رازداری پالیسی

ہمارے بارے میں

رابطہ

  • قومی نیوز
  • ہوم

    Hindi

    Epaper Urdu

    YouTube

    Facebook

    Twitter

    Mobile App

    ہاپوڑ میں خواتین نے تاریخی ریلی کے ذریعہ دکھائی طاقت

    این آرسی اور سی اے اے کے خلاف صدرِ جمہوریہ کے نام میمورنڈم ڈی ایم کو سونپا میمورنڈم
    ہاپوڑ : ملک میں شہریت کے متنازع ترمیمی قانون کو حزب اختلاف سمیت دیگر سماجی حلقوں کی جانب سے سخت مخالفت کا سامنا ہے جس کی وجہ سے ملک بھر کے مختلف شہروں میں حکومت مخالف مظاہروں اور ہڑتالوں کا سلسلہ جاری ہے۔ گزشتہ روز خواتین کیلئے کام کرنے والی تنظیم نے شگفتہ رانا عظیم کی قیادت میں اس قانون کے خلاف مظاہرے کی کال دی ہوئی تھی۔جس میں ہاپوڑ کی باشعور غیورخواتین اور تعلیم یافتہ دوشیزاؤں کی بڑی تعدادنے ریلی میں شرکت کی۔قانون گویان چوک کے سامنے خواتین کی بڑی تعداد جمع ہو گئی جس کو خطاب کرتے ہوئے شگفتہ رانانے کہا کہ ہمارے نزدیک ملک سب سے پیارہ اور اس میں رہنے والے تمام افراد پیارے ہیں اس کالے قانون کے ذریعہ ملک کوتقسیم کے دہانے پر لا کھڑا کیا جارہا ہے اور ملک کی عوام کو بڑی پریشانیوں میںدھکیلا جارہا ہے جس کو ہرگز قبول نہیں کیا جائےگا ۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی میں پرالی سے سیدھے کھیت بنائی جائے گی کھاد : گوپال رائے

    انہوں نے کہا کہ ابھی ابتدا ہے ہم اس وقت تک خاموش نہیں بیٹھیں گی جب تک یہ کالا قانون جو ملک کی عوام پر مسلط کیا گیا ہے وہ واپس نہیں لیا جاتا ۔خواتین اور دوشیزاؤں کی بڑی تعداد نے ہاتھوں میں پلے کارڈاور ’نو سی اے اے‘ اور ’نو این آر سی‘ کے نعرے لگاتے ہوئے پرانا بازارقانون گویان سے ہوتے ہوئے پیر بہاؤالدین جامن والی مسجد تک پہنچیں جہاں ہاپوڑ ڈی ایم ادتی سنگھ نے بذاتِ خود آکر خواتین سے ملیں اورصدرِ جمہوریہ کے نام میمورنڈم وصول کیا ۔ڈی ایم ادتی سنگھ نے پر امن ریلی کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ ہر ہندوستانی کو حق حاصل ہے کہ وہ پر امن طریقہ سے اپنامطالبہ ر کھے ۔ میمورنڈم سپرد کرنے کے بعد سلویٰ عظیم نے ڈی ایم کو گلاب کا پھول پیش کیا جس کو انہوں نے بخوشی قبول کیا۔اس سے قبل ریلی کے اختتام پر ملکہ خان ایڈوکیٹ نے خواتین کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندستان جمہوری ملک ہے یہاں پر رہنے والا ہر شہری اس ملک کا باشندہ ہے کسی کو کوئی حق حاصل نہیں کہ وہ ہندستان میں رہنے والے شہری سے اس کے رہنے کا ثبوت مانگے۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی میں فضائی آلودگی میں تخفیف: کیجریوال
    یہ بھی پڑھیں  دہلی میں پرالی سے سیدھے کھیت بنائی جائے گی کھاد : گوپال رائے

