رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    ہزاروں پولیس اہلکاروں نے پولیس ہیڈ کوارٹر کے سامنے کیا احتجاج

    نئی دہلی : دہلی پولیس کے ہزاروں اہلکاروں نے آج پولیس صدر دفتر پر پر امن مظاہرے کئے اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ ان وکلاء کے خلاف کارروائی کی جائے جنہوں نے پولیس کوتشدد کا نشانہ بنایا۔ان پولیس اہلکاروں نے آئی ٹی او کو کئی گھنٹے تک جام کردیا،اور احتجاج میں بہت سارے سینئر پولیس افسر بھی شامل ہوئے انہوں نے یہ احتجاج ہفتہ کو تیس ہزاری کورٹ میں وکلاء کے ساتھ جھڑپ کے معاملے میں کیا۔جس دوران وکلاء نے کئی پولیس اہلکاروں سے مارپیٹ کی۔ دہلی پولیس کمشنر امولیہ پٹنائک نے کہا کہ دہلی پولیس پوری ذمہ داری سے اپنا فرض انجام دے رہی ہے اور یہ ایک بہت بڑی ذمہ داری ہے۔

    انہوں نے پولیس اہلکاروں کو ڈیوٹی پر جانے کے لئے درخواست کی۔ احتجاج کرنے والوں نے کہا کہ ان کی مانگوں پرسنجیدگی سے غور کرنا چاہئے۔ ہفتہ کو تصادم کے دوران 20پولیس اہلکار کے علاوہ آٹھ وکلاء بھی زخمی ہوئے اور اس کے علاوہ 20سے زیادہ گاڑیوں کو نذر آتش کردیا۔ وکیلوں کے خلاف سڑک پر اتری دہلی پولیس، کہا۔ جب ہم ہی محفوظ نہیں، دوسروں کی کیا حفاظت کریں گیدہلی کی تیس ہزاری کورٹ کے باہر پولیس اور وکلا کے درمیان ہوا تنازعہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ پولیس اور وکیلوں کے درمیان ہوئی مارپیٹ کے بعد دہلی پولیس کے جوانوں نے بھی آواز اٹھانی شروع کردی ہے۔انسپیکٹر رینک سے لیکر پولیس اہلکاروں نے منگل کو انصاف اور اپنی حفاظت کو یقینی بنانے کی مانگ کو لے کر پولیس ہیڈکوارٹر کے سامنے مظاہرکر رہے ہیں۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی کے سرکاری اسپتالوں اور نجی اسپتالوں میں کورونا مدت تک صرف دہلی کے لوگوں کا علاج کیا جائے گا: اروند کیجریوال

    پولیس والے ہاتھوں میں تختیاں لیکر نعرے بازی کر رہے ہیں۔ ان تختیوں پر سیو پولیس اور ہم بھی انسان ہیں جیسے نعرے لکھے ہیں۔دہلی کے تیس ہزاری کورٹ کے باہر گزشتہ ہفتہ کو پولیس اور وکلائ کے درمیان پرتشدد جھڑپ کے معاملہ نے آج ایک نیا موڑ لے لیا جب سیاہ پٹی باندھے پولیس اہلکاروں نے مظاہرہ میں شرکت کی۔ یہاں کی تمام عدالتوں کے وکیل پیر کو اس واقعہ کے خلاف احتجاج و مظاہرہ کر رہے تھے وہیں آج دہلی پولیس ہیڈکوارٹر کے باہر پولیس اہلکار احتجاج وا مظاہرہ کر رہے ہیں۔بڑی تعداد میں دہلی پولیس کے جوان سیاہ پٹی باندھ کر ہیڈ کوارٹر کے باہر اکٹھا ہوئے اور اپنے لئے انصاف کا مطالبہ کر رہے تھے۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ بھی وردی کے پیچھے ایک انسان ہیں، ان کا بھی خاندان ہے۔ ان کے مصائب کوئی کیوں نہیں سمجھتا؟مظاہرہ کر رہے پولیس کے جوانوں کا کہنا ہے کہ ان کے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  تعلیم میں عمدہ کارکردگی پر منیش سسودیا کو ’مہاتما ایوارڈ‘سے نوازا گیا
    یہ بھی پڑھیں  کانگریس صرف دکھاوے کے لئے احتجاج کررہی ہے : بھگونت مان

