رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    سونی پت: امام عرفان اور ان کی اہلیہ سپرد خاک ،قتل کے پیچھے ہو سکتی چونکانے والی وجہ

    نئی دہلی: ہفتہ کی رات ، سونی پت کے تھانہ گنور پولیس اسٹیشن کے تحت واقع گاؤں مانک ماجرا میں ہفتہ کی رات مسجد کے امام اور انکی اہلیہ کو تیز دھار ہتھیاروں سے قتل کردیا گیا۔ اتوار کے روز پولیس نے دونوں لاشوں کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھیجا اور اتوار کی شام دونوں لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے بعد سپردخاک کردیا گیا ہے۔ پولیس کا ماننا ہے کہ اس افسوسناک ڈبل قتل سے حیران کن انکشافات ہوسکتے ہیں۔
    یہ بات قابل ذکر ہے کہ 35 سالہ عرفان جو آنکھوں سے کمزور ہیں ،بیوی کے ساتھ مانک ماجرہ گاؤں میں رہ رہے تھے ۔ وہ موہالی گاؤں کے رہائشی تھے اور پچھلے چار سالوں سے مانک گاؤں کی ایک مسجد میں امامت کر رہے تھے۔ متوفی کی شادی ایک سال قبل دہلی کی رہائشی یاسمین سے ہوئی تھی۔ گذشتہ رات نامعلوم افراد نے اس جوڑے کو بے دردی سے قتل کردیا۔ جس کی اطلاع صبح فجر کی نماز پڑھنے آئے لوگوں کوہوئی تو اس دوہرے قتل کی سنسنی علاقہ میں پھیل گئی ۔ نماز ادا کرنے آئے لوگوں نے جوڑے کو مردہ حالت میں پایا اور پولیس کو بلایا اور پھر دونوں لاشوں کو پوسٹ مارٹم کیلئے بھیج دیا گیا۔

    یہ بھی پڑھیں  بھارتیہ جنتا پارٹی کا خواتین مخالف چہرہ ایک بار پھر ملک کے عوام کے سامنے بے نقاب ہوگیا ہے: آتشی

    جمعیت علمائے ہند کے لوگ موقع پرپہنچ گئے۔
    سونی پت کے گاؤں مانک ماجرہ میں مسجد کے امام اور اس کی اہلیہ کے قتل کی خبر سوشل میڈیا پر آگ کی طرح پھیل گئی۔ واقعے کی اطلاع ملنے پر جمعیت علما ہند (مولانا ارشاد مدنی دھڑے) کے لوگ بھی مانک ماجرہ گاؤں پہنچ گئے۔ جمعیت علمائے ہند کے لوگوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد اس دوہرے قتل کے مجرموں کو گرفتار کیا جائے اور سخت سے سخت سزا دی جائے ، جبکہ حکومت سے معاوضے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ متوفی جوڑے کے لواحقین کو دس دس لاکھ روپے دیئے جائیں۔ جمعیۃعلماء ہند نے کہا کہ وہ اس قتل عام کے حوالے سے ایک وفد کے ہمراہ ریاست کے وزیر اعلی کے ساتھ بھی ملاقات کریں گے۔
    جمعیت علما ہریانہ اور پنجاب کے صدر مولانا ہارون ، مفتی شرافت ، مولانا ارشاد نے مشترکہ طور پر ہند نیوز کو بتایا کہ امام عرفان گذشتہ چار سالوں سے مانک ماجرہ گاؤں میں رہ رہے تھے ، ان کا کسی تنازعہ سے کوئی تعلق نہیں تھا۔ شکوک و شبہات کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ یہ قتل فرقہ وارانہ منافرت کا نتیجہ ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  پہلے سسودیا، ستیندر جین اور اب کجریوال کا دورہ بھی کیا رد
    یہ بھی پڑھیں  اسدالدین اویسی کے خلاف درج ہوا ایک اور مقدمہ

    پولیس کیا کہتی ہے؟
    گنور پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر دنیش کمار نے جمعیت علما ہند کے ذریعہ جتائی ’ منافرانہ جرم‘ کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس دوہرے قتل میں ’ہیٹ کرائم‘ جیسی کوئی چیز نہیں ہے۔ انسپکٹر دنیش کمار نے ہند نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد ہی ان لوگوں کو تلاش کریں گے جنہوں نے یہ گھناؤنا جرم کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’ہم نے اس واقعے کی تحقیقات کیلئے پولیس کی 6؍ ٹیمیں قائم کررکھی ہیں ، اور بہت جلد اس قتل کیس کے ملزم کو پولیس پکڑ لے گی‘۔خدشے کا اظہار کرتے ہوئے انسپکٹر دنیش کمار نے کہا کہ جس شخص نے یہ واقعہ کیا وہ جوڑے کو اچھی طرح جانتا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ان کی شادی بھی اس جوڑے کو مارنے کی وجہ ہوسکتی ہے، کیونکہ متوفی جوڑے کی یہ دوسری شادی تھی۔ دونوں کی عمر میں بھی بڑا فرق تھا۔مرحوم عرفان کی عمر 35 سے 40 سال کے اندر تھی جبکہ اس کی اہلیہ یاسمین کی عمر صرف 22 سال تھی اور دونوں کی دوسری شادی بھی ہوئی تھی جو ایک سال قبل ہوئی تھی۔ انسپکٹر دنیش کمار نے بتایا کہ عرفان کی اہلیہ یاسمین دہلی کے بختیار پور کی رہائشی تھیں۔

    یہ بھی پڑھیں  کملیش تیواری مرڈر کے بعد سادھوی پراچی نے بھی جتایا جان کا خطرہ

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  ہر مذہب ہر فرقہ ہندوستانی انگریز کے مظالم کا شکار

    Latest news

    شمال مشرقی دہلی میں تشدد میں مرنے والوں کی تعداد 9، حالات کشیدہ

    نئی دہلی: شمال مشرقی دہلی میں شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے ) کے خلاف جاری تشدد میں آج...

    این پی آر پرانے طریقے سے ہی ہوگا ، این آر سی غیر ضروری : نتیش

    پٹنہ: بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے آج اسمبلی میں قومی شہری رجسٹر ( این آر سی ) کو...

    مرکزی حکومت نے دہلی میں تشدد کے معاملے پر ہنگامی میٹنگ طلب کی

    نئی دہلی: دہلی میں دو دن سے جاری تشدد کے واقعات کے پیش نظر مرکزی حکومت نے منگل کے...

    ہمیں پھر ایک بار اپنی قربانیوں کا جائزہ لینا پڑے گا : قاری محمد طیب قاسمی

    آنند نگر مہراج گنج : گزشتہ روز ضلع مہراج گنج کی مشہور ادارہ دارالعلوم فیض...

    سی اے اے اور این پی آر کی آڑ میں ہندو راشٹر بنانے کا کھیل

    ممبئی: ہماراملک ہندوستان صدیوں سے امن واتحاد اور محبت کا گہوارہ رہا ہے ، یہ ایک کثیر ثقافتی اور...

    مولانا سید ارشدمدنی کا صدارتی خطاب:نفرت کی سیاست کا خاتمہ نفرت سے نہیں محبت سے ہوگا

    ممبئی :جھارکھنڈکے بعد دہلی میں فرقہ پرست طاقتوں کو شکست دیکر عوام نے یہ ثابت کردیا ہے کہ نفرت...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you