رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    مولانا کلب جواد نے محرم کے حوالے سے جاری سرکلر پر ناراضگی کا اظہار کیا ، ڈی جی پی کے بیان کو بتایا بغدادی بیان

    لکھنؤ : کورونا وبا کے پیش نظر یوپی حکومت مذہبی تقریبات کے حوالے سے کسی بھی طرح کی لاپرواہی اختیار کرنے کے موڈ میں نہیں ہے۔ کاوڑیاترا پر پابندی لگانے کے بعد ، یوپی حکومت نے اب محرم کے تعزیوں اور جلوسوں پر پابندی عائد کی ہے ۔ محرم کا تہوار ملک بھر میں 19 اگست کو منایا جائے گا۔ حکومت نے اس حوالے سے ایک سرکلر جاری کیا ہے۔ یوپی حکومت کے اس حکم پر شیعہ مذہبی رہنما مولانا کلب جواد نے سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔حالانکہ ان کی ناراضگی تعزیے اور جلوس پر پابندی پر نہیں ہے ، لیکن ان کی ناراضگی سرکلر میں استعمال ہونے والی زبان سے ہے۔

    معروف شیعہ عالم دین مولانا کلب جواد نے یوپی کے ڈی جی پی پر سوالات اٹھائے ہیں۔ شیعہ عالم کا الزام ہے کہ سرکلر میں گالیوں کا استعمال کیا گیا ہے۔ شیعہ عالم دین مولانا کلب جواد نے یوپی کی محرم کمیٹیوں کو پولیس کے کسی اجلاس میں شرکت نہ کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔ ان کا مطالبہ ہے کہ پہلے ڈی جی پی کو اپنا بیان واپس لینا پڑے گا ، اس کے بعد ہی کسی بھی قسم کی بات چیت ممکن ہوگی۔ مولانا کلب جواد نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ محرم کے بارے میں غیر مہذب بیان ابوبکر بغدادی کا لگتا ہے ، ڈی جی پی کا نہیں۔مولانا کلب جواد نے یہ بھی کہا ہے کہ جب بھی شیعہ سنی میں کوئی خلل پڑا ہے ، اسے پولیس اور انتظامیہ کے ایجنٹوں نے پھیلایا ہے۔ اس کے علاوہ دیگر مسلم مذہبی رہنماؤں سیف عباس اور آل انڈیا شیعہ لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانا یعقوب عباس نے بھی اس حکم کے خلاف احتجاج کیا ہے۔ تمام شیعہ علماء نے یوپی ڈی جی پی کی طرف سے جاری سرکلر واپس لینے اور مسودہ بنانے والے ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  کووڈ -19 وبا کے پیش نظر سی ایس کے امتحانات کے لیے ملک بھر میں 45 نئے مراکز کھولنے کا کیا فیصلہ
    یہ بھی پڑھیں  اسپین میں کورونا وائرس سے اب تک 71 افراد متاثر

    حکومت کی طرف سے جاری کردہ گائیڈ لائن میں کہا گیا ہے کہ محرم پر ہونے والے تمام پروگراموں میں امن کمیٹی کے ساتھ میٹنگ ہونی چاہیے۔ نظم و نسق برقرار رکھنے میں مذہبی رہنماؤں سے تعاون لیا جائے۔ ڈی جی پی نے اپنے حکم میں کہا کہ سماج دشمن عناصر اور افواہیں پھیلانے والوں پر خصوصی نظر رکھیں۔ کسی بھی عمل کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ ہر ضلع میں پولیس فورس کی مناسب تعداد رکھی جائےاور ہر ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لیے لائحہ عمل تیار کیا جائے۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  دفتر اور عملہ کی کمی کی وجہ سے ، کمیشن کے صدر کبھی کبھی کانفرنس روم میں آکر بیٹھ جاتے ہیں: آتشی

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you