رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    سیاہ قوانین کے خلاف تلنگانہ کے وزیراعلی اپنے موقف کا اعلان کریں

    حیدرآباد:مولانا حافظ پیر شبیر احمد صدر جمیعتہ علمأ تلنگانہ و آندھرا پردیش نے شہریت ترمیمی قانون کے علاوہ این پی آر اور این آر سی پر حکومت تلنگانہ خصوصاً وزیراعلی کے چندر شیکھر راؤ کی خاموشی کو معنیٰ خیز قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس مسئلہ پر سارے ملک میں احتجاج جاری ہے اور کیرل و پنجاب کی حکومتوں نے اس قانون کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع ہونے کا اعلان کیا ہے ۔

    حکومت پنجاب نے اسمبلی میں اس کے خلاف قرارداد منظور کی ہے اور مغربی بنگال کی وزیراعلی ممتا بنرجی روز اول سے ہی اس کے خلاف مہم چلا رہی ہیں’ سارے ملک میں عوام کا پر امن احتجاج جاری ہے لیکن بی جے پی زیر اقتدار ریاستوں خصوصاً اتر پردیش میں احتجاجیوں کے ساتھ غداروں جیسا سلوک کیا جارہا ہے اور ان کو سرکاری سرپرستی میں بری طرح ظلم بوتشدد کا شکار بنایا جارہا ہے ۔ تلنگانہ میں ٹی آر ایس کی حکومت ہے جو اقلیت دوستی کا دم بھرتی ہے اور وزیراعلی کے چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کی ترقی و فلاح و بہبود کے کاموں کا ایک ریکارڈ رکھتے ہیں جس کی وجہہ سے ریاست تلنگانہ کو ملک بھر میں ایک منفرد حیثیت حاصل ہوگئی ہے ۔ اب جبکہ مرکزی حکومت نے شہریت ترمیمی قانون نافذ کیا ہے ،این پی آر کے علاوہ این آر سی نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے اور سارے ملک میں اس کے خلاف احتجاج جاری ہے ۔

    یہ بھی پڑھیں  صدر ٹرمپ کی پناہ گزینوں سے نمٹنے کی تجویز : ان کی ٹانگوں میں گولیاں مارو
    یہ بھی پڑھیں  بی جے پی نے ایم سی ڈی کو لوٹ کر برباد کردیا ، وہ اب بھی چھوڑ دیں ، 'آپ' ایم سی ڈی بھی منافع میں چلا کر دکھا دے گی : سوربھ بھاردواج

    تلنگانہ کے وزیراعلی سے اس کے خلاف نمائندگی کی گئی’ تلنگانہ میں کئی مقامات پر احتجاج ہوئے ہیں’ ریلیاں نکالی گئیں’ لیکن وزیراعلی نے ابھی تک کسی رد عمل کا اظہار نہیں کیا’ جس سے مسلمانوں میں ہی نہیں بلکہ دیگر ابنائے وطن میں بھی فکر و تشویش پائی جاتی ہے ۔ مولانا حافظ پیر شبیر احمد نے وزیراعلی سے مطالبہ کیا کہ وہ سی اے اے ’ این پی آر اور این آر سی کے سیاہ قوانین کے خلاف اپنے موقف کااعلان کریں تاکہ عوام میں جو بے چینی پھیلی ہوئی ہے وہ دور ہوسکے ۔ مولانا حافظ پیر شبیر احمد نے مزید کہا کہ تلنگانہ پہلے ریاست حیدرآباد میں شامل تھا’ جو نظام حیدرآباد سے ورثہ میں ملا تھا’ یہاں کی رعایا بھی صدیوں سے اس ریاست میں آباد ہے ۔ اب عوام سے پھر اپنی شہریت ثابت کرنے کا مطالبہ غیر واجبی ہے اور وزیراعلی کو یہ بات مرکز پر واضح کرنی چاہئے ۔

    یہ بھی پڑھیں  مقتول لیڈرکملیش کا خاندان وزیر اعلیٰ سے ملا، ہوٹل سے ملے خون آلودہ بھگوا کپڑے

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  حقائق پر مبنی صحافت سے جمہوریت کو تقویت ملتی ہے:اکھلیش یادو

    Latest news

    وزیر اعلی اروند کیجریوال کے ذریعہ کشمیری گیٹ پر کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر جلد ہی عوام کے لئے وقف کیا جائے گا : کیلاش...

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ٹرانسپورٹ کیلاش گہلوت نے آج کشمیری گیٹ پر نو تعمیر شدہ کمانڈ اینڈ...

    تبلیغی مرکز کھلوانے کے لیئے وقف بورڈ نے کھٹکھٹایا عدالت کا دروازہ

    وقف بورڈ نے کہا مرکز کو بند رکھنا انصاف کے خلاف،وقف بورڈ نے تحقیقاتی افسر کی رپورٹ پر نظر...

    ہمارے ہر امیدوار پوری ذمہ داری کے ساتھ اپنی ذمہ داری نبھائیں گے ، ہم وہاں کے لوگوں کے ساتھ مل کر کام کریں...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بی جے...

    ملک کے کسانوں کا عزم اور جذبہ سب کے لۓ ترغیب کا ذریعہ : مودی

    نئی دہلی : وزیراعظم نریندرمودی نے آج کہاکہ ملک سانوں کا عزم اور جذبہ سب کے لئے ترغیب کا...

    پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ

    نئی دہلی : خام تیل کی قیمتوں میں استحکام کے درمیان گھریلو مارکیٹ میں بدھ کے روز پٹرول اور...

    متھرا : سڑک حادثہ میں سات افرادجاں بحق

    متھرا : اترپردیش میں متھرا کے نوجھیل علاقے میں یمنا ایکسپریس وے پر ٹینکر کی زد میں آنے سے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you