رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    بھائی چارہ اور اتحاد ویکجہتی کے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا

    میرٹھ : عدالت عظمیٰ کے ذریعہ ”بابری مسجد“، ”رام جنم بھومی“ ہائی پروفائل تنازعہ کی مکمل سماعت اور فیصلہ محفوظ کرلئے جانے کے بعد اس کے ممکنہ نتائج وعواقب کے پیش نظر قائدین ملت خاص طور سے بیداری کا ثبوت فراہم کرتے ہوئے ہرچہار جانب سے امن وامان برقرار رکھنے کی اپیلیں کررہے ہیں، اسی تناظر میں آج یہاں مدرسہ ریاض العلوم شاہجہانپور میں آل انڈیا ملی کونسل اترپردیش (مغربی زون) کی طرف سے ایک ہنگامی اجلاس کا انعقاد کرکے عوام الناس سے امن وامان اور بھائی چارہ بنائے رکھنے کی اپیل کی گئی، ملی کونسل کے ضلعی ذمہ داران مولانا محمد اقبال قاسمی (صدر) مولانا معین اختر خاں قاسمی (سینئر نائب صدر) اور مولانا حامد حسن قاسمی (جنرل سکریٹری) کی دعوت پر بلائے گئے اس ہنگامی اجلاس میں کونسل کے ریاستی صدر مولانا آس محمد گلزارؔ قاسمی، ریاستی معاون جنرل ڈاکٹر ظہیر احمد خان، اختر حسین سابق ڈی ایس پی، مولانا عبدالواحد قاسمی، رکن عاملہ مولانا سید عقیل احمد قاسمی، مولانا ڈاکٹر عبدالمالک مغیثی، مولانا بشیراحمد قاسمی، مولانا محمد اسلم مظاہری، چودھری فراہیم تیاگی، حاجی صغیر احمد قریشی وغیرہ بیشتر اراکین عاملہ وریاستی عہدہ داران نے شرکت کرکے ممکنہ عدالتی فیصلہ کے تناظر میں عوام الناس سے امن وسلامتی قائم رکھنے، عدلیہ کا احترام ملحوظ رکھنے، فیصلہ کو مثبت انداز میں دیکھنے اور قبول کرنے کی اپیل کی

    اس سلسلہ میں ایک تجویز بھی اتفاق رائے سے پاس کی گئی جس میں کہا گیا کہ ”امن وشانتی، بھائی چارہ اور اتحاد ویکجہتی کے بغیر نہ کوئی ملک ترقی کرسکتا ہے اور اور نہ ہی کوئی قوم من حیث القوم فلاح پاسکتی ہے، نہ سماج ومعاشرہ اپنی ذمہ داریاں اور فرائض ادا کرسکتا ہے، اور نہ ہی فرد اپنی مرضی کے مطابق زندگی گزار سکتا یا اپنے اور اپنے بچوں کے تابناک مستقبل کے لئے منصوبہ بندی کرسکتا ہے، ان سب کے لئے امن وامان کی بحالی، فرد کی سلامتی کی ضمانت اور نظم وقانون کی بالادستی ضروری ہے، خاص طور سے ہندوستان جیسے کثیر لسانی، مختلف المذاہب اور متنوع اقدار وروایات کے حامل ملک میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور آئین ودستور کی روشنی میں ایک دوسرے کے لحاظ واحترام اور مذہبی آزادی کی رعایت جہاں آپسی بھائی چارہ کے لئے ضروری ہے وہیں ملکی آئین کی روح اور سیکولرزم کی ضرورت بھی ہے،

    یہ بھی پڑھیں  کیجریوال کے خلاف امیدوار نامزد کرنے کے سلسلے میں بی جے پی، کانگریس کشمکش میں
    یہ بھی پڑھیں  فائرنگ کرنے والے دہشت گرد کی دھمکی،شاہین باغ:’یہاں صرف ہندوؤں کی چلے گی‘

