رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    مرکزی حکومت کو پارلیمنٹ میں مل سکتی ہے ترنمول کی حمایت

    کولکاتہ: لوک سبھا انتخابات میں ان کی اپنی ریاست میں بی جے پی کے ہاتھوں 12 نشستیں گنوا چکی ترنمول سربراہ ممتا بنرجی کے تیور اب بدلے بدلے نظر آ رہے ہیں۔ عموما چھوٹے بڑے مسئلے پر جارحانہ رخ اختیار کرنے والی ممتا بنرجی ابھی شانت نظر آرہی ہیں۔ ہر چھوٹے -بڑے معاملے پر مرکزی حکومت کی مخالفت کرنے والی ممتا نے پالیسی کے معاملات پر مرکزی حکومت کو حمایت دینے کی بات کہہ کر سب کو چونکا دیا۔ بدھ کو دیگھا میں انتظامی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ انہوں نے اپنے ممبران پارلیمنٹ کو ہدایت کی ہے کہ وہ پارلیمنٹ میں مرکزی حکومت کے اچھے کاموں کی حمایت کریں گے۔ ممتا نے کہا کہ ملک میں آئینی نظام ہے۔ جو جہاں اقتدار میں ہے، اسے عوام کے مفاد میں کام کرنے دیا جانا چاہئے۔ میں بنگال میں کام کر رہی ہوں اور جو مرکز میں ہیں ان کے مثبت کاموںکی حمایت دینے کی ہدایات میں نے اپنے ممبران پارلیمنٹ کو دے دی ہے۔

    مانا جا رہا ہے کہ لوک سبھا انتخابات کے پہلے ہر معاملے پر مرکز ی مخالفت کرنے کی وجہ سے لوگوں کے درمیان ممتا بنرجی کی جو منفی تصویر بنی اس میک اوور کرنے کی کوشش کے تحت ہی ممتا نے یہ ہدایت دی ہے۔
    فی الحال پارلیمنٹ کا کوئی سیشن نہیں چل رہا ہے اور سیشن چلنے پر ایم پی ان کے اس بیان کا سنجیدہ طور پر کتنا عمل کریں گے اس دیکھنے کے بعد وزیر اعلی کی حقیقی منشا واضح ہوگی۔ اگرچہ بی جے پی نے ان کے اس بیان کو موقع پرستی قرار دیا ہے۔ جمعرات کو پارٹی کے سرکاری سوشل میڈیا گروپ میں ایک بیان جاری کر کہا گیا ہے کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے لوگوں کو صرف ورغلانے کے لئے اس طرح کا بیان دیا ہے۔ سچائی یہ ہے کہ ممتا نے ریاست بھر میں مرکزی منصوبوں کو یا تو لاگو نہیں ہونے دیا یا جو منصوبے پہلے سے چل رہے تھے، ان پر غیر قانونی طریقے سے ریاستی حکومت کی مہر لگا کر اپنی سہولت کے مطابق نام دینے کاکر دیا۔ گرام سڑک منصوبہ ہاو¿سنگ اسکیم، خورک تحفظ منصوبہ کچھ منصوبے ہیں جسے ممتا نے نام تبدیل کر دیا ہے لیکن اس میں زیادہ تر فنڈز مرکزی حکومت کی جانب سے دی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ اسمارٹ سٹی مشن، غذائیت مہم، ایوشمان بھارت منصوبہ بندی، وزیر اعظم کسان سمان نیدھی، پردھان منتری فصل انشورنس کا منصوبہ اور نربھیا فنڈ وغیرہ کے منصوبے کو مغربی بنگال حکومت نے ریاست میں لاگو نہیں کیا۔

    یہ بھی پڑھیں  موسمیاتی تبدیلی کے چیلنج سے نمٹنا ہوگا: شاہ

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  امت شاہ کے بیان پرعام آدمی پارٹی نے چٹکی لی

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you