رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    چیئرمین نہ ہونے کے سائڈ افیکٹ ، وقف کے 560کروڑ کے پلاٹ پر قبضہ کی کوشش کو بنایا گیا ناکام

     دہلی : کئی روز سے جس بات کا اندیشہ تھا آج وہی ہوا محکمہ آثار قدیمہ کے نام پر دہلی وقف بورڈکی نظام الدین نیو ہرائزن پبلک اسکول کی بغل میں واقع وقف کی کروڑوں کی زمین پر قبضہ کی کوشش کی گئی۔ذرائع کے مطابق وقف بورڈ کی اس قیمتی زمین پرقبضہ کی کوشش آغاخان فاؤنڈیشن کی جانب سے کی جارہی ہے

    اور اس کے لیئے محکمہ آثار قدیمہ کے نام کا سہارا لیا جارہاہے۔موقع پر جب وقف بورڈ کے افسران پہونچے تو انہوں نے پایا کہ آغا خان فاؤنڈیشن کا پروجیکٹ ڈائریکٹرجے سی بی مشین سے وقف پلاٹ کے چاروں طرف کھدائی کرارہاہے جسے موقع پر ہی بورڈ کے لیگل اسسٹنٹ احسن جمال اور ان کی ٹیم نے رکوادیا اور وقف کی زمین پر اس طرح غیر قانونی کھدائی اور قبضہ کی کوشش پر اعتراض جتایا جس کے بعد پولیس کو بھی موقع پر بلالیا گیا۔

    پولیس نے موقع پر پہونچ کر کھدائی کرنے والوں سے ملکیت کے کاغذات طلب کیئے جو وہ نہ دکھا سکے۔پولیس نے تنبیہ کرتے ہوئے کھدائی کرنے والوں سے کہا کہ جب تک آپ زمین کی ملکیت کے کاغذات نہیں دکھائیں گے اس وقت تک زمین پر کسی بھی طرح کی سرگرمی یا کارروائی نہ کریں۔

    وقف بورڈ کے افسران کی جانب سے اس سلسلہ میں پولیس تھانے میں زمین پر اپنی ملکیت کا دعوی کرتے ہوئے متعلقہ لوگوں کے خلاف تحریر بھی دیدی گئی ہے جسے پولیس نے وصول کرلیا جبکہ اس سے قبل جب تحریر دی گئی تھی تو پولیس نے شکایت لینے سے بھی انکار کردیا تھا۔تفصیل کے مطابق نظام الدین نیو ہرائزن پبلک اسکول کی بغل میں وقف بورڈ کی کروڑوں کی کئی بیگھہ قیمتی زمین ہے،یہ زمینخسرہ نمبر 533حکومت دہلی کے گزٹ 3مارچ 1994کے مطابق گزٹ نوٹیفائڈ وقف پراپرٹی ہے جو سالوں سے خالی پڑی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  مالیگاؤں 2008 بم دھماکہ معاملہ ، بھگوا ملزم کرنل پروہیت نے متاثرین کو بحث کرنے کا موقع نہ دینے کی عدالت سے گذارش کی

    اس پلاٹ کا کچھ حصہ نیو ہرائزن پبلک اسکول کے احاطہ میں آگیا ہے جبکہ تقریبا 1600گززمین خالی پڑی ہے جسکی موجودہ قیمت 560کروڑ بتائی جاتی ہے۔اس زمین پر سالوں سے زمین مافیاؤں کے ساتھ ساتھ سرکاری محکموں کی بھی بری نظر ہے اور اب وقف بورڈ کی موجودہ کسمپرسی کی حالت کو دیکھتے ہوئے آغاخاں فاؤنڈیشن نے موقع کو غنیمت جان کر پلاٹ پر قبضہ کرنے کی کوشش شروع کردی۔سب سے پہلے 13اکتوبر کو باؤنڈری کرانے کی نیت سے پلاٹ کے چاروں جانب چوناڈالکر زمین کو نشان زد کیا گیا

    یہ بھی پڑھیں  گرونانک نے جوکہاوہ کرکے دکھایا:شہپررسول

    جس کی اطلاع ملنے پر وقف بورڈ نے اپنی ایک ٹیم بھیج کر زمین پر دو بورڈ لگادیئے جن میں درج ہے کہ یہ زمین دہلی وقف بورڈ کی ملکیت ہے مگر گزشتہ کل یعنی 23اکتوبر کو اطلاع ملی کہ ان بورڈ وں کو نامعلوم افراد نے نہ صرف اکھاڑ پھینکا ہے بلکہ اپنے ساتھ بھی لے گئے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  ایم سی ڈی بلڈر مافیا کے تعاون سے لیز پر دی گئی دکانوں کا سروے کررہی ہے اور عمارت کو خطرناک دکھا کر خالی کرنے کا نوٹس بھیج رہی ہے : سوربھ بھاردواج

    بورڈ کے سیکشن آفیسر حافظ محفوظ محمد نے فورا بورڈ کی ایک ٹیم کو موقع پر بھیجا جنہوں نے شکایت کو صحیح پایا،انہوں نے موقع پر دیکھا کہ جو بورڈ انہوں نے کچھ دن قبل لگائے تھے انھیں اکھاڑ پھینکا گیا ہے۔اس حادثہ کی اطلاع پولیس کو دی گئی مگر پولیس نے ایف آئی آر لکھنے سے انکار کردیا جس سے اندازہ ہوا کہ کہیں نہ کہیں مقامی پولیس کا بھی کردار مشکوک ہے۔

