رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    ایم سی ڈی بلڈر مافیا کے تعاون سے لیز پر دی گئی دکانوں کا سروے کررہی ہے اور عمارت کو خطرناک دکھا کر خالی کرنے کا نوٹس بھیج رہی ہے : سوربھ بھاردواج

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے بی جے پی کے زیر اقتدار نارتھ ایم سی ڈی کی طرف سے غفار مارکیٹ کی دکانیں تین دن کے اندر خالی کرنے کے لئے بھیجے گئے نوٹس کی مخالفت کی ہے۔ اے اے پی کے چیف ترجمان سوربھ بھاردواج نے کہا کہ ایم سی ڈی دکانداروں کو غفار مارکیٹ کی دکانوں سے بے دخل کرنا چاہتا ہے اور نئی عمارت تعمیر کرکے دکانوں کو نئے لوگوں کو فروخت کرنا چاہتی ہے۔ ایم سی ڈی بلڈر مافیا کے تعاون سے لیز پر دی گئی دکانوں کا سروے کر رہا ہے اور یہ عمارت کو خالی کرنے کے لئے نوٹس بھیج رہا ہے۔ آئی آئی ٹی روڑکی کی تفتیش سے انکشاف ہوا ہے کہ ناقص سیمنٹ لگانے کی وجہ سے غفار مارکیٹ میں عمارت کی حالت ٹھیک نہیں ہے۔

    اگر 99 سالوں کے لئے لیز پر دی جانے والی یہ دکانیں مفت رکھی جاتی ، تو خود دُکاندار بھی مرمت کروا لیتے۔ سوربھ بھاردواج نے سوال کیا کہ اگر عمارت غیر معیاری سیمنٹ سے بنی ہے اور ایم سی ڈی نے پچھلے 40 سالوں میں اپنی عمارت کی دیکھ بھال نہیں کی تو یہ دوکانداروں یا ایم سی ڈی کی غلطی ہے۔ دہلی میں واقع 39 ایسی مارکیٹوں میں بی جے پی ایم سی ڈی سے جاتے ہوئے ہزاروں کروڑ روپے اپنی جیب میں بھرنے کے لئے ایسا منصوبہ بنا رہی ہے۔ عام آدمی پارٹی کے چیف ترجمان اور ایم ایل اے سوربھ بھاردواج نے آج پارٹی ہیڈ کوارٹر میں نارتھ دہلی میونسپل کارپوریشن (این ڈی ایم سی) سے متعلق معاملے پر ایک اہم پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔

    یہ بھی پڑھیں  محکمہ لیبر کے ساتھ رجسٹرڈ قریب 40 ہزار مزدوروں کو دہلی حکومت کی مدد سے فائدہ حاصل ہوگا: گوپال رائے

    سوربھ بھاردواج نے کہا کہ ڈی ڈی اے اور ایم سی ڈی مختلف مقامات پر مارکیٹ کمپلیکس بناتے ہیں اور ان بازاروں کے اندر موجود دکانوں کو 99 سال کی لیز پر دیتے ہیں۔ لیز پر دینے کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ مفت ہولڈ کی اسکیم بیچ میں نکالی جاتی ہے اور دکانداروں کی ان دکانوں کو مفت ہولڈ بنایا جاتا ہے۔ لیکن ایم سی ڈی اب بڑے بلڈر مافیا کے ساتھ مل کر ایک نیا طریقہ کار سامنے لا رہا ہے۔ وہ بازار جن کے اندر دکانوں کو فری ہولڈ ہونا چاہئے تھا ، جہاں دکانوں کو 99 سالوں پر لیز پر دیا جاتا تھا، اب وہ عمارتوں کا سروے کرکے ان بازاروں کے دکانداروں کو صاف کر رہے ہیں

    یہ بھی پڑھیں  محکمہ لیبر کے ساتھ رجسٹرڈ قریب 40 ہزار مزدوروں کو دہلی حکومت کی مدد سے فائدہ حاصل ہوگا: گوپال رائے

    جو اسے خطرناک قرار دیتے ہیں۔ دکانیں خالی کرنے کے بعد بھی دکانداروں سے کہا گیا ہے کہ اب آپ کو یہ دکانیں دوبارہ نہیں مل پائیں گی۔ ایک نیا بلڈر آئے گا اور اسے اپنی طرح سے نئے لوگوں کو فروخت کرے گا۔ سوربھ بھاردواج نے کہا کہ اب جو معاملہ ہمارے سامنے آیا ہے وہ غفار مارکیٹ کا ہے۔ سرسوتی مارگ پر ایم سی ڈی کا ایک بازار ہے ، جس کے اندر 1976 میں الاٹمنٹ کی گئ تھی اور یہ دکانیں دکانداروں کو 99 سال کے لیز پر دی گئیں تھی۔ اب 2021 میں، ایم سی ڈی نے اس کی تحقیقات IIT روڑکی کے ذریعہ کرائی ہے اور خود IIT روڑکی لکھتے ہیں کہ ناقص گریڈ سیمنٹ کی درخواست کی وجہ سے اس عمارت کی حالت ٹھیک نہیں ہے۔ عمارت کے اندر اور بھی بہت ساری خامیاں ہیں، جس کی وجہ سے ایم سی ڈی کہہ رہا ہے کہ اسے مسمار کرکے دوبارہ تعمیر کیا جائے گا۔