    آج کے ملکی حالات ملتِ مسلمہ کے لئے نہایت حساس اور نازک ترین حالات ہیں، عدالتِ عظمیٰ سے بابری مسجد قضیہ کا فیصلہ آنے ہی والا ہے، جس سے ہر کلمہ شریک فرد بشر کی عقیدت وابستہ ہے جبکہ کچھ دوسرے لوگوں نے بھی اسے انا کا مسئلہ بنایا ہوا ہے، اسی کے ساتھ کچھ شر پسند عناصر بھی مختلف عنوانات سے ماحول کو گرم کرنے اور ہندوستانی سماج کی فرقہ وارانہ خطوط پر تقسیم کرکے نفرت اور اشتعال انگیزی کو ہوا دینا چاہتے ہیں، ایسے حالات میں ملتِ مسلمہ کے لئے ضروری ہے کہ ہم سنجیدگی کا مظاہرہ کریں، اجتماعی ملکی وقومی مفاد میں امن وسلامتی کے قیام اور قانون کی بالا دستی کے لئے سعی وکوشش کریں، ممکنہ عدالتی فیصلہ کو اسی تناظر میں مثبت نظر سے دیکھیں اور امن وقانون کی بالاتری کے لئے اور فرقہ پرستوں کی تمام سازشوں کو ناکام بنانے کے لئے ہر ممکن جدوجہد کو بروئے کار لاکر شدت پسندوں کے ذریعہ کی جارہی نفرت وفرقہ بندی کی ہر کوشش کو ناکامی سے دوچار کریں،

    یہ بھی پڑھیں  فائرنگ کرنے والے دہشت گرد کی دھمکی،شاہین باغ:’یہاں صرف ہندوؤں کی چلے گی‘

    اس لئے کہ جذباتیت وحساسیت اپنی جگہ لیکن ملکی و قومی مفاد، اتحاد وویکجہتی، بقائے باہم، امن وسلامتی اور انسانی جان کی عظمت ہر جذباتیت سے بہرحال مقدم ہے۔ اس سلسلہ میں ہم اہل اجلاس عدالتی نظام پر بھروسہ اور ملکی عدلیہ پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے امید رکھتے ہیں کہ معزز عدالت حق وانصاف کے تقاضوں پر عمل کرتے ہوئے ثبوتوں اور شواہد کی بنیاد پر فیصلہ دیگی، نیز خیر کی امید کے ساتھ جو بھی فیصلہ آئے گا اس کا خیر مقدم اور قبول کرنے کا اعلان بھی کرتے ہیں، اسی کے ساتھ ہم تمام شرکائے اجلاس فیصلہ آنے کے بعد بھی عدلیہ کے احترام، دستور وآئین کی بالا دستی، ملک میں امن وسلامتی، اتحاد ویکجہتی اور فرقہ وارانہ خیر سگالی کے لئے جدوجہد کے عزم کا اعادہ بھی کرتے ہیں“۔ ضروری تمہید کے بعد تجویز مولانا عقیل احمد قاسمی نے پڑھ کر سنائی جس کی تائید اور اظہار خیال کرنے والوں میں سید ہارون کرمانی، سابق پردھان ڈاکٹر ظفر اللہ خاں، مولانا حامد حسن قاسمی، مفتی صدام حسین قاسمی، مولانا تشریف احمد قاسمی، قاری غلام محمد، قاری محمد مرتضیٰ ومولانا خورشید عالم وغیرہ شامل رہے، اس اجلاس میں میرٹھ، ہاپوڑ، نوئیڈا، بلندشہر، شاملی، مظفرنگر، سہارنپور وغیرہ مغربی اترپردیش کے بیشتر اضلاع سے ذمہ داران ریاستی ملی کونسل واراکین عاملہ نے شرکت کرکے پیغام اجلاس کی تائید اور امن وامان کی بحالی کے لئے جدوجہد کا بھروسہ دلایا، جبکہ اہم شرکاء میں مولانا اسرار الحق انصاری، مولانا بشیر احمد قاسمی، مولانا منقاد احمد قاسمی جسوری، راحت طالب جرنلسٹ، ڈاکٹر فرقان تیاگی، قاری ضیاء الدین قاسمی، مولانا شاہنواز حسین مظاہری، مولانا تصور حسین قاسمی، حاجی محمد اسعد گلزارؔ، مولانا رضوان قاسمی، اشرف ریاض الحسینی جرنلسٹ، مولانا مبارک حسین مظاہری وحافظ ظفیر احمد مظہری وغیرہ قابل تذکرہ ہیں، قاری وکیل الرحمان کی تلاوت کلام اللہ شریف سے شروع ہونے والے اس اجلاس میں ملی کونسل کے مزاج ومنہج پر مشتمل منظوم کلام میاں میرٹھی قاسمی نے پیش کیا،

