اللہ خان نے رٹ داخل کرتے ہوئے تالابندی کو قوانین کی خلاف ورزی قرار دیا

    اور وقف ایکٹ 1995کے سیکشن 32کی رو سے وقف بورڈ کے اختیارات میں مداخلت قرار دیا۔چیئرمین امانت اللہ خان نے اپنی رٹ میں کہاہے کہ تبلیغی مرکز کی تالابندی کرتے ہوئے آئن اور قوانین کو بالائے طاق رکھا گیااور وقف ایکٹ 1995کے سیکشن 32کی خلاف ورزی کی گئی جس کے مطابق دہلی وقف بورڈ کو اپنی جائداد کا انتظام کرنے کا حق حاصل ہے۔واضح ہوکہ عالمی تبلیغی مرکز دہلی وقف بورڈ کی جائداد میں آتاہے۔

    یہ بھی پڑھیں  اقتدارکیلئے نفرت کی سیاست ملک کیلئے انتہائی خطرناک: مولانا ارشدمدنی

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  ڈمریہ گنج میں پریس بلڈنگ کے لئے اراکین اسمبلی کی زمین کا نشان لگانا انڈین جرنلسٹ ایسوسی ایشن کی کامیابی اور صحافیوں کی یکجہتی کا نتیجہ ہے: ہاشم رضوی

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you