رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    این آر سی غریبوں کے خلاف : پرینگا گاندھی

    نئی دہلی : شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت کرنے والے طلبا کی حمایت میں کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی جمعہ کو ایک بار پھر انڈیا گیٹ پہنچ گئیں۔ وہ طلباء کے ساتھ بیٹھ گئیں اور کہا کہ مرکزی حکومت پورے ملک میں نیشنل رجسٹر آف سٹیزن آف انڈیا نافذ کرنا چاہتی ہے۔ این آر سی غریبوں کے خلاف ہے۔ انہوں نے اس کو نوٹ بندی سے جوڑتے ہوئے کہاکہ اگر یہ لاگو ہوتا ہے تو ایک بارپھر عوام کو لائنوں میں لگنا پڑے گا۔پرینکا گاندھی نے کہاکہ بنیادی طور پر این آر سی لاگو کرنا غریبوں پر حملہ کرنا ہے۔ اس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے افراد نچلے طبقے کے ہی ہوں گے۔ کیا وہ لوگ اپنی زمینوں کے پرانے دستاویزات تلاش کرسکیں گے؟ کیا آپ کی دادی ،نانی پرانے دستاویزات کے قابل ہوںگی ؟ کن حالات میں یہ لوگ ملک کولے کر جا رہے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  جمعیۃعلماء ہند کے وکیل کو دوبارہ ملی دھمکی

    یہ لوگ نوٹ بندی کے بعد ایک بار پھر لوگوں کو قطار میں کھڑا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اس سے کون متاثر ہوگا؟ امیر پاسپورٹ دکھادیں گے لیکن غریب اس سے سب سے زیادہ متاثر ہوںگے۔واضح رہے کہ شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت میں جگہ جگہ احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں۔ کرناٹک ، اترپردیش اور آسام میں پرتشدد مظاہروں میں تقریباً 10 لوگوں کی موت ہوچکی ہے ۔ملک کے دارالحکومت دہلی میں بھی گزشتہ کچھ دنوں سے مظاہرے ہورہے ہیں۔ دریا گنج کے علاقے میں جمعہ کی رات ایک بار پھر تشدد شروع ہوا۔ پتھراؤ اور لاٹھی چارج میں درجنوں مظاہرین اور پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔ پولیس نے اس معاملے میں 40 افراد کو حراست میں لیا ہے ، جن میں 8 نابالغ ہیں۔واضح رہے کہ شہریت ترمیمی بل کے پارلیمنٹ میں پیش ہونے کے بعد سے شمال مشرقی سمیت پورے ملک میں اسے واپس لئے جانے کے مطالبے نے زور پکڑ لیا تھا۔ لوک سبھا اور راجیہ سبھا سے منظوری اور صدر کے دستخط کے بعد یہ قانون بن گیا۔

    یہ بھی پڑھیں  بلاتفریق مذہب جمعیۃعلماء ہند تمام ملزمین کی رہائی کے لئے سپریم کورٹ جائے گی : مولانا ارشدمدنی
    یہ بھی پڑھیں  جب لوگوں کو گھر میں پیزا اور برگر کی ترسیل ہوسکتی ہے تو ، غریب لوگوں کو راشن کی گھر گھر ترسیل کیوں نہیں کی جاسکتی؟ : اروند کیجریوال

    اس ترمیم شدہ قانون کے تحت پاکستان ، بنگلہ دیش اور افغانستان سے آنے والے غیر مسلموں کو ہندوستانی شہریت دینے کا قانون ہے۔ اس میں 6 کمیونٹیز ہیں – ہندو ، سکھ ، عیسائی ، جین ، بدھسٹ اور پارسیوں کورکھاگیا ہے۔مسلمانوں کو اس سے باہررکھے جانے کی مخالفت ہورہی ہے۔ مرکزی حکومت کا مؤقف ہے کہ اس قانون میں ان تینوں ممالک میں مذہبی طور پر ظلم و ستم اقلیتوں کو ہندوستانی شہریت دینے کے لئے ترمیم کی گئی ہے اور ان تینوں ممالک میں کوئی مسلم اقلیت نہیں ہیں۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  عوام کی خدمت کرنے والےکورونا جنگجوؤں،ڈاکٹروں ، نرسوں ، طبی عملے ، پولیس اہلکاروں ، صفائی کے کارکنوں اور تمام سماجی و مذہبی اداروں کو سلام پیش کرتا ہوں: اروند کیجریوال

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you