رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    ہزاروں پولیس اہلکاروں نے پولیس ہیڈ کوارٹر کے سامنے کیا احتجاج

    نئی دہلی : دہلی پولیس کے ہزاروں اہلکاروں نے آج پولیس صدر دفتر پر پر امن مظاہرے کئے اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ ان وکلاء کے خلاف کارروائی کی جائے جنہوں نے پولیس کوتشدد کا نشانہ بنایا۔ان پولیس اہلکاروں نے آئی ٹی او کو کئی گھنٹے تک جام کردیا،اور احتجاج میں بہت سارے سینئر پولیس افسر بھی شامل ہوئے انہوں نے یہ احتجاج ہفتہ کو تیس ہزاری کورٹ میں وکلاء کے ساتھ جھڑپ کے معاملے میں کیا۔جس دوران وکلاء نے کئی پولیس اہلکاروں سے مارپیٹ کی۔ دہلی پولیس کمشنر امولیہ پٹنائک نے کہا کہ دہلی پولیس پوری ذمہ داری سے اپنا فرض انجام دے رہی ہے اور یہ ایک بہت بڑی ذمہ داری ہے۔

    انہوں نے پولیس اہلکاروں کو ڈیوٹی پر جانے کے لئے درخواست کی۔ احتجاج کرنے والوں نے کہا کہ ان کی مانگوں پرسنجیدگی سے غور کرنا چاہئے۔ ہفتہ کو تصادم کے دوران 20پولیس اہلکار کے علاوہ آٹھ وکلاء بھی زخمی ہوئے اور اس کے علاوہ 20سے زیادہ گاڑیوں کو نذر آتش کردیا۔ وکیلوں کے خلاف سڑک پر اتری دہلی پولیس، کہا۔ جب ہم ہی محفوظ نہیں، دوسروں کی کیا حفاظت کریں گیدہلی کی تیس ہزاری کورٹ کے باہر پولیس اور وکلا کے درمیان ہوا تنازعہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ پولیس اور وکیلوں کے درمیان ہوئی مارپیٹ کے بعد دہلی پولیس کے جوانوں نے بھی آواز اٹھانی شروع کردی ہے۔انسپیکٹر رینک سے لیکر پولیس اہلکاروں نے منگل کو انصاف اور اپنی حفاظت کو یقینی بنانے کی مانگ کو لے کر پولیس ہیڈکوارٹر کے سامنے مظاہرکر رہے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کے ڈی اسپتال میں ای این ٹی سرجری کرائی

    پولیس والے ہاتھوں میں تختیاں لیکر نعرے بازی کر رہے ہیں۔ ان تختیوں پر سیو پولیس اور ہم بھی انسان ہیں جیسے نعرے لکھے ہیں۔دہلی کے تیس ہزاری کورٹ کے باہر گزشتہ ہفتہ کو پولیس اور وکلائ کے درمیان پرتشدد جھڑپ کے معاملہ نے آج ایک نیا موڑ لے لیا جب سیاہ پٹی باندھے پولیس اہلکاروں نے مظاہرہ میں شرکت کی۔ یہاں کی تمام عدالتوں کے وکیل پیر کو اس واقعہ کے خلاف احتجاج و مظاہرہ کر رہے تھے وہیں آج دہلی پولیس ہیڈکوارٹر کے باہر پولیس اہلکار احتجاج وا مظاہرہ کر رہے ہیں۔بڑی تعداد میں دہلی پولیس کے جوان سیاہ پٹی باندھ کر ہیڈ کوارٹر کے باہر اکٹھا ہوئے اور اپنے لئے انصاف کا مطالبہ کر رہے تھے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ بھی وردی کے پیچھے ایک انسان ہیں، ان کا بھی خاندان ہے۔ ان کے مصائب کوئی کیوں نہیں سمجھتا؟مظاہرہ کر رہے پولیس کے جوانوں کا کہنا ہے کہ ان کے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  بابری مسجد مقدمہ کا فیصلہ16؍نومبر تک آجائے گا
    یہ بھی پڑھیں  بی جے پی کے زیر اقتدار دہلی میونسپل کارپوریشن میں دنیا کا سب سے کرپٹ میئر ہیں: سنجے سنگھ

    انہوں نے کہا کہ ہم پرامن طریقے سے احتجاج و مظاہرہ کرکے پولیس کمشنر کے سامنے اپنی بات رکھیں گے۔ مظاہرہ کر رہے پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ انہیں وردی پہننے میں ڈر لگ رہا ہے کیونکہ وردی دیکھتے ہی وکیل پولیس جوانوں کو پیٹ رہے ہیں۔قابل غور ہے کہ پارکنگ کے سلسلہ میں ہونے والیمعمولی تنازعہ کے بعد ہفتے کے روز دوپہر کو تیس ہزاری عدالت کے احاطے میں وکلا اور پولیس کے درمیان جھڑپ میں 21 پولیس اہلکار اور آٹھ وکیل زخمی ہو گئے تھے جبکہ 17 گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی گئی تھی۔ تاہم وکلا نے دعوی کیا تھا کہ پولیس نے جو اعداد و شمار بتائے ہیں اس سے زیادہ تعداد میں ان کے ساتھی زخمی ہوئے ہیں۔

    دہلی میں وکلاء کی جانب سے ایک روزہ عدالت کے بائیکاٹ کے درمیان پیر کو سپریم کورٹ کے وکلاء نے بھی تیس ہزاری کورٹ میں ہونے والی پرتشدد جھڑپوں کے خلاف سپریم کورٹ کے باہر مظاہرہ کیا اور وکلاء کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اظہار کیا۔ سپریم کورٹ کے وکلاء نے ہفتہ کو واقعہ میں زخمی وکلاء کو 10-10 لاکھ روپے دینے اور پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  لاک ڈاؤن میں غریبوں کا سہارا بنے عام آدمی پارٹی کے ایم ایل اے

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  تیسری سہ ماہی میں شرح نمو کم ہوکر 4.7 فیصد پر

    Latest news

    دہلی میں 5-ٹی پلان کو عمل میں لاکر جیتیں گے کورونا سے جنگ : اروند کیجریوال

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہمیں ہمیشہ سے کورونا کو شکست دینے...

    میڈیا کی متعصبانہ رپورٹنگ کے خلاف جمعیة علماء ہند سپریم کورٹ میں

    نئی دہلی:ملک کے بے لگام ٹی وی چینلوں پر قانونی لگام لگانے کی پہل جمعیةعلماءہند نے کردی گزشتہ روز...

    مرکزی حکومت نے 27 ہزار پی پی ای کٹس مختص کیں: اروند کیجریوال

    نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہم دہلی میں کسی کو بھوکا سونے نہیں...

    کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر بن کر ٹوٹ رہاہے : مولانا ارشد مدنی

    دیوبند: جمعیۃ علماء ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی نے کہاکہ کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر...

    سات نئے کورونا کے مثبت معاملے ملنے سے مچا ہڑکمپ

    لکھنؤ:راجدھانی میں کورونا مثبت پائے گئے مریضوں کی تعداد میں کوئی بھی کمی نہیں آرہی ہے۔سات نئے معاملے سامنے...

    معـــاشرتی ، مــذہبی اور عــــلاقائی اختــلاف سے بالاتر ہوکر ہی کـــوویڈ 19 سےجیتی جاسکتی ہے جنـــــــگ : پروفیســــر احــــرار حســـــین

    نئی دہلی : سنٹر فار ڈسٹنس اینڈ اوپن لرننگ، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے ڈائریکٹر (اکیڈمک) پروفیسر احرار حسین نےکہاکہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you