رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    روحانی گرو’کلکی بھگوان‘ کے یہاں انکم ٹیکس کے چھاپے

    نئی دہلی : محکمہ انکم ٹیکس نے روحانی گرو’کلکی بھگوان‘ کے کئی ٹھکانوں پر چھاپہ ماری کی۔ اس چھاپے ماری میں محکمہ انکم ٹیکس کے افسران کو 500 کروڑ روپے کی غیر اعلانیہ پراپرٹی کا پتہ چلا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ اس غیر اعلانیہ اثاثوں میں 409 کروڑ روپے نقد رقم کی رسیدیں بھی ملی ہیں۔ اس چھاپے ماری میں محکمہ انکم ٹیکس نے 43.9 کروڑ روپے نقد اور 18 کروڑ روپے کی قیمت والی غیر ملکی کرنسی بھی برآمد کی ہے۔ محکمہ انکم ٹیکس کے حکام نے بتایا کہ چھاپہ ماری کے دوران کل 93 کروڑ روپے کی جائیداد کوضبط کرلیا گیا ہے، جس میںگولڈ اور ڈائمنڈ زیورات بھی شامل ہے۔

    محکمہ انکم ٹیکس کی چھاپہ ماری میں پتہ چلا ہے کہ گروپ کے ذریعہ ٹیکس والی آمدنی کو ٹیکس میں چھوٹ دینے والے ممالک میں آف شور کمپنیوں میں سرمایہ کاری کی گئی تھی، محکمہ انکم ٹیکس نے ’کلکی بھگوان‘ کے 40جگہوں پر چھاپہ ماری کی۔ یہ ٹھکانے روحانی گرو کے ذریعہ چلائے جارہے ٹرسٹ اور کمپنیوں سے متعلق ہیں۔ بتا دیں کہ روحانی گروکلکی بھگوان ویلنیس کورس کو چلارہے ہیں اورOneness Philosophy کے بانی مانے جاتے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  کوروناوائرس:تبلیغی مرکزمیں ہزاروں لوگوں کااجتماع قابلِ مذمت : ڈاکٹرشیخ عقیل احمد

    محکمہ انکم ٹیکس نے چنئی، بنگلور اور وارادے ایپالیم میں واقع کلکی بھگوان اور ان کی ٹرسٹ کے ٹھکانوں پر چھاپہ ماری کی۔کلکی بھگوان کے ویلنیس کورس کے کئی صارفین غیر ملکی ہیں، تو چھاپہ ماری میں بڑی تعداد میں غیر ملکی کرنسی حاصل ہوئی ہے۔ محکمہ انکم ٹیکس کو خفیہ اطلاع ملی تھی ٹرسٹ کوملنے والے چندے سے بیرون ملک میں سرمایہ کاری کی جا رہی ہے۔ ساتھ ہی آندھرا پردیش اور تمل ناڈو میں جائیداد بھی خریدی گئی ہے، اس کے بعد ہی محکمہ انکم ٹیکس نے چھاپہ ماری کی۔

    یہ بھی پڑھیں  جامعہ ملیہ اسلامیہ میں فائرنگ کیلئے پولس ذمہ دار : ڈاکٹر محمد منظور عالم

    انکم ٹیکس کی چھاپہ ماری میں 88 کلو گرام سونے کے زیورات، جن کی قیمت قریب 26 کروڑ لگایا گیاہے،ساتھ ہی 5 کروڑ کی قیمت کے ڈائمنڈ کوبھی ضبط کیا گیا ہے۔ جانچ میں پتہ چلا ہے کہ چین، امریکہ، سنگاپور اور یو اے ای واقع کمپنیوں میں ٹرسٹ کے ذریعہ چندے سے ہونے والی آمدنی کی سرمایہ کاری کی گئی۔ بتا دیں کہ ٹیکس محکمہ نے کالک بھگوان کا نام نہیں لیا اور انہیں ’ون نیس فلاسیفی والے روحانی گرو بتایا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  اگلے پانچ سالوں میں 24 گھنٹے پانی دیں گے: اروند کیجریوال

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you