رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    بہار میں بارش کا قہر، سی ایم نے بلائی ایمرجنسی میٹنگ ، تعلیمی ادارے بند ، لوگوں کو گھروں میں رہنے کا مشورہ

    پٹنہ:بہار میں گذشتہ چوبیس گھنٹوں سے قہر بن کر برسنے والی موسلا دھار بارش نے دارالحکومت پٹنہ سمیت 16 سے زائد اضلاع کے لوگوں کی زندگی کو متاثر کیا ہے۔ پٹنہ کے بورنگ روڈ ، بیلی روڈ ، پاٹلی پترا کالونی ، کنکرباغ ، راجندر نگر ، پٹنہ یونیورسٹی ، مہیندرو ، گاندھی میدان ، ڈاک بنگلہ چوراہے سمیت تقریبا ًتمام علاقوں میں شدید بارشوں کی وجہ سے جمع ہونے والا پانی نے لوگوں کی زندگی کو درہم برہم کردیا ہے۔

    راجندر نگر میں نائب وزیر اعلیٰ سشیل کمار مودی کی رہائش گاہ میں بھی پانی داخل ہوگیا ہے۔لوگوں کا گھر سے نکلنا مشکل ہوگیا ہے۔ سڑکوں پر دو سے تین فٹ پانی جمع ہوگیا ہے۔ بہت سے علاقوں میں گاڑیوں کی آمد رفت مکمل بند ہے۔ بجلی کی فراہمی ، ٹیلیفون اور انٹرنیٹ سروس میں خلل پڑا ہے۔ پٹنہ سٹی کے علاقے میں بارش کا پانی نالندہ میڈیکل کالج اسپتال (این ایم سی ایچ ) میں داخل ہوگیا ہے۔ مریضوں کو کسی اور جگہ بھیجا جارہا ہے۔ڈیزاسٹر منیجمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے پرنسپل سکریٹری پرتیہ امرت نے بتایا کہ دارالحکومت پٹنہ کے لوگوں کو جب تک ضروری نہ ہو تب تک گھر سے باہر نہیں نکلنا چاہئے۔

    یہ بھی پڑھیں  شبینہ خان ہمیشہ ضرورت مندوں کی مدد کے لئے تیار رہتی ہیں

    انہوں نے کہا کہ شدید بارشوں کی وجہ سے نشیبی علاقے میں جمع پانی کو نکالنے کے لئے گذشتہ رات سے تمام پمپ ہاؤس سرگرم عمل ہیں۔ مسٹر امرت نے کہا کہ لوگوں کو محفوظ مقامات پر لے جانے کے لئے خاطر خواہ انتظامات کیے گئے ہیں۔ اگر بارش میں پھنسا ہوا کوئی فرد کسی رشتے دار سے ملنا چاہتا ہے ، تو ان کے لئے ٹریکٹر اور بسوں کا انتظام کیا گیا ہے۔پٹنہ کے ضلع مجسٹریٹ کمار روی نے شدید بارش کے باعث ضلع میں تمام سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں کو 30 ستمبر تک بند رکھنے کا حکم دیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  سعیدہ حمید کا دعوی کشمیر میں 51 دن میں غائب ہوئے 13 ہزار بچے

    اسی کے ساتھ ہی کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے ، نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (این ڈی آر ایف) کی ایک ٹیم کو پٹنہ میں اور ایک دوسرے ٹیم کو دوسرے 18 اضلاع میں تعینات کیا گیا ہے۔ ضلع انتظامیہ نے عوام کی مدد کے لئے کنٹرول روم ٹیلیفون نمبر 0612-19810 ، 2294204 اور 2294205 جاری کیا ہے۔ دریں اثنا وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے بارش کی خوفناک صورتحال کے پیش نظر ڈیزاسٹر مینجمنٹ ڈیپارٹمنٹ کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  نہیں ملا محسن کا سراغ،ڈی این اےٹیسٹ کے لئے بھیجی گئی گاڑی کے پاس ملی لاش

    مسلسل ہونے والی بھاری بارش نے سیلاب کی زد میں آنے والے بھاگلپور، مونگیر ، چھپرا ، دربھنگہ ، مدھوبنی سمیت متعدد اضلاع میں صورتحال کو مزید خراب کردیا ہے۔ ان اضلاع کے سیکڑوں گاؤں زیر آب ہوگئے ہیں۔ سیلاب کا پانی بلاک اور تھانہ میں بھی داخل ہوگیا ہے۔ شدید بارش کی وجہ سے گنگا سمیت متعدد ندیوں کے پانی کی سطح میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔ اس بارش نے کل سے شروع ہونے والی نوراترا میں ریاست بھر میں درگا کی بننے والی مورتی اور پنڈالوں کے لئے بھی مشکلات پیدا کردی ہیں۔ جگہ جگہ پر پہلے ہی بننے والے پوجا پنڈال میں پانی داخل ہوگیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  آل انڈیا کانگریس کمیٹی اقلیتی شعبہ کے زیر اہتمام مولانا ابوالکلام آزاد کے 133 ویں یوم پیدائش کے موقع پر قومی سمینار کا انعقاد

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you