رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    شبینہ خان ہمیشہ ضرورت مندوں کی مدد کے لئے تیار رہتی ہیں

    نئی دہلی: (ہند نیوز بیورو) کورونا کی وبا کے نتیجہ میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہر شخص مالی بحران سے گذر رہا ہے۔ ایسی صورتحال میں ، سماجی تنظیمیں اور افراد ایک دوسرے کی مدد کر رہے ہیں۔

    بگڑتی ہوئی معاشی حالت کی وجہ سے مذہبی مقامات پر دیئے جانے والے چندہ میں بھی کمی آئی ہے۔ جس کی وجہ سے مذہبی مقامات کی ضروریات بھی پوری نہیں ہو رہی ہیں۔ ایسی ہی ایک مسجد کی ضرورت کے لئےسماجی کارکن شبینہ خان آگے آئیں اور تعاون کیا۔

    اطلاعات کے مطابق سماجی کارکن اور “ھماری آواز” فاؤنڈیشن کی ڈائریکٹر ، شبینہ خان کو معلوم ہوا کہ بٹلا ہاؤس میں واقع ہری مسجد میں کتابوں اور قالینوں کی ضرورت ہے۔ جیسے ہی شبینہ خان کو اس بات کا علم ہوا ، انہوں نے فورا ہی مسجد کمیٹی کے ذمہ دار فرقان سے رابطہ کیا اور مسجد کی ضروریات کے بارے میں تفصیلات معلام۔کیں۔

    یہ بھی پڑھیں  لاک ڈائون پر عمل نہ کرنے والو ںکو دینا پڑیگا گولی مارنے کا حکم : چندر شیکھرررائو

    کمیٹی کے ذمہ دار فرقان نے بتایا کہ نمازیوں کے لئے مسجد میں قالین کی سب سے زیادہ ضرورت ہے۔ شبینہ خان نے نمازیوں کی ضرورت کا۔خیال کرتے ہوئے تقریبا40 ہزار کی قیمت کے قالین مسجد کو عطیہ کرنے کا فیصلہ کیا اور سارا سامان خرید کر فرقان کے سپردکیا۔

    اس اقدام سے کمیٹی کے ذمہ دار فرقان نے شبینہ خان کا شکریہ ادا کیا اور ان کی اس پہل کی تعریف بھی کی۔ انہوں نے کہا کہ اللہ جس جس سے چاہے اس سے کام لے لیتا ہے۔ ایک خاتون ہونے کے ناطے ، شبینہ خان جو نیک کام کر رہی ہیں وہ قابل تعریف ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی حکومت ویکسین لگانے کے لئے پوری طرح تیار ہے 16 جنوری سے 81 مراکز پر لگائی جائیں گی ویکسین : اروند کیجریوال

    آپ کو بتادیں کہ شبینہ خان ایسی سماجی کارکن ہیں جو اپنی این جی او “ہماری آواز” فاؤنڈیشن کے ذریعہ اوکھلا اور دہلی کی مختلف کچی آبادی میں کئی سالوں سے غریب و نادار بچوں کے لئے کام کررہی ہیں۔ وہ غریبوں میں راشن تقسیم کررہی ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  کوڈنگ مستقبل کی زبان ہوگی ، دہلی کے طلبا کو مستقبل پر مبنی بنانا ایک بہت بڑا کام ہے: منیش سسودیا

    اس کے ساتھ ہی شبینہ خان اوکھلا نور نگر کی جھگی میں 170 غریب بچوں کے لئے مدرسہ چلا رہی ہیں۔ مدرسہ کے مولانا کی تنخواہ ہر مہینہ شبینہ خان خود ادا کرتی ہیں تاکہ غریب بچے مفت تعلیم حاصل کر سکیں۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  مجھے تنازعات سے کوئی فرق نہیں پڑتا :نصرت جہاں

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you