    سی اے اے اور این آرسی سے مسلمان ہی نہیں ہندو سکھ اور عیسائی کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑےگا ۔ اس لئے ہم صدرِ جمہوریہ سے مانگ کرتے ہیں کہ اس کالے قانون کو واپس لیں اور ملک میں بے روزگاروں کو روزگار فراہم کرائیں ۔آج کی ریلی کی خاص بات یہ تھی کہ ہاپوڑ کی تاریخ میں پہلی بار اتنی بڑی تعداد میںاس کالے قانون کے خلاف سڑکوں پر اتریں اور پر امن مظاہرہ کیا اور میمورنڈم دینے کے بعد خواتین اپنے گھروں کو لوٹیں وہیں پولیس و ضلع انتظامیہ نے راحت کی سانس لی ۔ ریلی سے قبل پرانہ بازار علاقہ کو پولیس چھاؤنی میں تبدیل کردیا گیا تھا۔وہیں ریلی کی آرگنائزر شگفتہ رانا نے کو بتایا کہ اے ڈی ا یم اور ایڈیشنل ایس پی اور ایل آئی یو کے افسران نے ریلی نہ نکالنے کیلئے دباؤ بنایا دوسری صورت میںریلی نکالنے پر خمیازہ بھگتنے کی دھمکی دی لیکن ہم نے جرأت مندی سے کام لیتے ہوئے ریلی نکالنے کا فیصلہ برقرار رکھا اورعوام مخالف حکومت کو یہ پیغام دیا کہ ملک میں رہنے والوں کو پریشان کرنے کے بجائے ملک کی ترقی اور عوام کو روزگار دےنے پر توجہ دی جائے ۔

    یہ بھی پڑھیں  جمعیۃعلماء ہندکی قانونی مددسے اب تک 66معاملوں میں ماخوذ افرادکی ہوچکی ہیں ضمانتیں

    ریلی کو کامیاب بنانے میں شگفتہ رانا ،تبسم خان۔ملکہ خان، شہانا پرویز، نیلوفر ناصر،تسنیم فاطمہ، نکہت منصور اور شکیلہ کا اہم کردار رہا۔ مسز ناصر نیلو فر نے بتایا کہ ہم نے خواتین کو کال دی جس پر ہر غیور خواتین نے ہماری حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ریلی میں شرکت کی خواتین ریلی میں شگفتہ رانا ،تبسم خان۔ملکہ خان، شہانا پرویز، نیلوفر ناصر،تسنیم فاطمہ، نکہت منصور،فوزیہ، شیبا صدیقی، صبا ،شاہدہ، نرگس ،سائرہ ارشد، شکیلہ ، الماس ۔طابینہ عظیم عروشہ راشد کے علاوہ بڑی تعداد میں خواتین نے شرکت کی۔

    یہ بھی پڑھیں  دہلی میں فضائی آلودگی میں تخفیف: کیجریوال

    LEAVE A REPLY

    Please enter your comment!
    Please enter your name here

    Latest news

    میرٹ کی بنیادپر منتخب ہونے والے 670طلباء میں ہندوطلباء بھی شامل

    تعلیمی سال 2021-2022کے لئے جمعیۃعلماء ہند کے وظائف جاری ، مذہب سے اوپر اٹھ کر کام کرنا تو جمعیۃعلماء...

    آدیش گپتا نے اپنے بیٹوں کے ساتھ مل کر ایم سی ڈی کی زمین پر اپنا سیاسی دفتر بنایا: درگیش پاٹھک

    نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے ایم سی ڈی انچارج درگیش پاٹھک نے کہا کہ بی جے پی...

    مغربی يو پی : راشٹریہ لوک دل اور سماج وادی پارٹی اتحاد کتنا مضبوط ؟

    مغربی یوپی : مظفر نگر فسادات کے بعد مغربی یوپی میں بالخصوص پوری ریاست میں بالعموم فرقہ واریت اور...

    صوبائی کنونشن میں رئیس الدین رانا کو ”حفیظ میرٹھی ایوارڈ“ ملنے پر ایسوسی ایشن نے کیا استقبال

    مظفر نگر : اردو ٹیچرز ویلفیئر ایسوسی ایشن مظفر نگر کے عہدیداران نے آج صوبائی نائب صدر رئیس الدین...

    اسمبلی الیکشن : سوشل میڈیا کے چاروں پلیٹ فارموں پر سرگرم

    لکھنؤ : ملک کی سیاسی سمت کو طے کرنے والے صوبے اترپردیش میں کورونا بحران کے درمیان ہورہے اسمبلی...

    میرے والد اعظم خان کی جان کو خطرہ : عبد اللہ اعظم

    عبد اللہ اعظم نے کہا کہ کورونا پروٹوکول کے نام پر لوگوں کا استحصال کیا جا رہا ہے، گھر...

    Must read

    You might also likeRELATED
    Recommended to you