    یہ بھی پڑھیں  میں دہلی کے عوام کی طرف سے تمام کورونا جنگجوؤں کا احترام کرتا ہوں ، ہر ایک نے اپنی جان کو داؤ پر لگا کر سخت محنت کی: اروند کیجریوال

    سوربھ بھاردواج نے بی جے پی کے زیر اقتدار ایم سی ڈی سے آئی آئی ٹی روڑکی کی رپورٹ پر کچھ سوالات کے جوابات طلب کیے ہیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ اگر یہ عمارت غیر معیاری گریڈ سیمنٹ سے بنائی گئی ہے تو پھر یہ ان دکانوں کا قصور ہے جنہوں نے یہ دکانیں خریدیں یا ایم سی ڈی جنہوں نے یہ غیر معیاری عمارت بنائی ہے۔ دوسری بات ، اگر پچھلے 40 سالوں میں ایم سی ڈی نے اپنی عمارتوں کی دیکھ بھال نہیں کی اور ان کی مرمت کے نام پر ایک روپیہ بھی خرچ نہیں کیا تو یہ ان دکانداروں یا ایم سی ڈی کی غلطی ہے۔ اگر آپ دکانداروں کو مفت ہولڈ دیتے ہیں تو پھر دکاندار اپنے پیسوں میں سرمایہ کاری کرے گا اور عمارت کی خود مرمت کروائے گا۔ اگر آپ نے اسے لیز پر دے دیا ہے ، تو پھر وہ خود ان دکانوں کی مرمت اور عمارت کو برقرار رکھنے کا اختیار نہیں رکھتا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  جامعہ طالبہ کا سی اے اے خلاف مظاہرہ :شرپسند شخص نے چلائی گولی، طالب علم زخمی
    یہ بھی پڑھیں  میں دہلی کے عوام کی طرف سے تمام کورونا جنگجوؤں کا احترام کرتا ہوں ، ہر ایک نے اپنی جان کو داؤ پر لگا کر سخت محنت کی: اروند کیجریوال

    لہذا ، عمارت کی مرمت کی ذمہ داری ایم سی ڈی پر عائد ہوتی ہے۔ ایم سی ڈی نے 40 سال سے عمارت کو برقرار نہیں رکھا۔ اب ایم سی ڈی نے ایک نوٹس ارسال کیا ہے کہ غفار مارکیٹ 3 دن میں خالی کرنا چاہئے اور ایم سی ڈی اسے توڑ کر نیا بنائے گی۔سوربھ بھاردواج نے مزید کہا کہ سب سے حیران کن بات یہ ہے کہ ایم سی ڈی چاہتا ہے کہ جن دکانداروں کو اس کے اندر 99 سال کی لیز دی گئی ہے ، انہیں بے دخل کردیا جائے اور اس عمارت کو کسی بلڈر سے نئے سرے سے بنایا جائے اور پھر وہ بلڈر اپنے طریقے سے بیچ دے۔ یہ دکانیں نئے آنے والوں کو دی جاسکیں۔

    دہلی کے اندر اس طرح کے قریب 39 بازار ہیں اور ہمیں بتایا گیا ہے کہ ایم سی ڈی راستے میں بی جے پی ان تمام منڈیوں کے اندر اس طرح سے منصوبہ بنا رہی ہے، تاکہ ہزاروں کروڑ کی جائیداد کو لوٹ سکے اور اپنی جیب بھرسکے اور جاتے جاتے ایم سی ڈی کئی سو کروڑ روپے اور کمائیں جا سکے۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    مرکزی وزیر آیوش نے سی سی آر یو ایم کا دورہ کیا اور تحقیقی کاموں کی پذیرائی کی

    نئی دہلی : وزارت آیوش اور وزارت بندرگاہ، جہاز رانی اور آبی راستوں کے کابینی وزیر جناب سروانند سونوال...

    کرناٹک میں سیلاب سے بے گھر ہوئے لوگوں کو بھی جمعیۃعلماء ہند نے فراہم کیا آشیانہ

    ہندوستان میں اسلام حملہ آوروں سے نہیں مسلم تاجروں کے ذریعہ پہنچا ، ملک میں اقتدارکے لئے ہورہی ہے...

    عام آدمی پارٹی کی حکومت بننے کے 24 گھنٹوں میں یوپی کے عوام کو 300 یونٹ بجلی مفت ملے گی: منیش سسودیا

    لکھنؤ / نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے حوالے سے ایک...

    بی جے پی کے دورحکومت میں ملک کی خواتین و بیٹیاں انصاف کے لئے در در بھٹک رہی ہیں

    کانگریس ہیڈ کوارٹر 24 اکبر روڈ پر کانگریس خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ یوم خواتین کے موقع پرعمران پرتاپ...

    تبلیغی جماعت کے مرکز ’ نظام الدین‘ کو ہمیشہ کے لئے تو بند نہیں کیا جا سکتا : عدالت

    نئی دہلی : مرکزی حکومت نے دہلی ہائی کورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ سال جو تبلیغی جماعت کے...

    بی جے پی اور یوگی حکومت نہ تو آم کی ہے اور نہ ہی رام کی، انہوں نے رام مندر کے چندے میں بھی...

    ایودھیا/نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے منگل کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you