رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    سابق وزیراعظم آنجہانی لال بہادر شاستری کی یوم پیدائش پر خصوصی تحریر

    تحریر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔افتخار قریشی

    ۔افتخار قریشی
    ۔افتخار قریشی

    لال بہادر شاستری کا جنم 2اکتوبر1904کو اترپردیش کے مغل سرائے میں ہوا تھا،کایستھ پریوار میں جنمے لال بہادر کا گوتر سری واستو تھا،لال بہادر سری واستو نے کاشی ودیا پیٹھ سے شاستری کی پڑھائی پوری کی تھی،شاستری کی ڈگری ملنے کے بعد انھوں نے سری واستو گوتر ہٹاکر شاستری لکھنا شروع کردیا تھا، اس طرح لال بہادر سری واستو سے لال بہادر شاستری بن گئے،لال بہادر شاستری بھارت کے جواہر لال نہرو کے بعد ملک کے دوسرے وزیر اعظم بنے تھے،وہ 9جون 1964سے 11جنوری 1966 تک تقریباً18ماہ ملک کے وزیر اعظم رہے۔

    ملک کی آزادی کے بعدشاستری جی اترپردیش حکومت میں پارلیمانی سکریٹری بنائے گئے،وزیراعلیٰ گووند ولبھ پنت کی وزارت میں انھیں کابینی وزیر بنایا گیا تھا،انھیں پولیس اور آمدورفت کی وزارت کا قلمدان دیا گیا تھا،وزیرآمدورفت رہتے ہوئے انھوںنے پہلی بار سرکاری بسوں میں خواتین کنڈکٹروں کی بھرتی کی تھی،محکمہ پولیس کے وزیر رہتے ہوئے انھوں نے پہلی بار بھیڑ کو قابو میں رکھنے کے لئے لاٹھی کی جگہ پانی کی بوچھار کے استعمال کی شروعات کرائی تھی،1951میں جواہر لال نہرو کی قیادت میں انھیں آل انڈیا کانگریس کمیٹی کا جنرل سکریٹری بنایا گیا تھا،انھوں نے کانگریس کا جنرل سکریٹری رہتے ہوئے پارٹی کی کامیابی کے لئے سخت محنت کی تھی،27مئی 1964کوجواہر لال نہرو کی موت کے بعد صاف امیج کی وجہ سے لال بہادر شاستری کو ملک کا وزیراعظم بنایا گیا تھا۔

    یہ بھی پڑھیں  بابری مسجد ملکیت مقدمہ: گزیٹیئرز میں رام جنم استھان کا کوئی ثبوت نہیں ، محکمہ آثار قدیمہ کی رپورٹ کو پختہ ثبوت نہیں مانا جاسکتا : میناکشی
    یہ بھی پڑھیں  پوجا کمیٹیوں نے وسرجن انتظامات کےلیےدہلی سرکار کو کہا’ تھینکس ‘

    لال بہادر شاستری پڑھائی پوری کرنے کے بعد بھارت سیوک سنگھ نامی تنظیم سے جڑگئے تھے،انھوں نے ملک اور عوام کی خدمت کا عہد لیتے ہوئے یہیں سے اپنے سیاسی کرئیر کی شروعات کی تھی،شاستری جی سچے گاندھی وادی تھے،انھوں نے اپنی ساری زندگی سادگی اور غریبوں کی خدمت میںگزاردی،آزادی کی لڑائی کے ہر پروگرام میں ان کی بھاگیداری رہی،اس کے نتیجہ میں ان کو کئی بار جیل بھی جانا پڑا،آزادی کی تحریک کے جن پروگراموں میں ان کی خصوصی شرکت رہی، ان میں 1921کا اسہائے آندولن،1930کا دانڈی مارچ،اور 1942کا بھارت چھوڑو آندولن شامل ہیں۔

    لال بہادر شاستری کے دور اقتدار میں بھارت پاکستان کے درمیان1965کی جنگ ہوئی تھی،اس سے قبل جواہر لال نہرو کے دور اقتدار میں بھارت چین کے ساتھ جنگ ہار گیا تھا،شاستری جی نے اس جنگ میں نہرو کے مقابلہ ملک کو ایک مثالی قیادت دیتے ہوئے پاکستان کو شکست دی تھی،بھارت پاکستان جنگ روکنے کے لئے ازبیکستان کی راجدھانی تاشقند میں 11جنوری 1966کودونوں ممالک کے درمیان امن معاہدہ پر دسخت کرنے کے کچھ ہی دیر بعد رات میں لال بہادر شاستری کا انتقال ہوگیا تھا،انھیں 1966میںبعد ازمرگ بھارت رتن سے نوازہ گیا تھا۔

    یہ بھی پڑھیں  بابری مسجد فیصلہ کے خلاف جمعیۃ علماء ہند کی ریویوپٹیشن سپریم کورٹ میں داخل

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  آپ کے قومی کنوینر اروند کیجریوال نے سیلم پور، کونڈلی اور تریلوکپوری میں آپ کے امیدواروں کے حق میں روڈ شو کرکے عوام سے حمایت حاصل کی

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you