رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    اجودھیا میں مسجد،اسپتال اور انڈو ۔ اسلامک کلچر سنٹر بنانے کے لئے عوام سے تعاون کی اپیل

    لکھنؤ : اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے 5اگست کو بھومی پوجن اور سنگ بنیاد رکھے جانے کے بعد اترپردیش سنی سنٹرل وقف بورڈ نے بابری مسجد کی شہادت کے بعد کورٹ کے حکم پر ریاستی حکومت کی جانب سے فراہم کی گئی پانچ ایکڑ زمین پر مسجد و دیگر تعمیرات کے لئے پیش رفت کا آغاز کردیا ہے ۔

    بورڈ نے پانچ ایکڑ زمین پر مسجد،اسپتال اور انڈو ۔اسلامک کلچر سنٹر بنانے کے لئے عوام سے تعاون کی اپیل کی ہے ۔اس ضمن میں سنی وقف بورڈ کی جانب سے تشکیل شدہ انڈو۔اسلامک کلچر فاونڈیشن کے نامی ٹرسٹ کا دو اکاونٹ کھولا جائے گا۔ جس میں سے ایک کا استعمال صرف مسجد کی تعمیر کے لئے رقم یکجا کرنے کے لئے کیا جائے گا۔جبکہ دوسرے کا استعمال اسپتال اور ریسرچ سنٹر کی تعمیر کے لئے رقم کی حصولیابی کے لئے کیا جائے گا۔

    یہ بھی پڑھیں  ہندوستان کے ساتھ ساتھ سی اے اے کے خلاف بیرونی ملکوں میں بھی احتجاجی مظاہرے

    ٹرسٹ کے ترجمان اطہر حسین نے جمعہ کو بتایا کہ ٹرسٹ کا لکھنؤ میں ایک نیا آفس ہوگا ۔ اس کے لئے کاروائی کا آغاز کردیا گیا ہے اور 25اگست تک پورا ہوجائے گا ۔ انہوں نے مزید مطلع کیا کہ اکٹھا ہونے والی رقم میں شفافیت برتنے اور اس کی تمام تفصیلات آن لائن فراہم کرنے کے لئے ایک ویب پورٹل بھی بنایا جائے گا۔اس کام کے لئے ایک کمپنی کا انتخاب کیا جاچکا ہے اور iicf.com نام سے ویب پورٹل کے لئے ڈومین خریدا جاچکا ہے ۔

    یہ بھی پڑھیں  بابری مسجد پر سپریم کورٹ کا فیصلہ ہماری سمجھ سے بالاتر : مولاناارشد مدنی

    اس سے قبل سنی سنٹرل وقف بورڈ نے اجودھیا میں 5ایکڑ زمین پر مسجد کی تعمیر کے لئے ایک ٹرسٹ بنانے کا اعلان کیا تھا۔بورڈ کے چیئر مین زفر فاروقی نے بتایا تھا کہ ٹرسٹ کے 15ممبران ہوں گے جن میں سے 9کے ناموں کا اعلان کردیا گیا تھا جبکہ 6 کے ناموں کا انتخاب ٹرسٹ کے 9ممبران کے ذریعہ کیا جائے گا۔

    یہ بھی پڑھیں  عدالت کے اس فیصلہ کو ہم قدرکی نگاہ سے دیکھتے ہیں: مولانا ارشدمدنی

    سپریم کورٹ نے گذشتہ سال نومبر میں بابری مسجد۔ رام مندرمتنازع اراضی ملکیت معاملے میں اپنا فیصلہ سناتے ہوئے متازع زمین کو رام مندر کی تعمیر کے لئے دینے اور بابری مسجد کے لئے اجودھیا میں ہی 5ایکڑ زمین فراہم کرنے کا حکم دیا تھا۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you