    یہ بھی پڑھیں  ریاست میں لاء اینڈ آرڈر کی صورتحال پوری طرح ناکام:اکھلیش
    یہ بھی پڑھیں  کانگریس نے کیا دہلی الیکشن کا انتخابی منشور جاری

    صدارتی فرائض انجام دیتے ہوئے مولانا گلزارؔ قاسمی نے کہا کہ یہ تحریک کی ابتداء ہے، جس کو عام کرنے کی ضرورت ہے، اگرجہ ہم مبتلا ہیں پھر بھی ملک کیوں مبتلا ہو، اس لئے میدانِ عمل میں آکر انسانیت کے لئے کام کرنے، سیکولر اذہان کو تقویت پہونچانے اور ملکی مفاد میں کام کرنے والوں کی حوصلہ افضائی کرنے کی ضرورت ہے، استقبالیہ کلمات مولانا معین اختر خاں قاسمی نے پیش کئے اور ملک اور اہل ملک کے ساتھ کھڑے رہنے کے عزم اور صبر وتحمل اور وفاداری کی یقین دہانی کے ساتھ مولانا محمد اقبال قاسمی کی اجتماعی دعاء پر یہ اجلاس اختتام پذیر ہوا۔

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    دہلی میں 5-ٹی پلان کو عمل میں لاکر جیتیں گے کورونا سے جنگ : اروند کیجریوال

    نئی دہلی : دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہمیں ہمیشہ سے کورونا کو شکست دینے...

    میڈیا کی متعصبانہ رپورٹنگ کے خلاف جمعیة علماء ہند سپریم کورٹ میں

    نئی دہلی:ملک کے بے لگام ٹی وی چینلوں پر قانونی لگام لگانے کی پہل جمعیةعلماءہند نے کردی گزشتہ روز...

    مرکزی حکومت نے 27 ہزار پی پی ای کٹس مختص کیں: اروند کیجریوال

    نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ہم دہلی میں کسی کو بھوکا سونے نہیں...

    کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر بن کر ٹوٹ رہاہے : مولانا ارشد مدنی

    دیوبند: جمعیۃ علماء ہند کے قومی صدر مولانا سید ارشد مدنی نے کہاکہ کورونا وائرس پوری دنیا میں قہر...

    سات نئے کورونا کے مثبت معاملے ملنے سے مچا ہڑکمپ

    لکھنؤ:راجدھانی میں کورونا مثبت پائے گئے مریضوں کی تعداد میں کوئی بھی کمی نہیں آرہی ہے۔سات نئے معاملے سامنے...

    معـــاشرتی ، مــذہبی اور عــــلاقائی اختــلاف سے بالاتر ہوکر ہی کـــوویڈ 19 سےجیتی جاسکتی ہے جنـــــــگ : پروفیســــر احــــرار حســـــین

    نئی دہلی : سنٹر فار ڈسٹنس اینڈ اوپن لرننگ، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے ڈائریکٹر (اکیڈمک) پروفیسر احرار حسین نےکہاکہ...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you