    انہوں نے کہا کہ ہم پرامن طریقے سے احتجاج و مظاہرہ کرکے پولیس کمشنر کے سامنے اپنی بات رکھیں گے۔ مظاہرہ کر رہے پولیس اہلکاروں کا کہنا ہے کہ انہیں وردی پہننے میں ڈر لگ رہا ہے کیونکہ وردی دیکھتے ہی وکیل پولیس جوانوں کو پیٹ رہے ہیں۔قابل غور ہے کہ پارکنگ کے سلسلہ میں ہونے والیمعمولی تنازعہ کے بعد ہفتے کے روز دوپہر کو تیس ہزاری عدالت کے احاطے میں وکلا اور پولیس کے درمیان جھڑپ میں 21 پولیس اہلکار اور آٹھ وکیل زخمی ہو گئے تھے جبکہ 17 گاڑیوں میں توڑ پھوڑ کی گئی تھی۔ تاہم وکلا نے دعوی کیا تھا کہ پولیس نے جو اعداد و شمار بتائے ہیں اس سے زیادہ تعداد میں ان کے ساتھی زخمی ہوئے ہیں۔

    دہلی میں وکلاء کی جانب سے ایک روزہ عدالت کے بائیکاٹ کے درمیان پیر کو سپریم کورٹ کے وکلاء نے بھی تیس ہزاری کورٹ میں ہونے والی پرتشدد جھڑپوں کے خلاف سپریم کورٹ کے باہر مظاہرہ کیا اور وکلاء کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اظہار کیا۔ سپریم کورٹ کے وکلاء نے ہفتہ کو واقعہ میں زخمی وکلاء کو 10-10 لاکھ روپے دینے اور پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں  نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے 307 کھلاڑیوں کو 7.48 کروڑ روپے دیئے

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here
    یہ بھی پڑھیں  ہمارے وکلاء کی ٹیم اورخاص کر ڈاکٹر راجیو دھون نے بہت اچھی بحث کی:مولانا ارشد مدنی

    Latest news

    کورونااورلاک ڈاؤن بھی نفرت کے وائرس کو ختم نہیں کرسکے

    مذہبی منافرت اور فرقہ وارانہ بنیاد پر عوام کو تقسیم کرنے کا یہ خطرناک کھیل آخر کب تک؟: مولانا...

    مسلمانوں سے متعلق میڈیا کا دہرا رویہ تشویشناک ، گرفتاریوں کا ڈھنڈورا لیکن عدالت سے رہائی کا کوئی ذکر نہیں : مولاناارشدمدنی

    نئی دہلی : بنگلور سیشن عدالت کی جانب سے دہشت گردی کے الزامات سے ڈسچار ج کیئے گئے تریپورہ...

    ہماری سرکار اردو کے فروغ کے لیے سنجیدہ ہے : وزیراعلیٰ،دہلی

    وائس چیئرمین اکادمی حاجی تاج محمد سے خصوصی ملاقات میں متعلقہ مسائل کے حل کی یقین دہانی نئی دہلی :...

    جن کے پاس راشن کارڈ نہیں ہے اور وہ راشن لینا چاہتے ہیں، وہ مرکز میں آکر راشن لے سکتے ہیں: گوپال رائے

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر ترقیات گوپال رائے نے آج بابرپور کے علاقے کردمپوری میں پرائمری اسکول میں...

    رام مندر کے لئے ، 12080 مربع میٹر اراضی 18.50 کروڑ میں خریدی گئی ، جبکہ اس سے متصل 10370 مربع میٹر اراضی صرف...

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے سینئر رہنما اور اترپردیش انچارج سنجے سنگھ نے رام مندر کے لئے...

    نائب وزیر اعلی اور وزیر خزانہ منیش سسودیا نے غیر ضروری سرکاری اخراجات کو کم کرنے کا حکم جاری کیا

    نئی دہلی : کورونا کی وجہ سے اخراجات میں اضافے کی وجہ سے ، دہلی حکومت نے اخراجات کے...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you