    آج صبح ہی صبح وقف بورڈ کے سیکشن آفیسر حافظ محفوظ کو اطلاع ملی کہ وقف کے پلاٹ پر جے سی بی مشین سے کھدائی کی جارہی ہے۔حافظ محفوظ محمد کی ہدایت پر ایک درجن سے زائد وقف بورڈ کے افسران فورا موقع پر پہونچے اور کام رکواکر پولیس کو اطلاع دی مگر اس وقت تک آغاں خان فاؤنڈیشن کا پروجیکٹ ڈائریکٹر و اس کے ٹھیکیدار تقریبا آدھی باؤنڈری کھدوا چکے تھے۔

    ذرائع کے مطابق معاملہ کوفرقہ وارانہ رنگ دینے کی بھی کوشش کی گئی مگر پولیس نے وہاں موجود شر پسند کو ڈانٹ کر بھگا دیا۔اس حادثہ کا ایک پہلو یہ بھی ہیکہ محکمہ آثار قدیمہ کے مبینہ افسران نے وقف کی زمین پر ایسے وقت میں قبضہ کی کوشش کی جب انھیں معلوم ہے کہ اس وقت وقف بورڈ چیئرمین نہ ہونے کی وجہ سے اپنی فعالیت کھوچکاہے اور ملازمین کو کئی ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے،جبکہ قبضہ کے لیئے ہفتہ کے دن کا انتخاب کیا گیا

    یہ بھی پڑھیں  کیرالہ میں کرونا وائرس کا دوسرا مریض ملا

    جب عموماسرکاری محکموں میں تعطیل کا دن ہوتاہے اور متعلق ٹھیکیدار صبح ہی صبح 8بجے ہی جے سی بی مشین لیکر پہونچ گئے اور کھدائی شروع کردی تاہم وققف بورڈ کے افسران نے ایسی کسمپرسی کی حالت میں بھی جب ان کی جیبیں خالی اور گھروں میں چولہے نہیں جل رہے ہیں ملت کے تئیں اپنے احساس ذمہ داری اور فرض شناسی کا ثبوت دیا اوراطلاع ملتے ہی فورا ایک درجن سے زائد افسران صبح ہی صبح اپنے گھروں سے سیدھے موقع پر پہونچ گئے اور کام رکوادیا۔

    یہ بھی پڑھیں  عدالت کے ذریعہ تما م الزامات سے بری کئے جانے کے باوجود تبلیغی جماعت سے جڑے ایک غیر ملکی کی موت

    حافظ محفوظ کے مطابق کل اتوار تعطیل کا دن ہونے کی وجہ سے ایسی کوشش دوبارہ ہونے کے قوی امکانات ہیں اس لیئے انہوں نے مقامی لوگوں سے خاص طور پر اپیل کی ہے کہ وہ وقف کی زمین پر نظر رکھیں اور کسی بھی طرح کی ناجائز سرگرمی کو فورا موقع پر پہونچ کر رکوائیں اور وقف بورڈ کو اس کی اطلاع دیں۔انہوں نے مزید کہاکہ اوقاف کی جائدادوں کا تحفظ کرنا ملت کی ذمہ داری ہے۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    مرکزی وزیر آیوش نے سی سی آر یو ایم کا دورہ کیا اور تحقیقی کاموں کی پذیرائی کی

    نئی دہلی : وزارت آیوش اور وزارت بندرگاہ، جہاز رانی اور آبی راستوں کے کابینی وزیر جناب سروانند سونوال...

    کرناٹک میں سیلاب سے بے گھر ہوئے لوگوں کو بھی جمعیۃعلماء ہند نے فراہم کیا آشیانہ

    ہندوستان میں اسلام حملہ آوروں سے نہیں مسلم تاجروں کے ذریعہ پہنچا ، ملک میں اقتدارکے لئے ہورہی ہے...

    عام آدمی پارٹی کی حکومت بننے کے 24 گھنٹوں میں یوپی کے عوام کو 300 یونٹ بجلی مفت ملے گی: منیش سسودیا

    لکھنؤ / نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اتر پردیش میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے حوالے سے ایک...

    بی جے پی کے دورحکومت میں ملک کی خواتین و بیٹیاں انصاف کے لئے در در بھٹک رہی ہیں

    کانگریس ہیڈ کوارٹر 24 اکبر روڈ پر کانگریس خواتین کے زیر اہتمام منعقدہ یوم خواتین کے موقع پرعمران پرتاپ...

    تبلیغی جماعت کے مرکز ’ نظام الدین‘ کو ہمیشہ کے لئے تو بند نہیں کیا جا سکتا : عدالت

    نئی دہلی : مرکزی حکومت نے دہلی ہائی کورٹ میں کہا ہے کہ گزشتہ سال جو تبلیغی جماعت کے...

    بی جے پی اور یوگی حکومت نہ تو آم کی ہے اور نہ ہی رام کی، انہوں نے رام مندر کے چندے میں بھی...

    ایودھیا/نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے منگل کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور دہلی کے نائب وزیر اعلی...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you