رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    شہر قاضی مفتی محمد اصغر قاسمی کاانتقال سے غم کی لہر

    ہاپوڑ:علم و دانش کا گہوارہ عمل وپیہم کا خزانہ حلم و عجز کا نمونہ مفکر مربی جیسی خصوصیات کی حامل شخصیت شہر قاضی و استاذ الاساتذہ جامعہ عربیہ خادم الاسلام ہاپوڑ کے شیخ الحدیث و صدر مدرس اور ناظم ِ تعلیمات مولا نامفتی قاری محمد اصغر قاسمی گزشتہ شب ہم سب کو داغِ مفارقت دے گئے ۔انا للہ و انا الیہ راجعون۔قاری محمد اصغرچند روز قبل فالج کے عارضہ سے متاثر ہوئے تھے جن کو مقامی اسپتال میں داخل کرایا گیا افاقہ نہ ہونے پر دہلی کے ابہاس ہاسپٹل میں داخل کرایا گیا جہاں ماہر ڈاکٹروں کی نگرنی میں ان کا علاج چل رہا تھا ۔علاج کے دوران کچھ افاقہ بھی ہوا لیکن قدرت کو کچھ اور ہی منظورتھا گزشتہ شب اسپتال میں مالکِ حقیقی سے جاملے ۔

    ان کے جسدِ خاکی کو ہاپوڑ لایا گیا۔ ان کی رحلت کی اطلاع سے شہر ہی میں نہیں بلکہ قرب و جوار کے اضلاع میں بھی غم کی لہر دوڑ گئی۔ جوں جوں اطلاع ملتی رہی لوگ جوق درجوق ان کی ریائش گاہ پر زیارت کیلئے آتے گئے۔صبح تک ایک جمِ غفیر جمع تھا۔ قاری محمد اصغر نے تقریباً 87بہاریں دیکھیں جس میں انہوں نے مختلف علوم و فون ، کمالات اور خصوصیات حاصل کیں ان ہی خصوصیات کی بنیاد پر دران طالبِ علمی جب وہ دار لعلوم دیوبند میں زیرِ تعلیم تھے منصبِ امامت پر فائز ہو گئے اور امام صاحب کا خطاب پایا۔ بعد ازاں وہ ہاپوڑ میں ایک بابرکت منصبِ امامت پر فائز ہونے کے ساتھ ساتھ دورِ شاہجہانی کی مشہور دینی درس گاہ جامعہ عربیہ خادم اسلام ہاپوڑ میں استاذ کی حیثیت سے تقرر ہوا اور تاحال جامعہ کے شیخ الحدیث ،صدر مدرس اور ناظمِ تعلیمات کے عہدہ پر فائز رہے ساتھ ہی ساتھ ہاپوڑ شہرکے منصبِ قضا اور امام عیدگاہ بھی رہے۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی کی تمام 70 اسمبلیوں میں 26 اکتوبر سے چلے گی 'ریڈ لائٹ آن ، گاڈی آف' کی مہا مہم : گوپال رائے
    یہ بھی پڑھیں  دہلی میں وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار ہوں گے منوج تیواری: ہردیپ پوری

    قاری محمد اصغر کے صاحبزادے قاری محمد ارشد قاسمی نے بتایا کہ والد محترم تقریباً 1962 میں ہاپوڑ آئے اور یہاں پر درس وتدریس پر ماموررہے دریں اثنا جامعہ کے مہتمم مولانا ریاض احمد قاسمی کی رحلت کے بعد ان کو مہتمم کے عہدہ کی پیش کش کی گئی لیکن حلم وبرد باری کی وجہ سے اس عہدہ کو قبول نہیں کیا اور عاجزی و انکساری کو اپنا تے ہوئے درس وتدریس میں مشغول رہے۔مرحوم کی نمازِ جنازہ مادرِ علمی دار لعلوم دیوبند کے مہتمم مولانا مفتی ابوالقاسم نعمانی نے پڑھائی جس میں دار العلوم دیوبند کے نائب مہتمم مولانا عبد الخالق مدراسی، مفتی محمود الحسن بلند شہری استاذ افتا دار العلوم دیوبندقاری محمد ارشاد قاسمی، مفتی کوکب، مولوی اشتیاق ، مولانا گلزار قاسمی، مولانا سید عقیل ، مولاناسلم مظاہری، مرکز نظام الدین سے ذمہ داران،سعودی عرب سے مولانا بلال ، امروہہ لوک سبھا حلقہ سے ممبرآف پارلیمنٹ کنور دانش علی، ہاپوڑ کی شخصیات میں آل انڈیا اسلامک کلچرک سینٹر کے ممبر حاجی یاسین قریشی ، حاجی امین انصاری، پرو فیسر مسعود احمد، حاجی قیصر علی قریشی ،ڈاکٹر نجم الدین، ماس کلب کے ڈاکٹر عقیل ملک، مدرسہ رحمانیہ کے مہتمم قاری ضیا الرحمن، مولانا سید عبد الواحد قاسمی، ڈاکٹر ایوب منصوری ، اکرام الٰہی ایڈو کیٹ، میاںمیرٹھی، انجینئرعبد القدوس کے علاوہ قربو جوار سے ان کے ہزار ہا شاگرد اور معتقدین نے شرکت کی۔

    یہ بھی پڑھیں  عام آدمی پارٹی کا مطالبہ ہے کہ نارتھ ایم سی ڈی کے کمشنر جلد سے جلد اپنی رپورٹ کو نکالیں: سوربھ بھاردواج

    ان کے اہلِ خانہ میں اہلیہ کے علاوہ تین صاحبزادیاور 8 صاحبزادیاں بقیدِ حیات ہیں۔ تینوں صاحبزادے حافِظ قرآن اور دو صاحبزادے عالمِ دین ہیں۔ واضح رہے کہ قاری محمد اصغر جسدِ خاکی کو جب نمازِ جنازہ کے لیئے جامعہ سے باہر لایا گیا اس وقت ٹریفک نظام کو درست کرنے کیلئے کچھ وقفہ کیلئے روڈ ڈائیوڈ کریا گیا تھا۔ ان کی تدفین کے وقت ایس پی ، ایس ڈی یم، سی او، ایس ایچ او اپنی ٹیم کے ساتھ موقع پر موجود تھے

    یہ بھی پڑھیں  مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you